Sayings of the Messenger

 

‏‏بِسْمِ اللهِ الرَّحْمَنُ الرَّحِيم

In the Name of Allah, the Most Gracious, the Most Merciful

شروع ساتھ نام اللہ کےجو بہت رحم والا مہربان ہے۔سورۃ طارق کی تفسیر

وَقَالَ مُجَاهِدٌ ‏{‏ذَاتِ الرَّجْعِ‏}‏ سَحَابٌ يَرْجِعُ بِالْمَطَرِ ‏{‏ذَاتِ الصَّدْعِ‏}‏ تَتَصَدَّعُ بِالنَّبَاتِ ‏.‏

طارق ستارہ اور طارق اس کو کہتے ہیں جو رات کو آئےالنّجم الثاقِبۡ روشن ستارہ مجاہد نے کہا ذَاتِ الرّجع ابر کی صفت ہے تو سماء سے مراد سحاب ہےیعنی بار بار برسنے والا۔ذَاتِ الصدۡعِ بار بار اگانے والی(پھوٹے والی) یہ زمین کی صفت ہے۔اور ابن عباسؓ نے کہا قول فضل یعنی حق بات لمّا علیہا حافظ میں لمّا الاّ کے معنی میں ہے یعنی کوئی نفس ایسا نہیں جس پر ایک نگہبان خدا کی طرف سے مامور نہ ہو۔