Sayings of the Messenger

 

123

وَ قَولِ اللهِ تَعَالى: وَإِنْ كُنْتُمْ جُنُبًا فَاطَّهَّرُوا وَإِنْ كُنْتُمْ مَرْضَى أَوْ عَلَى سَفَرٍ أَوْ جَاءَ أَحَدٌ مِنْكُمْ مِنَ الْغَائِطِ أَوْ لامَسْتُمُ النِّسَاءَ فَلَمْ تَجِدُوا مَاءً فَتَيَمَّمُوا صَعِيدًا طَيِّبًا فَامْسَحُوا بِوُجُوهِكُمْ وَأَيْدِيكُمْ مِنْهُ مَا يُرِيدُ اللَّهُ لِيَجْعَلَ عَلَيْكُمْ مِنْ حَرَجٍ وَلَكِنْ يُرِيدُ لِيُطَهِّرَكُمْ وَلِيُتِمَّ نِعْمَتَهُ عَلَيْكُمْ لَعَلَّكُمْ تَشْكُرُونَ (المائده: ٦)وَقَولِهِ جَلَّ ذِكْرُهُ: يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لا تَقْرَبُوا الصَّلاةَ وَأَنْتُمْ سُكَارَى حَتَّى تَعْلَمُوا مَا تَقُولُونَ وَلا جُنُبًا إِلا عَابِرِي سَبِيلٍ حَتَّى تَغْتَسِلُوا وَإِنْ كُنْتُمْ مَرْضَى أَوْ عَلَى سَفَرٍ أَوْ جَاءَ أَحَدٌ مِنْكُمْ مِنَ الْغَائِطِ أَوْ لامَسْتُمُ النِّسَاءَ فَلَمْ تَجِدُوا مَاءً فَتَيَمَّمُوا صَعِيدًا طَيِّبًا فَامْسَحُوا بِوُجُوهِكُمْ وَأَيْدِيكُمْ إِنَّ اللَّهَ كَانَ عَفُوًّا غَفُورًا. الاية(النساء: ٤٣)

The Statement of Allah, "... If you are in a state of Janaba (i.e. after a sexual discharge), purify yourselves (bath your whole body). But if you are ill or on a journey or any of you answering the call of nature, or you have had been in contact with women (i.e. sexual intercourse) and you find no water then perform Tayammum with clean earth and rub therewith your faces & hands. Allah does not want to place you in difficulty, but he wants to purify you and complete his Favour to you, that you may be thankful." (V.5:6) And also the Statement of Allah, "O you who believe! Approch not As-Salat when you are in a drunken state until you know (the meaning) of what you utter, nor when you are in a state of Janaba (i.e. in a state of sexual impurity and not have yet taking a bath) except when travelling on a road (without enough water, or just passing through a masjid) till you wash your whole body. If you are ill or in a journey of one of you comes after answering the call of nature, or you have been in contact with women (by sexual relations) and you find no water then perform Tayammum with clean earth and rub therewith your faces and hands. Truly Allah is ever Oft-Pardoning, Oft-forgiving." (V.4:43)

اور اللہ تعالیٰ نے (سورت مائدہ میں) فرمایا اور اگر تم کو نہانے کی حاجت ہو (یعنی جنابت ہو) تو نہا لو اور اگر تم بیمار ہو یا سفر میں یا کوئی تم میں آیا ہے جائے ضرور سے یا پاس گئے ہو عورتوں کے پھر نہ پاؤ تم پانی تو قصد کرو مٹی پاک کا اور مل لو اپنے منہ اور ہاتھ اس سے اللہ نہیں چاہتا کہ تم پر تنگی کرے لیکن چاہتا ہے کہ تم کو پاک کرے اور پورا کرے اپنا احسان تم پر تاکہ تم احسان مانو (اور سورت نساء میں فرمایا) اے ایمان والوں! نزدیک نہ جاؤ نماز کے جس وقت کہ تم نشہ میں ہو یہاں تک کہ سمجھنے لگو جو کہتے ہو اور نہ تم اس وقت کہ غسل کی حاجت ہو مگر راہ چلتے ہوئے یہاں تک کہ غسل کر لو اور اگر تم مریض ہو یا سفر میں یا آیا ہے کوئی شخص تم میں سے جائے ضرور سے یا پاس گئے ہو عورتوں کے پھر نہ ملا تم کو پانی تو ارادہ کرو زمین پاک کا پھر ملو اپنے منہ کو اور ہاتھوں کو بیشک اللہ معاف کرنے والا ہے بخشنے والا ہے۔

 

Chapter No: 1

باب الْوُضُوءِ قَبْلَ الْغُسْلِ

The performance of ablution before taking a bath.

باب: غسل سے پہلے وضو کرنا۔

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يُوسُفَ، قَالَ أَخْبَرَنَا مَالِكٌ، عَنْ هِشَامٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ عَائِشَةَ، زَوْجِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم كَانَ إِذَا اغْتَسَلَ مِنَ الْجَنَابَةِ بَدَأَ فَغَسَلَ يَدَيْهِ، ثُمَّ يَتَوَضَّأُ كَمَا يَتَوَضَّأُ لِلصَّلاَةِ، ثُمَّ يُدْخِلُ أَصَابِعَهُ فِي الْمَاءِ، فَيُخَلِّلُ بِهَا أُصُولَ شَعَرِهِ ثُمَّ يَصُبُّ عَلَى رَأْسِهِ ثَلاَثَ غُرَفٍ بِيَدَيْهِ، ثُمَّ يُفِيضُ الْمَاءَ عَلَى جِلْدِهِ كُلِّهِ‏

Narrated By 'Aisha : Whenever the Prophet took a bath after Janaba he started by washing his hands and then performed ablution like that for the prayer. After that he would put his fingers in water and move the roots of his hair with them, and then pour three handfuls of water over his head and then pour water all over his body.

ام المؤمنین حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نبیﷺ جب غسلِ جنابت کرنے لگتے تو سب سے پہلے اپنے ہاتھ دھوتے، پھر نماز کی طرح وضو کرتے، پھر اپنی انگلیاں پانی میں ڈال کر بالو ں کا خلال کرتے، پھر تین چلو پانی لے کر اپنے سر پر ڈالتے اور پھر سارے بدن پر پانی بہاتے۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ يُوسُفَ، قَالَ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ، عَنْ كُرَيْبٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، عَنْ مَيْمُونَةَ، زَوْجِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَتْ تَوَضَّأَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وُضُوءَهُ لِلصَّلاَةِ غَيْرَ رِجْلَيْهِ، وَغَسَلَ فَرْجَهُ، وَمَا أَصَابَهُ مِنَ الأَذَى، ثُمَّ أَفَاضَ عَلَيْهِ الْمَاءَ، ثُمَّ نَحَّى رِجْلَيْهِ فَغَسَلَهُمَا، هَذِهِ غُسْلُهُ مِنَ الْجَنَابَةِ‏

Narrated By Maimuna : (the wife of the Prophet) Allah's Apostle performed ablution like that for the prayer but did not wash his feet. He washed off the discharge from his private parts and then poured water over his body. He withdrew his feet from that place (the place where he took the bath) and then washed them. And that was his way of taking the bath of Janaba.

ام المؤمنین میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نبیﷺ نے نماز کے وضو کی طرح وضو کیا البتہ پاؤں نہیں دھوئے، اپنے ستر اور اس کے ارد گرد کا حصہ دھویا، پھر سارے جسم پر پانی بہایا، پھر اپنی جگہ سے تھوڑا ہٹ کر پاؤں دھوئے، اسی طرح آپﷺ کا غسل جنابت ہوتا تھا۔

Chapter No: 2

باب غُسْلِ الرَّجُلِ مَعَ امْرَأَتِهِ

Taking a bath by a man along with his wife.

باب : مرد کا اپنی بی بی کے ساتھ (ایک برتن سے)غسل کرنا۔

حَدَّثَنَا آدَمُ بْنُ أَبِي إِيَاسٍ، قَالَ حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي ذِئْبٍ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَالنَّبِيُّ، صلى الله عليه وسلم مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ مِنْ قَدَحٍ يُقَالُ لَهُ الْفَرَقُ‏

Narrated By 'Aisha : The Prophet and I used to take a bath from a single pot called 'Faraq'.

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں اورنبیﷺ ایک ہی برتن میں غسل کیا کرتے تھے جسے فرق کہا جاتا تھا۔

Chapter No: 3

باب الْغُسْلِ بِالصَّاعِ وَنَحْوِهِ

Taking a bath with a Sa’ of water or so. (One Sa’ = 3 kilograms approx.)

باب: صاع اور اس کے برابر برتنوں سے غسل کرنا۔

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، قَالَ حَدَّثَنِي عَبْدُ الصَّمَدِ، قَالَ حَدَّثَنِي شُعْبَةُ، قَالَ حَدَّثَنِي أَبُو بَكْرِ بْنُ حَفْصٍ، قَالَ سَمِعْتُ أَبَا سَلَمَةَ، يَقُولُ دَخَلْتُ أَنَا وَأَخُو، عَائِشَةَ عَلَى عَائِشَةَ فَسَأَلَهَا أَخُوهَا عَنْ غُسْلِ النَّبِيِّ، صلى الله عليه وسلم فَدَعَتْ بِإِنَاءٍ نَحْوًا مِنْ صَاعٍ، فَاغْتَسَلَتْ وَأَفَاضَتْ عَلَى رَأْسِهَا، وَبَيْنَنَا وَبَيْنَهَا حِجَابٌ‏.‏ قَالَ أَبُو عَبْدِ اللَّهِ قَالَ يَزِيدُ بْنُ هَارُونَ وَبَهْزٌ وَالْجُدِّيُّ عَنْ شُعْبَةَ قَدْرِ صَاعٍ‏

Narrated By Abu Salama : 'Aisha's brother and I went to 'Aisha and he asked her about the bath of the Prophet. She brought a pot containing about a Sa' of water and took a bath and poured it over her head and at what time there was a screen between her and us.

حضرت ابو سلمہ (عبداللہ بن عبدالرحمان بن عوف) کہتے تھے کہ ایک دفعہ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کی خدمت میں، میں اور ان کا ایک (رضاعی) بھائی حاضر ہوئے، ان کے بھائی نے ان سے نبیﷺکےغسل کے بارے میں پوچھا،آپ رضی اللہ عنہا نے ایک برتن منگوایا جس میں ایک صاع کے برابر پانی تھا ، پھر آپ نے غسل کیا اور اپنے سر پر پانی ڈالا، ہمارےاور ان کے درمیان ایک پردہ حائل تھا، امام بخاری رحمہ اللہ فرماتے ہیں کہ یزید بن ہارون ، بہز بن اسد اور جدی نے شعبہ سے قدرِ صاع کے الفاظ نقل کیے ہیں۔


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، قَالَ حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ آدَمَ، قَالَ حَدَّثَنَا زُهَيْرٌ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، قَالَ حَدَّثَنَا أَبُو جَعْفَرٍ، أَنَّهُ كَانَ عِنْدَ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ هُوَ وَأَبُوهُ، وَعِنْدَهُ قَوْمٌ فَسَأَلُوهُ عَنِ الْغُسْلِ،‏.‏ فَقَالَ يَكْفِيكَ صَاعٌ‏.‏ فَقَالَ رَجُلٌ مَا يَكْفِينِي‏.‏ فَقَالَ جَابِرٌ كَانَ يَكْفِي مَنْ هُوَ أَوْفَى مِنْكَ شَعَرًا، وَخَيْرٌ مِنْكَ، ثُمَّ أَمَّنَا فِي ثَوْبٍ

Narrated By Abu Ja'far : While I and my father were with Jabir bin 'Abdullah, some People asked him about taking a bath He replied, "A Sa' of water is sufficient for you." A man said, "A Sa' is not sufficient for me." Jabir said, "A Sa was sufficient for one who had more hair than you and was better than you (meaning the Prophet)." And then Jabir (put on) his garment and led the prayer.

ابو جعفر( محمد باقر) رحمۃ اللہ علیہ نے بیان کیا وہ اور ان کے والد(جناب زین العابدین) دیگر لوگوں کے ساتھ حضرت جابر رضی اللہ عنہ کی خدمت میں بیٹھے تھے ، لوگوں نے آپ رضی اللہ عنہ سے غسل کے بارے میں پوچھا تو آپ نے فرمایا: آپ کےلیے ایک صاع کافی ہے، ایک شخص (حسن بن محمد بن علی) بولا یہ میرے لیے کافی نہیں ہوگا، آپ رضی اللہ عنہ نے فرمایا: اتنا پانی ان کےلیے کافی تھا جو تم سے زیادہ گھنے بالوں والے اور بہتر تھے (یعنی نبیﷺ) پھر ایک ہی کپڑے میں انہوں نے ہماری امامت کروائی۔


حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، قَالَ حَدَّثَنَا ابْنُ عُيَيْنَةَ، عَنْ عَمْرٍو، عَنْ جَابِرِ بْنِ زَيْدٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم وَمَيْمُونَةَ كَانَا يَغْتَسِلاَنِ مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ‏.‏ قَالَ أَبُو عَبْدِ اللَّهِ كَانَ ابْنُ عُيَيْنَةَ يَقُولُ أَخِيرًا عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ عَنْ مَيْمُونَةَ، وَالصَّحِيحُ مَا رَوَى أَبُو نُعَيْمٍ‏

Narrated By Ibn 'Abbas : The Prophet and Maimuna used to take a bath from a single pot.

حضرت ابنِ عباس رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ نبیﷺ اور آپ کی زوجہ محترمہ حضرت میمونہ رضی اللہ عنہا ایک ہی برتن سےغسل کیا کرتے تھے، امام بخاری رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا: سفیان بن عیینہ آخری عمر میں اس حدیث کو یوں روایت کرتے تھے ابن عباس سے انہوں نے میمونہ رضی اللہ عنہا سے، اور صحیح وہ ہے جو ابونعیم بیان کرتے ہیں۔

Chapter No: 4

باب مَنْ أَفَاضَ عَلَى رَأْسِهِ ثَلاَثًا

Pouring water thrice on one's head.

باب: سر پر تین بار پانی بہانا۔

حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، قَالَ حَدَّثَنَا زُهَيْرٌ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، قَالَ حَدَّثَنِي سُلَيْمَانُ بْنُ صُرَدٍ، قَالَ حَدَّثَنِي جُبَيْرُ بْنُ مُطْعِمٍ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ أَمَّا أَنَا فَأُفِيضُ عَلَى رَأْسِي ثَلاَثًا ‏"‏‏.‏ وَأَشَارَ بِيَدَيْهِ كِلْتَيْهِمَا

Narrated By Jubair bin Mutim : Allah's Apostle said, "As for me, I pour water three times on my head." And he pointed with both his hands.

جبیر بن مطعم نے بیان کیا کہ رسول اللہﷺنے فرمایا: میں تو (غسل میں) اپنے سر پر اس طرح پانی بہاتا ہوں ، پھر آپ نے دونوں ہاتھوں سے اشارہ کر کے دکھلایا۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ، قَالَ حَدَّثَنَا غُنْدَرٌ، قَالَ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ مِخْوَلِ بْنِ رَاشِدٍ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَلِيٍّ، عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم يُفْرِغُ عَلَى رَأْسِهِ ثَلاَثًا

Narrated By Jabir bin 'Abdullah : The Prophet used to pour water three times on his head.

حضرت جابر بن عبداللہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبیﷺ (غسلِ جنابت میں ) اپنے سر پر تین بار پانی ڈالتے۔


حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، قَالَ حَدَّثَنَا مَعْمَرُ بْنُ يَحْيَى بْنِ سَامٍ، حَدَّثَنِي أَبُو جَعْفَرٍ، قَالَ قَالَ لِي جَابِرٌ أَتَانِي ابْنُ عَمِّكَ يُعَرِّضُ بِالْحَسَنِ بْنِ مُحَمَّدٍ ابْنِ الْحَنَفِيَّةِ قَالَ كَيْفَ الْغُسْلُ مِنَ الْجَنَابَةِ فَقُلْتُ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم يَأْخُذُ ثَلاَثَةَ أَكُفٍّ وَيُفِيضُهَا عَلَى رَأْسِهِ، ثُمَّ يُفِيضُ عَلَى سَائِرِ جَسَدِهِ‏.‏ فَقَالَ لِي الْحَسَنُ إِنِّي رَجُلٌ كَثِيرُ الشَّعَرِ‏.‏ فَقُلْتُ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم أَكْثَرَ مِنْكَ شَعَرًا

Narrated By Abu Ja'far : Jabir bin Abdullah said to me, "Your cousin (Hasan bin Muhammad bin Al-Hanafiya) came to me and asked about the bath of Janaba. I replied, 'The Prophet uses to take three handfuls of water, pour them on his head and then pour more water over his body.' Al-Hasan said to me, 'I am a hairy man.' I replied, 'The Prophet had more hair than you'. "

حضرت ابو جعفر ( محمد باقر) رحمۃ اللہ علیہ نے بیان کیا کہ مجھے جابر رضی اللہ عنہ نے بتایا کہ آپ کے چچا کے بیٹے حسن بن محمد بن حنفیہ میرے پاس آئے اور غسلِ جنابت کے بارے میں پوچھنے لگے تو میں نے بتایا کہ نبیﷺ تین چلو پانی لیتے اور اسےاپنے سر اور پورے بدن پر بہاتے تھے، حسن کہنے لگےمیں تو بہت بالوں والا ہوں میں نے کہا نبیﷺ کے بال آپ سے زیادہ تھے۔

Chapter No: 5

باب الْغُسْلِ مَرَّةً وَاحِدَةً

To wash the body (parts) once only.

باب: ایک ہی بار نہانا۔

حَدَّثَنَا مُوسَى، قَالَ حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَاحِدِ، عَنِ الأَعْمَشِ، عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ، عَنْ كُرَيْبٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، قَالَ قَالَتْ مَيْمُونَةُ وَضَعْتُ لِلنَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم مَاءً لِلْغُسْلِ، فَغَسَلَ يَدَيْهِ مَرَّتَيْنِ أَوْ ثَلاَثًا، ثُمَّ أَفْرَغَ عَلَى شِمَالِهِ فَغَسَلَ مَذَاكِيرَهُ، ثُمَّ مَسَحَ يَدَهُ بِالأَرْضِ، ثُمَّ مَضْمَضَ وَاسْتَنْشَقَ وَغَسَلَ وَجْهَهُ وَيَدَيْهِ، ثُمَّ أَفَاضَ عَلَى جَسَدِهِ، ثُمَّ تَحَوَّلَ مِنْ مَكَانِهِ فَغَسَلَ قَدَمَيْهِ

Narrated By Maimuna : I placed water for the bath of the Prophet. He washed his hands twice or thrice and then poured water on his left hand and washed his private parts. He rubbed his hands over the earth (and cleaned them), rinsed his mouth, washed his nose by putting water in it and blowing it out, washed his face and both forearms and then poured water over his body. Then he withdrew from that place and washed his feet.

ام المومنین حضرت میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں نے نبیﷺ کے غسل کےلیے پانی رکھا، آپﷺ نے اپنے ہاتھ دو یا تین بار دھوئے، پھر اپنے بائیں ہاتھ پر پانی ڈال کر ستر کو دھویا، پھر اپنا ہاتھ زمین پر رگڑا ،پھر کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا، منہ اور دونو ں ہاتھ دھوئے ، پھر سارے جسم پر پانی ڈالا، اور پھر اپنی جگہ سے پیچھے ہٹ کر دونوں پاؤں دھوئے۔

Chapter No: 6

باب مَنْ بَدَأَ بِالْحِلاَبِ أَوِ الطِّيبِ عِنْدَ الْغُسْلِ

Starting one's bath by scenting oneself with Hilab or some other scent.

باب: حلاب یاخوشبو سے غسل شروع کرنا۔

حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى، قَالَ حَدَّثَنَا أَبُو عَاصِمٍ، عَنْ حَنْظَلَةَ، عَنِ الْقَاسِمِ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم إِذَا اغْتَسَلَ مِنَ الْجَنَابَةِ دَعَا بِشَىْءٍ نَحْوَ الْحِلاَبِ، فَأَخَذَ بِكَفِّهِ، فَبَدَأَ بِشِقِّ رَأْسِهِ الأَيْمَنِ ثُمَّ الأَيْسَرِ، فَقَالَ بِهِمَا عَلَى رَأْسِهِ‏

Narrated By 'Aisha : Whenever the Prophet took the bath of Janaba (sexual relation or wet dream) he asked for the Hilab or some other scent. He used to take it in his hand, rub it first over the right side of his head and then over the left and then rub the middle of his head with both hands.

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نبیﷺ جب غسلِ جنابت کرنے لگتے تو حلاب کے برابر کوئی چیز (برتن) منگواتے، پھر پانی کا ایک چلو لے کر غسل کا آغاز دائیں طرف سے کرتے ، پھر بائیں طرف پانی بہاتے اور پھر سر کے درمیان۔

Chapter No: 7

باب الْمَضْمَضَةِ وَالاِسْتِنْشَاقِ فِي الْجَنَابَةِ

To rinse the mouth and to clean the nose by putting water in it and then blowing it out while taking the bath of Janaba.

باب:غسل جنابت میں کلی کرنا اور ناک میں پانی ڈالنا۔

حَدَّثَنَا عُمَرُ بْنُ حَفْصِ بْنِ غِيَاثٍ، قَالَ حَدَّثَنَا أَبِي، حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، قَالَ حَدَّثَنِي سَالِمٌ، عَنْ كُرَيْبٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، قَالَ حَدَّثَتْنَا مَيْمُونَةُ، قَالَتْ صَبَبْتُ لِلنَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم غُسْلاً، فَأَفْرَغَ بِيَمِينِهِ عَلَى يَسَارِهِ فَغَسَلَهُمَا، ثُمَّ غَسَلَ فَرْجَهُ، ثُمَّ قَالَ بِيَدِهِ الأَرْضَ فَمَسَحَهَا بِالتُّرَابِ، ثُمَّ غَسَلَهَا، ثُمَّ تَمَضْمَضَ وَاسْتَنْشَقَ، ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ، وَأَفَاضَ عَلَى رَأْسِهِ، ثُمَّ تَنَحَّى فَغَسَلَ قَدَمَيْهِ، ثُمَّ أُتِيَ بِمِنْدِيلٍ، فَلَمْ يَنْفُضْ بِهَا

Narrated By Maimuna : I placed water for the bath of the Prophet and he poured water with his right hand on his left and washed them. Then he washed his private parts and rubbed his hands on the ground, washed them with water, rinsed his mouth and washed his nose by putting water in it and blowing it out, washed his face and poured water on his head. He withdrew from that place and washed his feet. A piece of cloth (towel) was given to him but he did not use it.

حضرت میمونہ رضی اللہ عنہا نے بتایا کہ میں نے نبیﷺ کےلیے غسل کا پانی رکھا، آپﷺ نے پہلے دائیں ہاتھ سے بائیں ہاتھ پر پانی ڈال کر دونوں کو دھویا، پھر ستر دھویا، پھر ہاتھ مٹی سے صاف کیے، پھر انہیں دھویا، پھر کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا، پھر چہرہ دھویا، پھر سر پر پانی بہایا، پھر وہاں سے تھوڑا پیچھے ہٹ کر پاؤں مبارک دھوئے اور پھر آپ ﷺ کو ایک تولیہ پیش کیا گیا لیکن آپﷺ استعمال نہیں کیا۔

Chapter No: 8

باب مَسْحِ الْيَدِ بِالتُّرَابِ لِيَكُونَ أَنْقَى

The rubbing of hand with earth in order to clean them thoroughly.

باب: (غسل میں)مٹی سے ہاتھ رگڑنا کہ خوب صاف ہو جائے۔

حَدَّثَنَا الْحُمَيْدِيُّ، قَالَ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، قَالَ حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ، عَنْ كُرَيْبٍ، عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، عَنْ مَيْمُونَةَ، أَنَّ النَّبِيَّ صلى الله عليه وسلم اغْتَسَلَ مِنَ الْجَنَابَةِ، فَغَسَلَ فَرْجَهُ بِيَدِهِ، ثُمَّ دَلَكَ بِهَا الْحَائِطَ ثُمَّ غَسَلَهَا، ثُمَّ تَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلاَةِ، فَلَمَّا فَرَغَ مِنْ غُسْلِهِ غَسَلَ رِجْلَيْهِ‏

Narrated By Maimuna : The Prophet took the bath of Janaba. (sexual relation or wet dream). He first cleaned his private parts with his hand, and then rubbed it(that hand) on the wall (earth) and washed it. Then he performed ablution like that for the prayer, and after the bath he washed his feet.

ام المومنین میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نبیﷺنے غسلِ جنابت شروع کیا ، تو اپنے ہاتھ سے اپنی شرمگاہ کو دھویا، پھر دیوار پر ہاتھوں کو رگڑا ، پھر پانی سے ان کو دھویا، پھر نماز کے وضو کی طرح وضو کیا، اور پھر غسل سے فارغ ہونے پر دونوں پاؤں دھوئے۔

Chapter No: 9

باب هَلْ يُدْخِلُ الْجُنُبُ يَدَهُ فِي الإِنَاءِ قَبْلَ أَنْ يَغْسِلَهَا إِذَا لَمْ يَكُنْ عَلَى يَدِهِ قَذَرٌ غَيْرُ الْجَنَابَةِ؟

Can a Junub (a person who has yet to take a bath after the sexual act or wet dream) put his hands in a pot (containing water) before washing them if they are not polluted with a dirty thing except Janaba.

باب: اگر جس کو نہانے کی حاجت ہو وہ اپنا ہاتھ دھونے سے پہلے برتن میں ڈال دے اور اس پر سوا ئےجنابت کے اور کوئی نجاست نہ ہو تو کیا حکم ہے؟

وَأَدْخَلَ ابْنُ عُمَرَ وَالْبَرَاءُ بْنُ عَازِبٍ يَدَهُ فِي الطَّهُورِ، وَلَمْ يَغْسِلْهَا ثُمَّ تَوَضَّأَ‏.‏ وَلَمْ يَرَ ابْنُ عُمَرَ وَابْنُ عَبَّاسٍ بَأْسًا بِمَا يَنْتَضِحُ مِنْ غُسْلِ الْجَنَابَةِ‏

Ibn Umar and Al-Bara bin Azib had put their hands in the water without washing them and then they performed ablution. Ibn Umar and Ibn Abbas did not think there was any harm if the water dribbled from the body (while taking a bath) back in the same container from which the bath of Janaba was taken.

اور عبداللہ بن عمرؓ اور براء بن عازبؓ نے اپنا ہاتھ پانی میں ڈال دیا بن دھوئے پھر وضو کیا اور ابن عمرؓ اورابن عباسؓ نے ان چھینٹوں میں کوئی قباحت نہیں دیکھی جو جنابت کے غسل میں اڑیں۔

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْلَمَةَ، أَخْبَرَنَا أَفْلَحُ، عَنِ الْقَاسِمِ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَالنَّبِيُّ، صلى الله عليه وسلم مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ تَخْتَلِفُ أَيْدِينَا فِيهِ‏

Narrated By 'Aisha : The Prophet and I used to take a bath from a single pot of water and our hands used to go in the pot after each other in turn.

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں اور نبیﷺ ایک برتن سےغسل کرتے اور باری باری اس سے پانی لیتےتھے۔


حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، قَالَ حَدَّثَنَا حَمَّادٌ، عَنْ هِشَامٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم إِذَا اغْتَسَلَ مِنَ الْجَنَابَةِ غَسَلَ يَدَهُ‏

Narrated By 'Aisha : Whenever Allah's Apostle took a bath of Janaba, he washed his hands first.

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺغسلِ جنابت سے پہلے ہاتھ دھوتے تھے۔


حَدَّثَنَا أَبُو الْوَلِيدِ، قَالَ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ أَبِي بَكْرِ بْنِ حَفْصٍ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتْ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَالنَّبِيُّ، صلى الله عليه وسلم مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ مِنْ جَنَابَةٍ‏.‏ وَعَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ الْقَاسِمِ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَائِشَةَ مِثْلَهُ‏

Narrated By 'Aisha : The Prophet and I used to take a bath from a single pot of water after Janaba.

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے وہ فرماتی ہیں کہ میں اور نبیﷺغسلِ جنابت ایک ہی برتن سے کیا کرتے تھے، شعبہ نے عبد الرحمن بن قاسم سے انہوں نے اپنے والد قاسم بن محمد بن ابی بکر سے انہوں نے حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے اسی طرح روایت کیا ہے۔


حَدَّثَنَا أَبُو الْوَلِيدِ، قَالَ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ جَبْرٍ، قَالَ سَمِعْتُ أَنَسَ بْنَ مَالِكٍ، يَقُولُ كَانَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم وَالْمَرْأَةُ مِنْ نِسَائِهِ يَغْتَسِلاَنِ مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ‏.‏ زَادَ مُسْلِمٌ وَوَهْبٌ عَنْ شُعْبَةَ مِنَ الْجَنَابَةِ

Narrated By Anas bin Malik : The Prophet and one of his wives used to take a bath from a single pot of water. (Shu'ba added to Anas's Statement "After the Janaba").

حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ نبیﷺ اور آپ کی ایک زوجہ محترمہ ایک ہی برتن سے غسل کیا کرتے تھے، مسلم بن ابراہیم اور وہب بن جریر نے شعبہ سے لفظِ جنابت کا ذکر بھی کیا ہے ( یعنی غسلِ جنابت)۔

Chapter No: 10

باب تَفْرِيقِ الْغُسْلِ وَالْوُضُوءِ

Interval during ablution or bath.

باب: وضو اور غسل میں بیچ میں ٹھہر جانا

وَيُذْكَرُ عَنِ ابْنِ عُمَرَ، أَنَّهُ غَسَلَ قَدَمَيْهِ بَعْدَ مَا جَفَّ وَضُوءُهُ

It is quoted from Ibn Umar that he washed his feet after the other parts (which are washed in ablution) had become dry.

اور عبداللہ بن عمرؓ سے منقول ہے کہ انہوں نے اپنے پاؤں اس وقت دھوئے جب وضو سوکھ چکا تھا۔

حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مَحْبُوبٍ، قَالَ حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَاحِدِ، قَالَ حَدَّثَنَا الأَعْمَشُ، عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ، عَنْ كُرَيْبٍ، مَوْلَى ابْنِ عَبَّاسٍ عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ، قَالَ قَالَتْ مَيْمُونَةُ وَضَعْتُ لِرَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم مَاءً يَغْتَسِلُ بِهِ، فَأَفْرَغَ عَلَى يَدَيْهِ، فَغَسَلَهُمَا مَرَّتَيْنِ مَرَّتَيْنِ أَوْ ثَلاَثًا، ثُمَّ أَفْرَغَ بِيَمِينِهِ عَلَى شِمَالِهِ، فَغَسَلَ مَذَاكِيرَهُ، ثُمَّ دَلَكَ يَدَهُ بِالأَرْضِ، ثُمَّ مَضْمَضَ وَاسْتَنْشَقَ، ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ وَيَدَيْهِ ثُمَّ غَسَلَ رَأْسَهُ ثَلاَثًا، ثُمَّ أَفْرَغَ عَلَى جَسَدِهِ، ثُمَّ تَنَحَّى مِنْ مَقَامِهِ فَغَسَلَ قَدَمَيْهِ‏

Narrated By Maimuna : I placed water for the bath of Allah's Apostle and he poured water over his hands and washed them twice or thrice; then he poured water with his right hand over his left and washed his private parts (with his left hand). He rubbed his hand over the earth and rinsed his mouth and washed his nose by putting water in it and blowing it out. After that he washed his face, both fore arms and head thrice and then poured water over his body. He withdrew from that place and washed his feet.

حضر ت میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں نے رسول اللہﷺکےلیے غسل کا پانی رکھا، آپﷺ نے پہلے دونوں ہاتھوں پر پانی ڈال کر انہیں دو یا تین بار دھویا، پھر داہنے ہاتھ سے بائیں ہاتھ پر پانی ڈالا اور بائیں ہاتھ سے طہارت کی، پھر اپنا ہاتھ زمین پر رگڑا، پھر کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا، پھر چہرہ دھویا، اور دونوں ہاتھ دھوئے ، پھر تین بار سر دھویا، پھر سارے بدن پر پانی بہایا اور پھر تھوڑا پیچھے ہٹ کر دونوں پاؤں دھوئے۔

123