Sayings of the Messenger

 

123Last ›

Chapter No: 1

بَابُ فَضْلِ الْوُضُوءِ

About the merit of Wudu

وضو کی فضیلت

حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ مَنْصُورٍ حَدَّثَنَا حَبَّانُ بْنُ هِلَالٍ حَدَّثَنَا أَبَانُ حَدَّثَنَا يَحْيَى أَنَّ زَيْدًا حَدَّثَهُ أَنَّ أَبَا سَلَّامٍ حَدَّثَهُ عَنْ أَبِي مَالِكٍ الْأَشْعَرِيِّ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ الطُّهُورُ شَطْرُ الْإِيمَانِ وَالْحَمْدُ لِلَّهِ تَمْلَأُ الْمِيزَانَ وَسُبْحَانَ اللَّهِ وَالْحَمْدُ لِلَّهِ تَمْلَآَنِ أَوْ تَمْلَأُ مَا بَيْنَ السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ وَالصَّلَاةُ نُورٌ وَالصَّدَقَةُ بُرْهَانٌ وَالصَّبْرُ ضِيَاءٌ وَالْقُرْآنُ حُجَّةٌ لَكَ أَوْ عَلَيْكَ كُلُّ النَّاسِ يَغْدُو فَبَايِعٌ نَفْسَهُ فَمُعْتِقُهَا أَوْ مُوبِقُهَا.

It was narrated that Abu Malik Al-Ash'ari said: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Purification is half of faith, ''Al-Hamdu Lillah" fills the Balance and "Subhan-Allahi wal-hamdu Lillah" fill - or fills - the space between heaven and earth. As-Salat (prayer) is light, As-Sadaqa (charity) is proof, As-Sabr (patience) is illumination and the Qur'an is evidence for you or against you. All people go out in the morning and sell themselves, either freeing themselves or condemning themselves."

حضرت ابو مالک اشعری رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: طہارت اور پاکیزگی نصف ایمان ہے اور الحمد للہ ترازو کو بھر دے گا۔ (یعنی اس قدر اس کا ثواب عظیم ہے کہ اعمال تولنے کا ترازو اس کے اجر سے بھر جائے گا) اور سبحان اللہ اور الحمد للہ دونوں آسمانوں اور زمین کے بیچ کی جگہ کو بھر دیں گے اور نماز نور ہے اور صدقہ دلیل ہے اور صبر روشنی ہے اور قرآن تیرے لئے دلیل ہو گا یا تیرے خلاف دلیل ہو گا (اگر قرآن پر عمل ہو گا تو دلیل بن جائے گا ورنہ وبال بن جائیگا)۔ہر ایک آدمی (بھلا ہو یا برا)صبح کو اٹھتا ہے یا تو اپنے آپ کو (نیک کام کر کے اللہ کے عذاب سے ) آزاد کرتا ہے یا (بُرے کام کر کے ) اپنے آپ کو تباہ کرتا ہے۔

Chapter No: 2

بَابُ وُجُوبِ الطَّهَارَةِ لِلصَّلَاةِ

The obligation of purification for the prayer (Salah)

نماز کے لیے طہارت کا وجوب

حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ مَنْصُورٍ وَقُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَأَبُو كَامِلٍ الْجَحْدَرِيُّ وَاللَّفْظُ لِسَعِيدٍ قَالُوا حَدَّثَنَا أَبُو عَوَانَةَ عَنْ سِمَاكِ بْنِ حَرْبٍ عَنْ مُصْعَبِ بْنِ سَعْدٍ قَالَ دَخَلَ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عُمَرَ عَلَى ابْنِ عَامِرٍ يَعُودُهُ وَهُوَ مَرِيضٌ فَقَالَ أَلَا تَدْعُو اللَّهَ لِي يَا ابْنَ عُمَرَ؟ قَالَ إِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ لَا تُقْبَلُ صَلَاةٌ بِغَيْرِ طُهُورٍ وَلَا صَدَقَةٌ مِنْ غُلُولٍ وَكُنْتَ عَلَى الْبَصْرَةِ.

It was narrated from Simak bin Harb, that Mus'ab bin Sa'd said: "'Abdullah bin 'Umar came to visit Ibn 'Amir when he was sick and he said: 'Won't you supplicate to Allah for me, O Ibn 'Umar?' He said: 'I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: "No Salat is accepted without Wudu' (purification), and no charity (is accepted) that comes from Ghulul," and you were the governor of Al-Basrah."'

حضرت مصعب بن سعد سے روایت ہے کہ عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ ابن عامر کی عیادت کے لیے آئے کیونکہ وہ بیمار تھے ۔ابن عامر نے کہا اے ابن عمر تم میرے لیے دعا نہیں کرتے ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے کہ اللہ تعالیٰ نماز کو بغیر طہارت کے قبول ہی نہیں کرتا ، اور نہ ہی مال غنیمت کےچوری شدہ مال سے صدقہ قبول فرماتا ہے ۔اور آپ تو بصرہ کے حاکم تھے ۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى وَابْنُ بَشَّارٍ قَالَا حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ ح و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا حُسَيْنُ بْنُ عَلِيٍّ عَنْ زَائِدَةَ قَالَ أَبُو بَكْرٍ وَوَكِيعٌ عَنْ إِسْرَائِيلَ كُلُّهُمْ عَنْ سِمَاكِ بْنِ حَرْبٍ بِهَذَا الْإِسْنَادِ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِمِثْلِهِ.

A similar report (as no. 535) was narrated from Simak bin Harb with this chain, from the Prophet (s.a.w).

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ بْنُ هَمَّامٍ حَدَّثَنَا مَعْمَرُ بْنُ رَاشِدٍ عَنْ هَمَّامِ بْنِ مُنَبِّهٍ أَخِي وَهْبِ بْنِ مُنَبِّهٍ قَالَ هَذَا مَا حَدَّثَنَا أَبُو هُرَيْرَةَ عَنْ مُحَمَّدٍ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَذَكَرَ أَحَادِيثَ مِنْهَا وَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَا تُقْبَلُ صَلَاةُ أَحَدِكُمْ إِذَا أَحْدَثَ حَتَّى يَتَوَضَّأَ.

Abu Hurairah narrated from Muhammad the Messenger of Allah (s.a.w) - and he quoted several Ahadith, including: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'The Salat of one of you will not be accepted when he commits Hadith, until he performs Wudu'."

ہمام بن منبہ سے روایت ہے جو وہب بن منبہ کے بھائی ہیں انہوں نے کہا یہ وہ حدیثیں ہیں جو ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ نے ہمیں آپ ﷺسے بیان کیں، ان میں سے کچھ احادیث کا ذکر کیا ۔ اور فرمایا رسول اللہ ﷺنے اللہ تعالیٰ تم میں سے کسی کی نماز قبول نہیں کرتا اگر وہ بے وضو ہوجائے یہاں تک کہ وہ وضو نہ کرے۔

Chapter No: 3

بَاب صِفَةِ الْوُضُوءِ وَكَمَالِهِ

About the method of (performing) Wudu and its completeness

وضو کا طریقہ اور اس کو پورا کرنے کا بیان

حَدَّثَنِي أَبُو الطَّاهِرِ أَحْمَدُ بْنُ عَمْرِو بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرِو بْنِ سَرْحٍ وَحَرْمَلَةُ بْنُ يَحْيَى التُّجِيبِيُّ قَالَا أَخْبَرَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ يُونُسَ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ أَنَّ عَطَاءَ بْنَ يَزِيدَ اللَّيْثِيَّ أَخْبَرَهُ أَنَّ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ أَخْبَرَهُ أَنَّ عُثْمَانَ بْنَ عَفَّانَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ دَعَا بِوَضُوءٍ فَتَوَضَّأَ فَغَسَلَ كَفَّيْهِ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ مَضْمَضَ وَاسْتَنْثَرَ ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ غَسَلَ يَدَهُ الْيُمْنَى إِلَى الْمِرْفَقِ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ غَسَلَ يَدَهُ الْيُسْرَى مِثْلَ ذَلِكَ ثُمَّ مَسَحَ بِرَأْسِهِ ثُمَّ غَسَلَ رِجْلَهُ الْيُمْنَى إِلَى الْكَعْبَيْنِ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ غَسَلَ الْيُسْرَى مِثْلَ ذَلِكَ ثُمَّ قَالَ رَأَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأَ نَحْوَ وُضُوئِي هَذَا ثُمَّ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مَنْ تَوَضَّأَ نَحْوَ وُضُوئِي هَذَا ثُمَّ قَامَ فَرَكَعَ رَكْعَتَيْنِ لَا يُحَدِّثُ فِيهِمَا نَفْسَهُ غُفِرَ لَهُ مَا تَقَدَّمَ مِنْ ذَنْبِهِ. قَالَ ابْنُ شِهَابٍ وَكَانَ عُلَمَاؤُنَا يَقُولُونَ هَذَا الْوُضُوءُ أَسْبَغُ مَا يَتَوَضَّأُ بِهِ أَحَدٌ لِلصَّلَاةِ.

Humran, the freed slave of 'Uthman, narrated that 'Uthman bin 'Affan called for water for Wudu', to perform Wudu'. He washed his hands three times, then he rinsed his mouth and nose, then he washed his face three times, then he washed his right hand up to the elbow three times, then he washed his left hand in like manner. Then he wiped his head, then he washed his right foot up to the ankle three times, then he washed his left foot in like manner. Then he said: "I saw the Messenger of Allah (s.a.w.) performing Wudu' as I have done it, then the Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Whoever performs Wudu' as I have done it, then stands up and prays two Rak'ah in which he does not let his mind wander, he will be forgiven his previous sins." (One of the narrators) Ibn Shihab said: "Our scholars used to say: 'This is the most complete Wudu' that anyone may do for the Salat."'

حمران سے روایت ہے جو سیدنا عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ کے آزاد کردہ غلام تھے ، انہوں نے کہا کہ سیدنا عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ نے وضو کا پانی منگوایا اور وضو کیا تو پہلے دونوں ہاتھ کلائیوں تک تین بار دھوئے ، پھر کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا۔ پھر تین بار منہ دھویا، پھر داہنا ہاتھ دھویا کہنی تک پھر تین بار بایاں ہاتھ دھویا پھر مسح کیا سر پر۔ پھر داہنا پاؤں ٹخنےتک دھویا تین بار پھر اسی طرح بایاں پاؤں ٹخنےتک دھویا تین بار۔ اس کے بعد کہا کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم کو دیکھا کہ آپ صلی اللہ علیہ و سلم نے اسی طرح وضو کیا جیسے میں نے اب وضو کیا۔ پھر رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم نے فرمایا کہ جو شخص میرے وضو کی طرح وضو کرے پھر کھڑے ہو کر دو رکعتیں پڑھے اور ان (کے پڑھنے ) میں اور کسی خیال میں غرق نہ ہو تو اس کے اگلے گناہ بخش دیئے جائیں گے۔ ابن شہاب نے کہا کہ ہمارے علماء کہتے تھے کہ یہ وضو سب وضوؤں میں سے پورا ہے جو نماز کے لئے کیا جائے۔


و حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا يَعْقُوبُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ حَدَّثَنَا أَبِي عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ عَطَاءِ بْنِ يَزِيدَ اللَّيْثِيِّ عَنْ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ أَنَّهُ رَأَى عُثْمَانَ دَعَا بِإِنَاءٍ فَأَفْرَغَ عَلَى كَفَّيْهِ ثَلَاثَ مِرَارٍ فَغَسَلَهُمَا ثُمَّ أَدْخَلَ يَمِينَهُ فِي الْإِنَاءِ فَمَضْمَضَ وَاسْتَنْثَرَ ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ وَيَدَيْهِ إِلَى الْمِرْفَقَيْنِ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ مَسَحَ بِرَأْسِهِ ثُمَّ غَسَلَ رِجْلَيْهِ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مَنْ تَوَضَّأَ نَحْوَ وُضُوئِي هَذَا ثُمَّ صَلَّى رَكْعَتَيْنِ لَا يُحَدِّثُ فِيهِمَا نَفْسَهُ غُفِرَ لَهُ مَا تَقَدَّمَ مِنْ ذَنْبِهِ.

It was narrated from Humran, the freed slave of 'Uthman, that he saw 'Uthman call for a vessel (of water). He poured some (water) onto his hands three times and washed them, then he put his right hand into the vessel (took out water) and rinsed his mouth and nose. Then he washed his face three times and his hands up to the elbows three times. Then he wiped his head, then he washed his feet three times. Then he said: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Whoever performs Wudu' as I have just done it, then prays two Rak'ah in which he does not let his mind wander, will be forgiven his previous sins."'

حمران سے روایت ہے جو سیدنا عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ کے آزاد کردہ غلام تھے ، انہوں نے کہا کہ سیدنا عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ کو میں نے دیکھا انہوں نے ایک پانی کابرتن منگوایا اوراپنے دونوں ہاتھوں پر تین بار پانی ڈالا ان کو دھویا پھر داہنا ہاتھ برتن میں ڈال دیا اور کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا پھر منہ کو تین باب دھویا اور دونوں پاؤں کو تین بار دھویا پھر کہا کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جو شخص میرے وضو کی طرح وضو کرے پھر کھڑے ہو کر دو رکعتیں پڑھے اور ان (کے پڑھنے ) میں اور کسی خیال میں غرق نہ ہو تو اس کے اگلے گناہ بخش دیئے جائیں گے۔

Chapter No: 4

بَابُ فَضْلِ الْوُضُوءِ وَالصَّلَاةِ عَقِبَهُ

Concerning the merit of Wudu and that of offering prayer (Salah) subsequently

وضو کے بعد نماز پڑھنے کی فضیلت

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَعُثْمَانُ بْنُ مُحَمَّدِ بْنِ أَبِي شَيْبَةَ وَإِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ الْحَنْظَلِيُّ وَاللَّفْظُ لِقُتَيْبَةَ قَالَ إِسْحَاقُ أَخْبَرَنَا وَقَالَ الْآخَرَانِ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ قَالَ سَمِعْتُ عُثْمَانَ بْنَ عَفَّانَ وَهُوَ بِفِنَاءِ الْمَسْجِدِ فَجَاءَهُ الْمُؤَذِّنُ عِنْدَ الْعَصْرِ فَدَعَا بِوَضُوءٍ فَتَوَضَّأَ ثُمَّ قَالَ وَاللَّهِ لَأُحَدِّثَنَّكُمْ حَدِيثًا لَوْلَا آيَةٌ فِي كِتَابِ اللَّهِ مَا حَدَّثْتُكُمْ إِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ لَا يَتَوَضَّأُ رَجُلٌ مُسْلِمٌ فَيُحْسِنُ الْوُضُوءَ فَيُصَلِّي صَلَاةً إِلَّا غَفَرَ اللَّهُ لَهُ مَا بَيْنَهُ وَبَيْنَ الصَّلَاةِ الَّتِي تَلِيْهَا.

It was narrated that Humran, the freed slave of 'Uthman, said: "I heard 'Uthman bin 'Affan, while he was in the courtyard of the Masjid, and the Mu'adhdhin came to him at the time of 'Asr. He called for water for Wudu' and performed Wudu', then he said: 'By Allah, I am going to tell you a Hadith which, were it not for a Verse in the Book of Allah, I would not have told you. I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: "No Muslim man performs Wudu' and performs Wudu' well, then performs Salat, but he will be forgiven for whatever (sins) come between that and the Salat which follows it."

حمران سے روایت ہے جو حضرت عثمان کے مولیٰ تھے انہوں نے کہا میں نے عثمان بن عفان سے سنا وہ مسجد کے سامنے تھے اتنے میں عصر کی نماز کے وقت مؤذن ان کے پاس آیا انہوں نے وضو کا پانی منگوایا اور وضو کیا پھر کہا قسم اللہ کی میں تم سے ایک حدیث بیان کرتا ہوں اگر اللہ کی کتاب میں ایک آیت نہ ہو تو میں تم سے بیان نہ کرتا۔میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے جو شخص اچھی طرح وضو کرے پھر نمازپڑھے تو اس کے وہ گنا ہ بخش دیئے جائیں گے جو اس نماز سے لیکر دوسری نماز تک ہوں گے۔


و حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ حَدَّثَنَا أَبُو أُسَامَةَ ح و حَدَّثَنَا زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ وَأَبُو كُرَيْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ ح حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي عُمَرَ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ جَمِيعًا عَنْ هِشَامٍ بِهَذَا الْإِسْنَادِ وَفِي حَدِيثِ أَبِي أُسَامَةَ فَيُحْسِنُ وُضُوءَهُ ثُمَّ يُصَلِّي الْمَكْتُوبَةَ.

It was narrated from Hisham with this chain (a similar Hadith as no. 540). In the Hadith of Abu Usamah it says: "And performs Wudu' well, then offers an obligatory prayer."

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے۔صرف اتنا فرق ہے کہ آپﷺنےفرمایا اپنا وضو اچھی طرح کرے پھر فرض نماز پڑھے۔


و حَدَّثَنَا زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا يَعْقُوبُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ حَدَّثَنَا أَبِي عَنْ صَالِحٍ قَالَ ابْنُ شِهَابٍ وَلَكِنْ عُرْوَةُ يُحَدِّثُ عَنْ حُمْرَانَ أَنَّهُ قَالَ فَلَمَّا تَوَضَّأَ عُثْمَانُ قَالَ وَاللَّهِ لَأُحَدِّثَنَّكُمْ حَدِيثًا وَاللَّهِ لَوْلَا آيَةٌ فِي كِتَابِ اللَّهِ مَا حَدَّثْتُكُمُوهُ إِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ لَا يَتَوَضَّأُ رَجُلٌ فَيُحْسِنُ وُضُوءَهُ ثُمَّ يُصَلِّي الصَّلَاةَ إِلَّا غُفِرَ لَهُ مَا بَيْنَهُ وَبَيْنَ الصَّلَاةِ الَّتِي تَلِيهَا. قَالَ عُرْوَةُ الْآيَةُ { إِنَّ الَّذِينَ يَكْتُمُونَ مَا أَنْزَلْنَا مِنْ الْبَيِّنَاتِ وَالْهُدَى إِلَى قَوْلِهِ: {اللَّاعِنُونَ}

It was narrated that Humran said: "When 'Uthman performed Wudu' he said: 'By Allah, I am going to tell you a Hadith which, by Allah, were it not for a Verse in the Book of Allah, I would not tell it to you. I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: "No man performs Wudu ' and does it well, then performs Salat, but he will be forgiven for whatever (sins) come between that and the Salat which follows it."

حمران سے روایت ہے کہ جب حضرت عثمان رضی اللہ عنہ وضو کرچکے تو انہوں نے کہا قسم اللہ کی میں تم سے ایک حدیث بیان کرتا ہوں اگر اللہ کی کتاب میں ایک آیت نہ ہوتی تو میں اس حدیث کو تم سے بیان نہ کرتا میں نے رسول اللہ سے سنا ہے آپ فرماتے تھے جو شخص اچھی طرح وضو کرے پھر نماز پڑھے تو اس کے وہ گناہ بخشش دئیے جائیں گے جو اس نماز کے بعد سے دوسری نماز تک ہوں گے ۔ عروہ نے کہا وہ آیت یہ ہے ان الذین یکتمون ما انزلنا من البینات والہدی إلی قولہ الاعنون۔


حَدَّثَنَا عَبْدُ بْنُ حُمَيْدٍ وَحَجَّاجُ بْنُ الشَّاعِرِ كِلَاهُمَا عَنْ أَبِي الْوَلِيدِ قَالَ عَبْدٌ حَدَّثَنِي أَبُو الْوَلِيدِ حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ سَعِيدِ بْنِ عَمْرِو بْنِ سَعِيدِ بْنِ الْعَاصِ حَدَّثَنِي أَبِي عَنْ أَبِيهِ قَالَ كُنْتُ عِنْدَ عُثْمَانَ فَدَعَا بِطَهُورٍ فَقَالَ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ مَا مِنْ امْرِئٍ مُسْلِمٍ تَحْضُرُهُ صَلَاةٌ مَكْتُوبَةٌ فَيُحْسِنُ وُضُوءَهَا وَخُشُوعَهَا وَرُكُوعَهَا إِلَّا كَانَتْ كَفَّارَةً لِمَا قَبْلَهَا مِنْ الذُّنُوبِ مَا لَمْ يُؤْتِ كَبِيرَةً وَذَلِكَ الدَّهْرَ كُلَّهُ.

Ishaq bin Sa'eed bin 'Amr bin Sa'eed bin Al-'As narrated: "My father told me that his father said: 'I was with 'Uthman and he called for water for purification. He said: "I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: 'There is no Muslim man who, when the time for a Salat Maktubah (prescribed prayer) comes, performs Wudu' well, focuses with proper humility in his prayer and bows properly, but it will be an expiation for the sins that came before it, so long as he did not commit any major sin, and that applies for all time."'

حضرت عمرو بن سعید بن عاص سے روایت ہے کہ میں حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کے پاس بیٹھا تھا انہوں نے وضو کا پانی منگوایا پھر کہا میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے جو کوئی مسلمان فرض نماز کا وقت پائے پھر اچھی طرح وضو کرے اور دل لگاکر نماز پڑھے اور اچھی طرح رکوع اور سجدہ کرے تو یہ نماز اس کے اگلے گناہوں کا کفارہ ہوجائے گی ۔ جب تک کبیرہ گناہ نہ کرے اور ہمیشہ ایسا ہی ہوا کرے گا۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَأَحْمَدُ بْنُ عَبْدَةَ الضَّبِّيُّ قَالَا حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ وَهُوَ الدَّرَاوَرْدِيُّ عَنْ زَيْدِ بْنِ أَسْلَمَ عَنْ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ قَالَ أَتَيْتُ عُثْمَانَ بْنَ عَفَّانَ بِوَضُوءٍ فَتَوَضَّأَ ثُمَّ قَالَ إِنَّ نَاسًا يَتَحَدَّثُونَ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَحَادِيثَ لَا أَدْرِي مَا هِيَ إِلَّا أَنِّي رَأَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأَ مِثْلَ وُضُوئِي هَذَا ثُمَّ قَالَ مَنْ تَوَضَّأَ هَكَذَا غُفِرَ لَهُ مَا تَقَدَّمَ مِنْ ذَنْبِهِ وَكَانَتْ صَلَاتُهُ وَمَشْيُهُ إِلَى الْمَسْجِدِ نَافِلَةً. وَفِي رِوَايَةِ ابْنِ عَبْدَةَ أَتَيْتُ عُثْمَانَ فَتَوَضَّأَ.

It was narrated that Humran, the freed slave of 'Uthman, said: "I brought water for Wudu' to 'Uthman bin 'Affan, and he performed Wudu', then he said: 'Some people narrate Ahadith from the Messenger of Allah (s.a.w), and I do not know what they are. But I saw the Messenger of Allah (s.a.w) performing Wudu' as I have just done it, then he said: "Whoever performs Wudu' in this manner will be forgiven for his previous sins, and his prayer and his walking to the Masjid will be Nafilah." In the narration of Ibn 'Abdah it is: "I came to 'Uthman and he performed Wudu'."

حضرت عمرو بن سعید بن عاص سے روایت ہے کہ میں حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کے پاس بیٹھا تھا انہوں نے وضو کا پانی منگوایا پھر کہا میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے جو کوئی مسلمان فرض نماز کا وقت پائے پھر اچھی طرح وضو کرے اور دل لگاکر نماز پڑھے اور اچھی طرح رکوع اور سجدہ کرے تو یہ نماز اس کے اگلے گناہوں کا کفارہ ہوجائے گی ۔ جب تک کبیرہ گناہ نہ کرے۔ اور ہمیشہ ایسا ہی ہوا کرے گا۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ وَاللَّفْظُ لِقُتَيْبَةَ وَأَبِي بَكْرٍ قَالُوا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ سُفْيَانَ عَنْ أَبِي النَّضْرِ عَنْ أَبِي أَنَسٍ أَنَّ عُثْمَانَ تَوَضَّأَ بِالْمَقَاعِدِ فَقَالَ أَلَا أُرِيكُمْ وُضُوءَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ثُمَّ تَوَضَّأَ ثَلَاثًا ثَلَاثًا وَزَادَ قُتَيْبَةُ فِي رِوَايَتِهِ قَالَ سُفْيَانُ قَالَ أَبُو النَّضْرِ عَنْ أَبِي أَنَسٍ قَالَ وَعِنْدَهُ رِجَالٌ مِنْ أَصْحَابِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ.

It was narrated from Abu Anas that 'Uthman performed Wudu' in Al-Maqa'id, and he said: "Shall I not show you how the Messenger of Allah (s.a.w) performed Wudu'?" Then he performed Wudu', washing each part three times. Qutaibah added in his narration: "Sufyan said: 'Abu An-Nadr said that Abu Anas said: "And with him were some men from among the Companions of the Messenger of Allah (s.a.w)."

ابو انس (جو امام مالک کے دادا ہیں) سے روایت ہے کہ حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے مقاعد میں وضو کیا پھر فرمایا کیا میں تمہیں رسول اللہ ﷺکا وضو نہ دکھاؤں؟پھر وضو تین بار کیا۔ قتیبہ کی روایت میں اتنا زیادہ ہے کہ جس وقت حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے یہ حدیث بیان کی اس وقت ان کے پاس رسول اللہ ﷺکے کئی اصحاب موجود تھے۔


حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ مُحَمَّدُ بْنُ الْعَلَاءِ وَإِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ جَمِيعًا عَنْ وَكِيعٍ قَالَ أَبُو كُرَيْبٍ حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ مِسْعَرٍ عَنْ جَامِعِ بْنِ شَدَّادٍ أَبِي صَخْرَةَ قَالَ سَمِعْتُ حُمْرَانَ بْنَ أَبَانَ قَالَ كُنْتُ أَضَعُ لِعُثْمَانَ طَهُورَهُ فَمَا أَتَى عَلَيْهِ يَوْمٌ إِلَّا وَهُوَ يُفِيضُ عَلَيْهِ نُطْفَةً وَقَالَ عُثْمَانُ حَدَّثَنَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عِنْدَ انْصِرَافِنَا مِنْ صَلَاتِنَا هَذِهِ قَالَ مِسْعَرٌ أُرَاهَا الْعَصْرَ فَقَالَ مَا أَدْرِي أُحَدِّثُكُمْ بِشَيْءٍ أَوْ أَسْكُتُ فَقُلْنَا يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنْ كَانَ خَيْرًا فَحَدِّثْنَا وَإِنْ كَانَ غَيْرَ ذَلِكَ فَاللَّهُ وَرَسُولُهُ أَعْلَمُ قَالَ مَا مِنْ مُسْلِمٍ يَتَطَهَّرُ فَيُتِمُّ الطُّهُورَ الَّذِي كَتَبَ اللَّهُ عَلَيْهِ فَيُصَلِّي هَذِهِ الصَّلَوَاتِ الْخَمْسَ إِلَّا كَانَتْ كَفَّارَاتٍ لِمَا بَيْنَهَا.

It was narrated that Jami' bin Shaddad Abu Sakhrah said: "I heard Humran bin Aban say: 'I used to bring (water for) purification to 'Uthman, and there was no day when he did not bathe with a small amount of water. 'Uthman said: "The Messenger of Allah (s.a.w) told us when we were returning from this prayer - Mi'sar said: "I think it was 'Asr" - "I do not know, should I tell you about something, or not?" We said: "O Messenger of Allah, if it is good, then tell us, and if it is not, then Allah and His Messenger know best." He said: "There is no Muslim who purifies himself and does so properly in the manner enjoined by Allah, then offers these five prayers, but they will be an expiation for whatever (of sin) comes in between."

حمران بن ابان سے روایت ہے کہ میں حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کے لیے طہارت کا پانی رکھا کرتا تھا۔وہ ہر روز ایک تھوڑے پانی سے نہالیا کرتے۔ حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے کہا رسول اللہ ﷺ نے ہمیں اس وقت حدیث بیان کی جب ہم اس نماز سے فارغ ہوئے۔مسعر نے کہا میرا خیال ہے کہ وہ عصر کی نماز تھی۔آپﷺنے فرمایا میں نہیں جانتا کہ تمہیں حدیث بیان کروں یا خاموش رہوں ۔ ہم نے کہا یارسول اللہﷺاگر بہتری کی بات ہو تو بیان کیجئے اور جو بہتر نہ ہو تو اللہ اور ا سکا رسول خوب جانتا ہے آپﷺنے فرمایا جومسلمان طہارت کرے پھر پوری طہارت کرے جس کو اللہ تعالیٰ نے فرض کیا ہے اور پانچویں نمازیں پڑھے اس کے وہ گناہ معاف ہوجائیں گے جو ان نمازوں کے درمیان میں کرے گا۔


حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُعَاذٍ حَدَّثَنَا أَبِي ح و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى وَابْنُ بَشَّارٍ قَالَا حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ قَالَا جَمِيعًا حَدَّثَنَا شُعْبَةُ عَنْ جَامِعِ بْنِ شَدَّادٍ قَالَ سَمِعْتُ حُمْرَانَ بْنَ أَبَانَ يُحَدِّثُ أَبَا بُرْدَةَ فِي هَذَا الْمَسْجِدِ فِي إِمَارَةِ بِشْرٍ أَنَّ عُثْمَانَ بْنَ عَفَّانَ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مَنْ أَتَمَّ الْوُضُوءَ كَمَا أَمَرَهُ اللَّهُ تَعَالَى فَالصَّلَوَاتُ الْمَكْتُوبَاتُ كَفَّارَاتٌ لِمَا بَيْنَهُنَّ. هَذَا حَدِيثُ ابْنِ مُعَاذٍ وَلَيْسَ فِي حَدِيثِ غُنْدَرٍ فِي إِمَارَةِ بِشْرٍ وَلَا ذِكْرُ الْمَكْتُوبَاتِ.

It was narrated that Jami' bin Shaddad said: "I heard Humran bin Aban telling Abu Burdah in this Masjid, during the governorship of Bishr, that 'Uthman bin 'Affan said: 'The Messenger of Allah (s.a.w) said: "Whoever performs Wudu' properly as enjoined by Allah the Most High, then the five prescribed prayers will be an expiation for whatever (of sin) comes in between." This is the Hadith of (one of the narrators) Ibn Mu'adh. In the Hadith of Ghundar (one of the narrators) it does not mention the governorship of Bishr or the obligatory prayers.

جامع بن شداد سے روایت ہے انہوں نے کہا میں نے حمران بن ابان سے سنا وہ بشر کی حکومت میں ابو بردہ سے حدیث بیان کرتے تھے کہ عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ نے کہا رسول اللہ ﷺنے فرمایا جو شخص وضو کو پورا کرے جس طرح اللہ نے حکم کیا ہے تو اس کی فرض نمازیں کفارہ ہوں گی ان گناہوں کا جو ان کے درمیان میں کرے۔ یہ روایت ابن معاذ کی ہے ۔ اور غندر کی روایت میں یہ عبارت نہیں (بشر کی امارت میں) نہ فرض نمازوں کا بیان ہے۔


حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ قَالَ وَأَخْبَرَنِي مَخْرَمَةُ بْنُ بُكَيْرٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ قَالَ تَوَضَّأَ عُثْمَانُ بْنُ عَفَّانَ يَوْمًا وُضُوءًا حَسَنًا ثُمَّ قَالَ رَأَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأَ فَأَحْسَنَ الْوُضُوءَ ثُمَّ قَالَ مَنْ تَوَضَّأَ هَكَذَا ثُمَّ خَرَجَ إِلَى الْمَسْجِدِ لَا يَنْهَزُهُ إِلَّا الصَّلَاةُ غُفِرَ لَهُ مَا خَلَا مِنْ ذَنْبِهِ.

It was narrated that Humran, the freed slave of 'Uthman, said: "'Uthman bin 'Affan performed Wudu' one day and performed Wudu' well, then he said: 'I saw the Messenger of Allah (s.a.w) performing Wudu' and doing it well, then he said: "Whoever performs Wudu' like this, then goes out to the Masjid with no motive other than the prayer, his previous sins will be forgiven."

حمران سے روایت ہے کہ جو عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ کے آزاد کرہ غلام تھے ۔ انہوں نے کہا حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے ایک دن اچھی طرح وضو کیا پھر کہا میں نے رسول اللہ ﷺکو دیکھاآپ نے اچھی طرح وضو کیا ۔ پھر فرمایا جو شخص اس طرح وضو کرے پھر مسجد میں جائے - خالص نماز ہی کے لیے اٹھے کسی اور کام کی نیت سے نہیں - تو اس کے اگلے گنا ہ بخش دئیے جائیں گے۔


و حَدَّثَنِي أَبُو الطَّاهِرِ وَيُونُسُ بْنُ عَبْدِ الْأَعْلَى قَالَا أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ وَهْبٍ عَنْ عَمْرِو بْنِ الْحَارِثِ أَنَّ الْحُكَيْمَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ الْقُرَشِيَّ حَدَّثَهُ أَنَّ نَافِعَ بْنَ جُبَيْرٍ وَعَبْدَ اللَّهِ بْنَ أَبِي سَلَمَةَ حَدَّثَاهُ أَنَّ مُعَاذَ بْنَ عَبْدِ الرَّحْمَنِ حَدَّثَهُمَا عَنْ حُمْرَانَ مَوْلَى عُثْمَانَ بْنِ عَفَّانَ عَنْ عُثْمَانَ بْنِ عَفَّانَ قَالَ سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ مَنْ تَوَضَّأَ لِلصَّلَاةِ فَأَسْبَغَ الْوُضُوءَ ثُمَّ مَشَى إِلَى الصَّلَاةِ الْمَكْتُوبَةِ فَصَلَّاهَا مَعَ النَّاسِ أَوْ مَعَ الْجَمَاعَةِ أَوْ فِي الْمَسْجِدِ غَفَرَ اللَّهُ لَهُ ذُنُوبَهُ.

It was narrated from Humran, the freed slave of 'Uthman, that 'Uthman bin 'Affan said: "I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: 'Whoever performs Wudu' for prayer and does it well, then walks to the obligatory prayer, and offers the prayer with the people, or with the congregation, or in the Masjid, Allah will forgive him his sins."'

حضرت عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ انہوں نے کہا میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے جو شخص نماز کے لیے پورا وضو کرے پھر فرض نماز کے لیے مسجد کو چلے اور لوگوں کے ساتھ یاجمات سے یا مسجد میں نماز پڑھے تو اللہ تعالیٰ اس کے گناہ بخشش دے گا۔

Chapter No: 5

بَابُ الصَّلَوَاتِ الْخَمْسُ وَالْجُمْعَةُ إِلَى الْجُمْعَةِ وَرَمَضَانُ إِلَى رَمَضَانَ مُكَفِّرَاتٌ لِمَا بَيْنَهُنَّ مَا اجْتُنِبَتْ الْكَبَائِرُ

The five daily prayers, and Jum’ah from one to the next, and Ramdan from one to the next, are expiation for whatever (sins) comes in between them, as long as one abstains from major sins

پانچ نمازیں اور ایک جمعہ سے دوسرے جمعہ تک، اور ایک رمضان سے دوسرے رمضان تک کے درمیانی صغیرہ گناہ معاف کردیئے جاتے ہیں ، جب کہ وہ کبیرہ گنا ہ سے بچتا رہے۔

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ أَيُّوبَ وَقُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَعَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ كُلُّهُمْ عَنْ إِسْمَاعِيلَ قَالَ ابْنُ أَيُّوبَ حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ بْنُ جَعْفَرٍ أَخْبَرَنِي الْعَلَاءُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ يَعْقُوبَ مَوْلَى الْحُرَقَةِ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ الصَّلَوَاتُ الْخَمْسُ وَالْجُمْعَةُ إِلَى الْجُمْعَةِ كَفَّارَةٌ لِمَا بَيْنَهُنَّ مَا لَمْ تُغْشَ الْكَبَائِرُ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Messenger of Allah (s.a.w) said: "The (obligatory) five daily prayers, from one Jumu'ah to the next, are an expiation for whatever (sins) come in between, so long as one does not commit major sins."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا پانچوں نمازیں اور جمعہ جمعہ تک ان گناہوں کا کفارہ ہیں جو ان کے درمیان میں ہوں جب تک کبیرہ گناہ نہ کرے۔


حَدَّثَنِي نَصْرُ بْنُ عَلِيٍّ الْجَهْضَمِيُّ أَخْبَرَنَا عَبْدُ الْأَعْلَى حَدَّثَنَا هِشَامٌ عَنْ مُحَمَّدٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ الصَّلَوَاتُ الْخَمْسُ وَالْجُمْعَةُ إِلَى الْجُمْعَةِ كَفَّارَاتٌ لِمَا بَيْنَهُنَّ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Prophet (s.a.w) said: "The five daily prayers and from one Jumu'ah to the next, are an expiation for whatever (of sin) comes in between."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا پانچوں نمازیں اور جمعہ جمعہ تک ان گناہوں کا کفارہ ہیں جو ان کے درمیان میں ہوں ۔


حَدَّثَنِي أَبُو الطَّاهِرِ وَهَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ قَالَا أَخْبَرَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ أَبِي صَخْرٍ أَنَّ عُمَرَ بْنَ إِسْحَاقَ مَوْلَى زَائِدَةَ حَدَّثَهُ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ يَقُولُ الصَّلَوَاتُ الْخَمْسُ وَالْجُمْعَةُ إِلَى الْجُمْعَةِ وَرَمَضَانُ إِلَى رَمَضَانَ مُكَفِّرَاتٌ مَا بَيْنَهُنَّ إِذَا اجْتَنَبَ الْكَبَائِرَ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Messenger of Allah (s.a.w) used to say: "The five daily prayers, from one Jumu'ah to the next, and from one Ramadan to the next, are an expiation for whatever (sins) come in between, so long as one avoids major sins."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا پانچوں نمازیں اور جمعہ جمعہ تک، اوررمضان رمضان تک ان گناہوں کا کفارہ ہیں جو ان کے درمیان میں ہوں بشرطیکہ کبیرہ گناہوں سے بچا جائے۔

Chapter No: 6

بَابُ الذِّكْرِ الْمُسْتَحَبِّ عَقِبَ الْوُضُوءِ

The recommended remembrance (Dhikr) after Wudu

وضو کے بعد مستحب ذکر کا بیان

حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ حَاتِمِ بْنِ مَيْمُونٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ مَهْدِيٍّ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ بْنُ صَالِحٍ عَنْ رَبِيعَةَ يَعْنِي ابْنَ يَزِيدَ عَنْ أَبِي إِدْرِيسَ الْخَوْلَانِيِّ عَنْ عُقْبَةَ بْنِ عَامِرٍ ح وَحَدَّثَنِي أَبُو عُثْمَانَ عَنْ جُبَيْرِ بْنِ نُفَيْرٍ عَنْ عُقْبَةَ بْنِ عَامِرٍ قَالَ كَانَتْ عَلَيْنَا رِعَايَةُ الْإِبِلِ فَجَاءَتْ نَوْبَتِي فَرَوَّحْتُهَا بِعَشِيٍّ فَأَدْرَكْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَائِمًا يُحَدِّثُ النَّاسَ فَأَدْرَكْتُ مِنْ قَوْلِهِ مَا مِنْ مُسْلِمٍ يَتَوَضَّأُ فَيُحْسِنُ وُضُوءَهُ ثُمَّ يَقُومُ فَيُصَلِّي رَكْعَتَيْنِ مُقْبِلٌ عَلَيْهِمَا بِقَلْبِهِ وَوَجْهِهِ إِلَّا وَجَبَتْ لَهُ الْجَنَّةُ قَالَ فَقُلْتُ مَا أَجْوَدَ هَذِهِ فَإِذَا قَائِلٌ بَيْنَ يَدَيَّ يَقُولُ الَّتِي قَبْلَهَا أَجْوَدُ فَنَظَرْتُ فَإِذَا عُمَرُ قَالَ إِنِّي قَدْ رَأَيْتُكَ جِئْتَ آنِفًا قَالَ مَا مِنْكُمْ مِنْ أَحَدٍ يَتَوَضَّأُ فَيُبْلِغُ أَوْ فَيُسْبِغُ الْوَضُوءَ ثُمَّ يَقُولُ أَشْهَدُ أَنْ لَا إِلَهَ إِلَّا اللَّهُ وَأَنَّ مُحَمَّدًا عَبْدُ اللَّهِ وَرَسُولُهُ إِلَّا فُتِحَتْ لَهُ أَبْوَابُ الْجَنَّةِ الثَّمَانِيَةُ يَدْخُلُ مِنْ أَيِّهَا شَاءَ.

It was narrated that 'Uqbah bin 'Amir said: "We were charged with taking care of the camels. When my tum came, I brought them back in the evening and found the Messenger of Allah (s.a.w) standing up, addressing the people. I caught up with him when he was saying: 'There is no Muslim who performs Wudu' and does it well, then stands and prays two Rak'ah in which his heart is focused as he faces the Qiblah, but Paradise will be due to him.' I said: 'How good this!' Someone who was in front of me said: 'What came before it was even better.' I looked and saw that it was 'Umar. He said: 'I see that you have just come; he said: "There is no one among you who performs Wudu' and does it completely - or he said Fayusbighu - then says: 'Ash-hadu An la ilaha illallah, Wa Anna Muhammadan 'Abduhu Wa Rasuluh (I bear witness that none has the right to be worshipped but Allah and that Muhammad is His slave and Messenger),' but the eight gates of Paradise will be opened to him, and he will enter through whichever one he wishes.'"

حضرت عقبہ بن عامررضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ہم اونٹ چرانے کا کام کرتے تھے ، میری باری آئی تو میں اونٹوں کو چرا کر شام کو ان کے رہنے کی جگہ لے کر آیا تو میں نے دیکھا کہ رسول اللہﷺ کھڑے ہوئے لوگوں کو وعظ سنا رہے ہیں۔ آپﷺ نے فرمایا کہ جو مسلمان اچھی طرح وضو کرے ، پھر کھڑا ہو کر دو رکعتیں پڑھے ، اپنے دل کو اور منہ کو لگا کر (یعنی ظاہراً اور باطناً متوجہ رہے ، نہ دل میں دنیا کا خیال لائے نہ منہ ادھر اُدھر پھرائے ) اس کے لئے جنت واجب ہو جائے گی۔ میں نے کہا آپﷺ نے کیا عمدہ بات فرمائی (جس کا ثواب اس قدر بڑا ہے اور محنت بہت کم ہے )۔ اس پر ایک کہنے والا میرے سامنے کہہ رہا تھا کہ پہلی بات اس سے بھی عمدہ تھی۔ میں نے غور سے دیکھا تو وہ سیدنا عمر فاروق رضی اللہ عنہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ میں تجھے دیکھ رہا تھا کہ تو ابھی ابھی آیا ہے۔ (لہٰذا یہ بھی سن لے کہ) آپﷺ نے فرمایا تھا کہ جو کوئی تم میں سے اچھی طرح ، پورا وضو کرے ، پھر کہے (ترجمہ)”میں گواہی دیتا ہوں کہ کوئی عبادت کے لائق نہیں سوائے اللہ کے اور محمدﷺ اس کے بندے اور رسول ہیں“۔ تو اس کے لئے جنت کے آٹھوں دروازے کھول دیئے جائیں گے کہ جس دروازے سے چاہے (جنت میں) داخل ہو جائے۔


و حَدَّثَنَاه أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا زَيْدُ بْنُ الْحُبَابِ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ بْنُ صَالِحٍ عَنْ رَبِيعَةَ بْنِ يَزِيدَ عَنْ أَبِي إِدْرِيسَ الْخَوْلَانِيِّ وَأَبِي عُثْمَانَ عَنْ جُبَيْرِ بْنِ نُفَيْرِ بْنِ مَالِكٍ الْحَضْرَمِيِّ عَنْ عُقْبَةَ بْنِ عَامِرٍ الْجُهَنِيِّ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ فَذَكَرَ مِثْلَهُ غَيْرَ أَنَّهُ قَالَ مَنْ تَوَضَّأَ فَقَالَ أَشْهَدُ أَنْ لَا إِلَهَ إِلَّا اللَّهُ وَحْدَهُ لَا شَرِيكَ لَهُ وَأَشْهَدُ أَنَّ مُحَمَّدًا عَبْدُهُ وَرَسُولُهُ.

It was narrated from 'Uqbah bin 'Amir Al-Juhani that the Messenger of Allah (s.a.w) said:... and he mentioned a similar report (as no. 553), except that he said: "Whoever performs Wudu' then says: 'Ash-hadu An la ilaha illallah Wahdahu La Sharika Lahu, Wa Anna Muhammadan 'Abduhu Wa Rasuluh (none has the right to be worshiped but Allah alone, with no partner or associate, and I bear witness that Muhammad is His slave and Messenger.)'"

اس سند سے بھی مذکورہ بالا حدیث مروی ہے۔

Chapter No: 7

بَابٌ آخَرُ فِيْ صِفَةِ الْوُضُوءِ

Second chapter about the method of Wudu

طریقہ وضو کے بیان میں دوسرا باب

حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ الصَّبَّاحِ حَدَّثَنَا خَالِدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ عَنْ عَمْرِو بْنِ يَحْيَى بْنِ عُمَارَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ زَيْدِ بْنِ عَاصِمٍ الْأَنْصَارِيِّ وَكَانَتْ لَهُ صُحْبَةٌ قَالَ قِيلَ لَهُ تَوَضَّأْ لَنَا وُضُوءَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَدَعَا بِإِنَاءٍ فَأَكْفَأَ مِنْهَا عَلَى يَدَيْهِ فَغَسَلَهُمَا ثَلَاثًا ثُمَّ أَدْخَلَ يَدَهُ فَاسْتَخْرَجَهَا فَمَضْمَضَ وَاسْتَنْشَقَ مِنْ كَفٍّ وَاحِدَةٍ فَفَعَلَ ذَلِكَ ثَلَاثًا ثُمَّ أَدْخَلَ يَدَهُ فَاسْتَخْرَجَهَا فَغَسَلَ وَجْهَهُ ثَلَاثًا ثُمَّ أَدْخَلَ يَدَهُ فَاسْتَخْرَجَهَا فَغَسَلَ يَدَيْهِ إِلَى الْمِرْفَقَيْنِ مَرَّتَيْنِ مَرَّتَيْنِ ثُمَّ أَدْخَلَ يَدَهُ فَاسْتَخْرَجَهَا فَمَسَحَ بِرَأْسِهِ فَأَقْبَلَ بِيَدَيْهِ وَأَدْبَرَ ثُمَّ غَسَلَ رِجْلَيْهِ إِلَى الْكَعْبَيْنِ ثُمَّ قَالَ هَكَذَا كَانَ وُضُوءُ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ.

It was narrated from 'Amr bin Yahya bin 'Umarah, from his father, from 'Abdullah bin Zaid bin 'Asim Al-Ansari - who was a Companion of the Prophet (s.a.w) - he said: "It was said to him: 'Perform Wudu' for us as the Messenger of Allah (s.a.w) did it.' He called for a vessel (of water) and poured some of it onto his hands and washed them three times. Then he put his hand in and brought it out, and rinsed his mouth and nose using one handful, and he did that three times. Then he put his hand in and brought it out and washed his face three times. Then he put his hand in and brought it out and washed his hands up to the elbows, washing each one twice. Then he put his hand in and brought it out and wiped his head, moving his hands forwards and backwards. Then he washed his feet up to the ankles. Then he said: 'This is how the Messenger of Allah (s.a.w) performed Wudu.'"

حضرت عبد اللہ بن زید بن عاصم انصاری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے ، اور وہ صحابی تھے ، کہ ان سے لوگوں نے کہا کہ ہمیں رسول اللہﷺ کی طرح وضو کر کے بتلائیے۔ چنانچہ انہوں نے ایک برتن (پانی کا) منگوایا ، اس کو جھکا کر پہلے دونوں ہاتھوں پر پانی ڈالا۔ اور انہیں تین بار دھویا۔ پھر ہاتھ برتن کے اندر ڈالا اور باہر نکالا اور ایک ہی چلو سے کلی کی اور ناک میں پانی ڈالا۔ پھر تین بار ایسے ہی کیا۔ پھر ہاتھ ڈالا اور باہر نکالا اور منہ کو تین بار دھویا۔ پھر برتن میں ہاتھ ڈالا اور باہر نکالا اور اپنے دونوں ہاتھ کہنیوں تک دو دو بار دھوئے۔ پھر برتن میں ہاتھ ڈالا اور باہر نکالا اور سر پر مسح کیا ، پہلے دونوں ہاتھوں کو سامنے سے پیچھے لے گئے پھر پیچھے سے آگے کی طرف لے آئے (یعنی پیشانی تک واپس لائے ) پھر دونوں پاؤں ٹخنوں سمیت دھوئے۔ اس کے بعد کہا کہ رسول اللہﷺ اسی طرح وضو کیا کرتے تھے۔


و حَدَّثَنِي الْقَاسِمُ بْنُ زَكَرِيَّاءَ حَدَّثَنَا خَالِدُ بْنُ مَخْلَدٍ عَنْ سُلَيْمَانَ هُوَ ابْنُ بِلَالٍ عَنْ عَمْرِو بْنِ يَحْيَى بِهَذَا الْإِسْنَادِ نَحْوَهُ وَلَمْ يَذْكُرِ الْكَعْبَيْنِ.

A similar report (no. 555) was narrated from 'Amr bin Yahya with this chain, but he did not say: "Up to the ankles.''

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے مگر اس میں کعبین کا ذکر نہیں ہے۔


و حَدَّثَنِي إِسْحَاقُ بْنُ مُوسَى الْأَنْصَارِيُّ حَدَّثَنَا مَعْنٌ حَدَّثَنَا مَالِكُ بْنُ أَنَسٍ عَنْ عَمْرِو بْنِ يَحْيَى بِهَذَا الْإِسْنَادِ وَقَالَ مَضْمَضَ وَاسْتَنْثَرَ ثَلَاثًا وَلَمْ يَقُلْ مِنْ كَفٍّ وَاحِدَةٍ وَزَادَ بَعْدَ قَوْلِهِ فَأَقْبَلَ بِهِمَا وَأَدْبَرَ بَدَأَ بِمُقَدَّمِ رَأْسِهِ ثُمَّ ذَهَبَ بِهِمَا إِلَى قَفَاهُ ثُمَّ رَدَّهُمَا حَتَّى رَجَعَ إِلَى الْمَكَانِ الَّذِي بَدَأَ مِنْهُ، وَغَسَلَ رِجْلَيْهِ.

It was narrated from 'Amr bin Yahya with this chain (a similar report as no. 555), and he said: "He rinsed his mouth and nose three times," but he did not say: "With one handful." And after the words: "moving his hands back and forth" he added: "He started at the front of his head then moved them towards the nape of his neck, then he brought them back to where he had started, and he washed his feet."

عمرو بن یحییٰ سے اسی اسنادسے روایت ہے کہ اس میں یہ ہے کہ کلی کی اور ناک میں تین بارپانی ڈالا اور یہ نہیں کہا کہ ایک چلو سے۔ اور آگے سے لے گئے اور پیچھے سے لے گئے کے بعد اتنا زیادہ کیا کہ پہلے سرکا مسح آگے سے شروع کیا اور گدی تک لے گئے پھر پھیر کر لائے دونوں ہاتھوں کو اسی مقام پر جہاں سے شروع کیا تھا اور دونوں پاؤں دھوئے۔


حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ بِشْرٍ الْعَبْدِيُّ حَدَّثَنَا بَهْزٌ حَدَّثَنَا وُهَيْبٌ حَدَّثَنَا عَمْرُو بْنُ يَحْيَى بِمِثْلِ إِسْنَادِهِمْ وَاقْتَصَّ الْحَدِيثَ وَقَالَ فِيهِ فَمَضْمَضَ وَاسْتَنْشَقَ وَاسْتَنْثَرَ مِنْ ثَلَاثِ غَرَفَاتٍ وَقَالَ أَيْضًا فَمَسَحَ بِرَأْسِهِ فَأَقْبَلَ بِهِ وَأَدْبَرَ مَرَّةً وَاحِدَةً. قَالَ بَهْزٌ أَمْلَى عَلَيَّ وُهَيْبٌ هَذَا الْحَدِيثَ و قَالَ وُهَيْبٌ أَمْلَى عَلَيَّ عَمْرُو بْنُ يَحْيَى هَذَا الْحَدِيثَ مَرَّتَيْنِ.

It was narrated from 'Amr bin Yahya with chain similar to theirs, and he quoted the Hadith (no. 555) and said: "He rinsed his mouth, snuffed water up into his nostrils with three handfuls." He also said: "He wiped his head, moving his hands forwards and backwards once." Bahz said: "Wuhaib dictated this Hadith to me. And Wuhaib said: "Amr bin Yahya dictated this Hadith to me twice."'

عمرو بن یحییٰ سے بھی کچھ کمی و بیشی سے مذکورہ بالاحدیث منقول ہے۔


حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ مَعْرُوفٍ ح و حَدَّثَنِي هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ وَأَبُو الطَّاهِرِ قَالُوا حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي عَمْرُو بْنُ الْحَارِثِ أَنَّ حَبَّانَ بْنَ وَاسِعٍ حَدَّثَهُ أَنَّ أَبَاهُ حَدَّثَهُ أَنَّهُ سَمِعَ عَبْدَ اللَّهِ بْنَ زَيْدِ بْنِ عَاصِمٍ الْمَازِنِيَّ ثُمَّ الْأَنْصَارِيْ يَذْكُرُ أَنَّهُ رَأَى رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأَ فَمَضْمَضَ ثُمَّ اسْتَنْثَرَ ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ ثَلَاثًا وَيَدَهُ الْيُمْنَى ثَلَاثًا وَالْأُخْرَى ثَلَاثًا وَمَسَحَ بِرَأْسِهِ بِمَاءٍ غَيْرِ فَضْلِ يَدِهِ وَغَسَلَ رِجْلَيْهِ حَتَّى أَنْقَاهُمَا. قَالَ أَبُو الطَّاهِرِ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ عَمْرِو بْنِ الْحَارِثِ.

'Abdullah bin Zaid bin 'Asim Al-Mazani Al-Ansari said that he saw the Messenger of Allah (s.a.w) performing Wudu '. He rinsed his mouth, then his nose, then he washed his face three times, his right hand (upto forearm) three times, and the other three times, wiped his head with water other than what was left on his hand, and washed his feet until he had cleaned them.

حضرت عبد اللہ بن زید بن عاصم رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ انہوں نے دیکھارسول اللہ ﷺکو آپ نے وضو کیا پھر کلی کی پھر ناک میں پانی ڈالا پھر منہ دھویا تین بار اورداہنا ہاتھ تین بار اور بایاں ہاتھ تین بار اور سر پر مسح کیا نیا پانی لیکر نہ اس پانی سے جو ہاتھ میں لگا تھا اور دونوں پاؤں دھوئے یہاں تک کہ ان کوصاف کیا۔

Chapter No: 8

بَابُ الْإِيتَارِ فِي الِاسْتِنْثَارِ وَالِاسْتِجْمَارِ

About the (preference of) odd numbers while rinsing the nose and purifying with stones

ناک میں طاق مرتبہ پانی ڈالنا ، اور طاق مرتبہ استنجاء کرنے کا بیان

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَعَمْرٌو النَّاقِدُ وَمُحَمَّدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ نُمَيْرٍ جَمِيعًا عَنْ ابْنِ عُيَيْنَةَ قَالَ قُتَيْبَةُ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ عَنْ أَبِي الزِّنَادِ عَنْ الْأَعْرَجِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ يَبْلُغُ بِهِ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ إِذَا اسْتَجْمَرَ أَحَدُكُمْ فَلْيَسْتَجْمِرْ وِتْرًا وَإِذَا تَوَضَّأَ أَحَدُكُمْ فَلْيَجْعَلْ فِي أَنْفِهِ مَاءً ثُمَّ لْيَنْتَثِرْ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Prophet (s.a.w) said: "When any one of you cleans himself with pebbles, let him use an odd number,. and when any one of you performs Wudu', let him put water in his nostrils, then let him blow it out."

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جب کوئی تم میں سے (پائخانہ کے لیے) ڈھیلا لے تو طاق ڈھیلا لے اور جب کوئی تم میں سے وضو کرے تو ناک میں پانی ڈالے پھر ناک جھاڑے۔


حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ بْنُ هَمَّامٍ أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ عَنْ هَمَّامِ بْنِ مُنَبِّهٍ قَالَ هَذَا مَا حَدَّثَنَا بِهِ أَبُو هُرَيْرَةَ عَنْ مُحَمَّدٍ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَذَكَرَ أَحَادِيثَ مِنْهَا وَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا تَوَضَّأَ أَحَدُكُمْ فَلْيَسْتَنْشِقْ بِمَنْخِرَيْهِ مِنْ الْمَاءِ ثُمَّ لْيَنْتَثِرْ.

It was narrated that Hammam bin Munabbih said: "This is what Abu Hurairah told us, from Muhammad the Messenger of Allah (s.a.w)." Then he mentioned a number of Ahadith, including the following: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'When one of you performs Wudu' let him put water in his nostrils then blow it out."'

ہمام بن منبہ سے روایت ہے کہ ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے رسول اللہ ﷺسے سن کر یہ حدیثیں ہمیں بیان کیں پھر انہوں نے کئی حدیثوں کو ذکر کیا ایک ان میں سے یہ بھی تھی کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جب کوئی تم میں سے وضو کرے تو ناک کے دونوں نتھنوں میں پانی ڈالے پھر ناک جھاڑے۔


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى قَالَ قَرَأْتُ عَلَى مَالِكٍ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ أَبِي إِدْرِيسَ الْخَوْلَانِيِّ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ مَنْ تَوَضَّأَ فَلْيَسْتَنْثِرْ وَمَنْ اسْتَجْمَرَ فَلْيُوتِرْ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Messenger of Allah (s.a.w) said: "Whoever performs Wudu', let him rinse out his nose, and whoever cleans himself with pebbles, let him use an odd number."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جو شخص وضو کرے تو ناک میں پانی ڈالے اور جو شخص استنجا کرے تو طاق بار کرے۔


حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ مَنْصُورٍ حَدَّثَنَا حَسَّانُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ حَدَّثَنَا يُونُسُ بْنُ يَزِيدَ ح و حَدَّثَنِي حَرْمَلَةُ بْنُ يَحْيَى أَخْبَرَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي يُونُسُ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ أَخْبَرَنِي أَبُو إِدْرِيسَ الْخَوْلَانِيُّ أَنَّهُ سَمِعَ أَبَا هُرَيْرَةَ وَأَبَا سَعِيدٍ الْخُدْرِيَّ يَقُولَانِ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِمِثْلِهِ.

It was narrated from Ibn Shihab that Abu Idris Al-Khawlani said that he heard Abu Hurairah and Abu Sa'eed Al-Khudri say: "The Messenger of Allah (s.a.w) said..." narrating something similar (to no. 562).

مذکورہ بالا حدیث بھی اس سند سے مروی ہے۔


حَدَّثَنِي بِشْرُ بْنُ الْحَكَمِ الْعَبْدِيُّ حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ يَعْنِي الدَّرَاوَرْدِيَّ عَنْ ابْنِ الْهَادِ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ إِبْرَاهِيمَ عَنْ عِيسَى بْنِ طَلْحَةَ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ إِذَا اسْتَيْقَظَ أَحَدُكُمْ مِنْ مَنَامِهِ فَلْيَسْتَنْثِرْ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ فَإِنَّ الشَّيْطَانَ يَبِيتُ عَلَى خَيَاشِيمِهِ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Prophet (s.a.w) said: "When one of you awakens from sleep, let him rinse his nose three times, for the Shaitan spends the night on his nose."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جب کوئی تم میں سے نیند سے بیدار ہوجائے تو ناک تین بار جھاڑے اس لیے کہ شیطان اس کے ناک کے بانسے پر رات گزارتا ہے۔


حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ وَمُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ قَالَ ابْنُ رَافِعٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ أَخْبَرَنَا ابْنُ جُرَيْجٍ أَخْبَرَنِي أَبُو الزُّبَيْرِ أَنَّهُ سَمِعَ جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ يَقُولُ: قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا اسْتَجْمَرَ أَحَدُكُمْ فَلْيُوتِرْ.

Jabir bin 'Abdullah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'When one of you cleans himself with pebbles, let him use an odd number.'"

جابر بن عبد اللہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا جب کوئی تم میں سے استنجاء کرے تو طاق بار کرے۔

Chapter No: 9

بَابُ وُجُوبِ غَسْلِ الرِّجْلَيْنِ بِكَمَالِهِمَا

Regarding the obligation of washing feet completely

وضو میں مکمل پاؤں دھونے کا واجب ہونے کا بیان

حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ وَأَبُو الطَّاهِرِ وَأَحْمَدُ بْنُ عِيسَى قَالُوا أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ وَهْبٍ عَنْ مَخْرَمَةَ بْنِ بُكَيْرٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ سَالِمٍ مَوْلَى شَدَّادٍ قَالَ دَخَلْتُ عَلَى عَائِشَةَ زَوْجِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَوْمَ تُوُفِّيَ سَعْدُ بْنُ أَبِي وَقَّاصٍ فَدَخَلَ عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ أَبِي بَكْرٍ فَتَوَضَّأَ عِنْدَهَا فَقَالَتْ يَا عَبْدَ الرَّحْمَنِ أَسْبِغْ الْوُضُوءَ فَإِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ وَيْلٌ لِلْأَعْقَابِ مِنْ النَّارِ.

It was narrated that Salim, the freed slave of Shaddad, said: "I entered upon 'Aishah, the wife of the Prophet (s.a.w), on the day that Sa'd bin Abi Waqqas died, and 'Abdur-Rahman bin Abi Bakr came in and performed Wudu' in her house. She said: 'O 'Abdur-Rahman, perform Wudu' properly, for I heard the Messenger of Allah (s.a.w) say: "Woe to the heels from the Fire."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا کے پاس عبد الرحمن بن ابی بکر رضی اللہ عنہما گئے جس دن سعد بن ابی وقاص رضی اللہ عنہ انتقال کرگئے تو انہوں نے وضو کیا ام المؤمنین رضی اللہ عنہا نے کہا اے عبد الرحمن وضو کو پورا کرو میں نے رسول اللہ ﷺسے سنا آپ فرماتے تھے (خشک) ایڑیوں کے لیے آگ کا عذاب ہے۔


و حَدَّثَنِي حَرْمَلَةُ بْنُ يَحْيَى حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي حَيْوَةُ أَخْبَرَنِي مُحَمَّدُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ أَنَّ أَبَا عَبْدِ اللَّهِ مَوْلَى شَدَّادِ بْنِ الْهَادِ حَدَّثَهُ أَنَّهُ دَخَلَ عَلَى عَائِشَةَ فَذَكَرَ عَنْهَا عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِمِثْلِهِ.

Abu 'Abdullah, the freed slave of Shaddad bin Al-Had narrated that he entered upon 'Aishah - and he narrated something similar (as no. 566) from her, from the Prophet (s.a.w).

مذکورہ بالا حدیث بھی اس سند سے مروی ہے۔


حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ حَاتِمٍ وَأَبُو مَعْنٍ الرَّقَاشِيُّ قَالَا حَدَّثَنَا عُمَرُ بْنُ يُونُسَ حَدَّثَنَا عِكْرِمَةُ بْنُ عَمَّارٍ حَدَّثَنِي يَحْيَى بْنُ أَبِي كَثِيرٍ قَالَ حَدَّثَنِي أَوْ حَدَّثَنَا أَبُو سَلَمَةَ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ حَدَّثَنِي سَالِمٌ مَوْلَى الْمَهْرِيِّ قَالَ خَرَجْتُ أَنَا وَعَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ أَبِي بَكْرٍ فِي جَنَازَةِ سَعْدِ بْنِ أَبِي وَقَّاصٍ فَمَرَرْنَا عَلَى بَابِ حُجْرَةِ عَائِشَةَ فَذَكَرَ عَنْهَا عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِثْلَهُ.

Salim, the freed slave of Al-Mahri, said: '" Abdur-Rahman bin Abi Bakr and I went out in the funeral procession of Sa'd bin Abi Waqqas, and we passed by the door of 'Aishah's apartment..." and he narrated something similar (as no. 566) from her, from the Prophet (s.a.w).

چند الفاظ کے فرق کے ساتھ مذکورہ بالا حدیث بھی اس سند سے مروی ہے۔


حَدَّثَنِي سَلَمَةُ بْنُ شَبِيبٍ حَدَّثَنَا الْحَسَنُ بْنُ أَعْيَنَ حَدَّثَنَا فُلَيْحٌ حَدَّثَنِي نُعَيْمُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ عَنْ سَالِمٍ مَوْلَى شَدَّادِ بْنِ الْهَادِ قَالَ كُنْتُ أَنَا مَعَ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا فَذَكَرَ عَنْهَا عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِمِثْلِهِ.

Salim, the freed slave of Shaddad bin Al-Had said: "I was with 'Aishah..." and he narrated something similar from her, from the Prophet (s.a.w) (no. 566).

اوپر والی حدیث کی طرح یہاں بھی چند مختلف الفاظ کے ساتھ یہ حدیث آئی ہے۔


و حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ ح و حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ أَخْبَرَنَا جَرِيرٌ عَنْ مَنْصُورٍ عَنْ هِلَالِ بْنِ يِسَافٍ عَنْ أَبِي يَحْيَى عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرٍو قَالَ رَجَعْنَا مَعَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ مَكَّةَ إِلَى الْمَدِينَةِ حَتَّى إِذَا كُنَّا بِمَاءٍ بِالطَّرِيقِ تَعَجَّلَ قَوْمٌ عِنْدَ الْعَصْرِ فَتَوَضَّأُوْا وَهُمْ عِجَالٌ فَانْتَهَيْنَا إِلَيْهِمْ وَأَعْقَابُهُمْ تَلُوحُ لَمْ يَمَسَّهَا الْمَاءُ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَيْلٌ لِلْأَعْقَابِ مِنْ النَّارِ أَسْبِغُوا الْوُضُوءَ.

It was narrated that 'Abdullah bin 'Amr said: "We came back with the Messenger of Allah (s.a.w) from Makkah to Al-Madinah, and when we were at an oasis on the way, some people hastened at the time of 'Asr and performed Wudu' in a hurry. We came to them and their heels were visibly dry and had not been touched by water. The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Woe to the heels from the Fire! Do Wudu' properly.'"

حضرت عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ہم رسول اللہ ﷺکے ساتھ مکہ سےمدینہ کو لوٹے راستے میں ایک جگہ پانی ملا عصر کی نماز کا وقت ہوگیا تھا لوگوں نے جلدی جلدی وضو کیا۔جب ہم ان کے پاس پہنچے تو ان کی ایڑیاں سوکھی معلوم ہوتی تھیں ان پر پانی نہیں لگا تھا ۔ تب رسول اللہ ﷺنے فرمایا ایڑیوں کے لیے آگ کا عذا ب ہے ۔وضو کو پورا کرو۔


و حَدَّثَنَاه أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ سُفْيَانَ ح و حَدَّثَنَا ابْنُ الْمُثَنَّى وَابْنُ بَشَّارٍ قَالَا حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ قَالَ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ كِلَاهُمَا عَنْ مَنْصُورٍ بِهَذَا الْإِسْنَادِ وَلَيْسَ فِي حَدِيثِ شُعْبَةَ أَسْبِغُوا الْوُضُوءَ وَفِي حَدِيثِهِ عَنْ أَبِى يَحْيَى الْأَعْرَجِ.

It was narrated from Mansur with this chain (a similar Hadith as no. 570), but in the Hadith of Shu'bah it does not say: "Do Wudu' properly."

مذکورہ بالا حدیث بھی اس سند سے مروی ہے۔ شعبہ کی حدیث میں اسبغوا الوضوء کے الفاظ نہیں ہیں۔


حَدَّثَنَا شَيْبَانُ بْنُ فَرُّوخَ وَأَبُو كَامِلٍ الْجَحْدَرِيُّ جَمِيعًا عَنْ أَبِي عَوَانَةَ قَالَ أَبُو كَامِلٍ حَدَّثَنَا أَبُو عَوَانَةَ عَنْ أَبِي بِشْرٍ عَنْ يُوسُفَ بْنِ مَاهَكَ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرٍو قَالَ تَخَلَّفَ عَنَّا النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي سَفَرٍ سَافَرْنَاهُ فَأَدْرَكَنَا وَقَدْ حَضَرَتْ صَلَاةُ الْعَصْرِ فَجَعَلْنَا نَمْسَحُ عَلَى أَرْجُلِنَا فَنَادَى وَيْلٌ لِلْأَعْقَابِ مِنْ النَّارِ.

It was narrated that 'Abdullah bin 'Amr said: "The Messenger of Allah (s.a.w) stayed behind during a journey that we were undertaking. Then he caught up with us when the time for Salat AI-'Asr was due. We started wiping (Namsahu) over our feet and he called out: 'Woe to the heels from the Fire!'"

حضرت عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺایک سفر میں ہم سے چھٹ گئے ، پھر آپﷺنے ہمیں پایا اور عصر کی نماز کا وقت آگیا تھا تو ہم اپنے پاؤں پر مسح کرنے لگے آپﷺنے پکارا ایڑیوں کے لیے آگ کا عذا ب ہے ۔


حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ سَلَّامٍ الْجُمَحِيُّ حَدَّثَنَا الرَّبِيعُ يَعْنِي ابْنَ مُسْلِمٍ عَنْ مُحَمَّدٍ وَهُوَ ابْنُ زِيَادٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ رَأَى رَجُلًا لَمْ يَغْسِلْ عَقِبَيْهِ فَقَالَ وَيْلٌ لِلْأَعْقَابِ مِنْ النَّارِ.

It was narrated from Abu Hurairah that the Prophet (s.a.w) saw a man who had not washed his heels and he said: "Woe to the heels from the Fire."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے ایک شخص کو دیکھا جس نے وضو میں اپنی ایڑی نہیں دھوئی تھی تو فرمایا ایڑیوں کے لیے آگ کا عذا ب ہے ۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو كُرَيْبٍ قَالُوا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ شُعْبَةَ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ زِيَادٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ أَنَّهُ رَأَى قَوْمًا يَتَوَضَّأُونَ مِنَ الْمِطْهَرَةِ فَقَالَ أَسْبِغُوا الْوُضُوءَ فَإِنِّي سَمِعْتُ أَبَا الْقَاسِمِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ وَيْلٌ لِلْعَرَاقِيبِ مِنْ النَّارِ

It was narrated from Abu Hurairah that he saw some people performing Wudu' from a water vessel and he said: "Perform Wudu' properly, for I heard Abu Al-Qasim (s.a.w) say: 'Woe to the Achilles-tendons from the Fire."'

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ نے کچھ لوگوں کو لوٹے سے وضو کرتے دیکھا تو فرمایا وضو کو پورا کرومیں نے ابو القاسم ﷺسے سنا آپﷺفرماتے تھے کونچوں(ایڑیوں کے اوپر کا پٹھا) کے لیے آگ کا عذاب ہے۔


حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ عَنْ سُهَيْلٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَيْلٌ لِلْأَعْقَابِ مِنْ النَّارِ.

It was narrated that Abu Hurairah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Woe to the heels from the Fire."'

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا ایڑیوں کے لیے آگ کا عذاب ہے۔

Chapter No: 10

بَابُ وُجُوبِ اسْتِيعَابِ جَمِيعِ أَجْزَاءِ مَحَلِّ الطَّهَارَةِ

Regarding the obligation of washing all parts of body necessary for purification

تمام اعضاء وضو کو مکمل طور پر دھونے کا وجوب

حَدَّثَنِي سَلَمَةُ بْنُ شَبِيبٍ حَدَّثَنَا الْحَسَنُ بْنُ مُحَمَّدِ بْنِ أَعْيَنَ حَدَّثَنَا مَعْقِلٌ عَنْ أَبِي الزُّبَيْرِ عَنْ جَابِرٍ أَخْبَرَنِي عُمَرُ بْنُ الْخَطَّابِ أَنَّ رَجُلًا تَوَضَّأَ فَتَرَكَ مَوْضِعَ ظُفُرٍ عَلَى قَدَمِهِ فَأَبْصَرَهُ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَ ارْجِعْ فَأَحْسِنْ وُضُوءَكَ فَرَجَعَ ثُمَّ صَلَّى

It was narrated from Jabir that 'Umar bin Al-Khattab narrated that a man performed Wudu' and omitted a place the size of a fingernail on his foot. The Prophet (s.a.w) saw him and said: "Go back and perform your Wudu' properly," so he went back, then he prayed.

حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ مجھے عمر بن الخطاب نے بتایا ایک شخص نے وضو کیا اور ناخن برابر اپنے پاؤں میں سوکھا چھوڑ دیا۔ رسول اللہ ﷺنے اس سے دیکھ فرمایا جا اچھی طرح وضو کرکے آ ۔ وہ آدمی لوٹ گیا اور پھر آکر نماز پڑھی۔

123Last ›