Sayings of the Messenger

 

‏‏بِسْمِ اللهِ الرَّحْمَنُ الرَّحِيم

In the Name of Allah, the Most Gracious, the Most Merciful

شروع ساتھ نام اللہ کےجو بہت رحم والا مہربان ہے۔

يُقَالُ لاَ يُنَوَّنُ أَحَدٌ، أَىْ وَاحِدٌ

اَحَد پر تنوین نہیں پڑھی جاتی (دال کو ساکن پڑھنا چاہیے)۔ اَحَدکا معنی ایک

 

Chapter No: 1

باب

Chapter

باب :

حَدَّثَنَا أَبُو الْيَمَانِ، حَدَّثَنَا شُعَيْبٌ، حَدَّثَنَا أَبُو الزِّنَادِ، عَنِ الأَعْرَجِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ قَالَ اللَّهُ كَذَّبَنِي ابْنُ آدَمَ وَلَمْ يَكُنْ لَهُ ذَلِكَ، وَشَتَمَنِي وَلَمْ يَكُنْ لَهُ ذَلِكَ، فَأَمَّا تَكْذِيبُهُ إِيَّاىَ فَقَوْلُهُ لَنْ يُعِيدَنِي كَمَا بَدَأَنِي، وَلَيْسَ أَوَّلُ الْخَلْقِ بِأَهْوَنَ عَلَىَّ مِنْ إِعَادَتِهِ، وَأَمَّا شَتْمُهُ إِيَّاىَ فَقَوْلُهُ اتَّخَذَ اللَّهُ وَلَدًا، وَأَنَا الأَحَدُ الصَّمَدُ لَمْ أَلِدْ وَلَمْ أُولَدْ وَلَمْ يَكُنْ لِي كُفْأً أَحَدٌ ‏"‏‏.‏

Narrated By Abu Huraira : The Prophet said, "Allah said: 'The son of Adam tells a lie against Me,, though he hasn't the right to do so. He abuses me though he hasn't the right to do so. As for his telling a lie against Me, it is his saying that I will not recreate him as I created him for the first time. In fact, the first creation was not easier for Me than new creation. As for his abusing Me, it is his saying that Allah has begotten children, while I am the One, the Self-Sufficient Master Whom all creatures need, I beget not, nor was I begotten, and there is none like unto Me."

ہم سے ابو الیمان نے بیان کیا، کہا ہم سے شعیب نے، کہا ہم سے ابو الزناد نے، انہوں نے اعرج سے، انہوں نے ابو ہریرہؓ سے، انہوں نے رسول اللہﷺ سے، آپؐ نے فرمایا اللہ تعالٰی ارشاد فرماتا ہے آدمی مجھ کو جھٹلاتا ہے۔ یہ اس کو زیبا نہ تھا۔ مجھ کو گالی دی اس کو یہ نہیں چاہئے تھا۔ جھٹلانا یہ ہے کہ وہ کہتا ہے میں اس کو دوبارہ پیدا نہیں کروں گا۔ حالانکہ یہ دوبارہ پیدا کرنا پہلی بار پیدا کرنے سے زیادہ مشکل نہیں ہے۔ اور گالی دینا یہ ہے کہ (معاذ اللہ) کہتا ہے اللہ کی اولاد ہے۔ اور میں تو اکیلا ہوں۔ بے نیاز ہوں۔ نہ مجھ کو کسی نے جنا ہے۔ نہ میں نے کسی کو جنا ہے۔ میرے تو جوڑ کا کوئی دوسرا ہے ہی نہیں۔

Chapter No: 2

باب قَوْلِهِ ‏{‏اللَّهُ الصَّمَدُ‏}‏

The Statement of Allah, "Allah-us-Samad (The Self-Sufficient Master, Whom all creatures need, He neither eats nor drink)." (V.112:2)

باب : اللہ تعالیٰ کے اس قول اَللہُ الصَّمَد کی تفسیر۔

وَالْعَرَبُ تُسَمِّي أَشْرَافَهَا الصَّمَدَ‏.‏ قَالَ أَبُو وَائِلٍ هُوَ السَّيِّدُ الَّذِي انْتَهَى سُودَدُهُ‏.‏

عرب لوگ سردار اور شریف کو صمد کہتے ہیں۔ ابو وائل شقیق بن سلمہ نے کہا حد درجہ سب سے بڑا سردار۔

حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ مَنْصُورٍ، قَالَ وَحَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنْ هَمَّامٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ قَالَ اللَّهُ كَذَّبَنِي ابْنُ آدَمَ وَلَمْ يَكُنْ لَهُ ذَلِكَ، وَشَتَمَنِي وَلَمْ يَكُنْ لَهُ ذَلِكَ، أَمَّا تَكْذِيبُهُ إِيَّاىَ أَنْ يَقُولَ إِنِّي لَنْ أُعِيدَهُ كَمَا بَدَأْتُهُ، وَأَمَّا شَتْمُهُ إِيَّاىَ أَنْ يَقُولَ اتَّخَذَ اللَّهُ وَلَدًا، وَأَنَا الصَّمَدُ الَّذِي لَمْ أَلِدْ وَلَمْ أُولَدْ وَلَمْ يَكُنْ لِي كُفُؤًا أَحَدٌ ‏"‏‏.‏ ‏{‏لَمْ يَلِدْ وَلَمْ يُولَدْ * وَلَمْ يَكُنْ لَهُ كُفُؤًا أَحَدٌ‏}‏ كُفُؤًا وَكَفِيئًا وَكِفَاءً وَاحِدٌ‏.‏

Narrated By Abu Huraira : Allah's Apostle said, "Allah said: 'The son of Adam tells a lie against Me and he hasn't the right to do so; and he abuses me and he hasn't the right to do so. His telling a lie against Me is his saying that I will not recreate him as I created him for the first time; and his abusing Me is his saying that Allah has begotten children, while I am the self-sufficient Master, Whom all creatures need, Who begets not nor was He begotten, and there is none like unto Me."

ہم سے اسحاق بن منصور نے بیان کیا، کہا ہم سے عبدالرزاق نے، کہا ہم کو معمر نے خبر دی، انہوں نے ہمام بن منبہ سے، انہوں نے ابو ہریرہؓ سے، انہوں نے کہا رسول اللہﷺ نے فرمایا آدمی نےمجھ کو جھٹلایا۔ اس کو یہ زیبا نہ تھا۔ اس نے مجھ کو گالی دی۔ اس کو یہ مناسب نہ تھا۔ جھٹلانا تو یہ ہے کہتا ہے میں اس کو (قیامت کے دن) دوبارہ زندہ نہ کر سکوں گا۔ جیسے شروع میں میں نے اس کو پیدا کیا تھا۔ گالی دینا یہ ہے کہ کہتا ہے اللہ تعالٰی کی اولاد ہے۔ اور میں تو بے نیاز بادشاہ ہوں۔ نہ مجھ کو کسی نے جنا۔ نہ میں نے کسی کو جنا۔ نہ میرے جوڑ کا کوئی دوسرا ہے۔