Sayings of the Messenger

 

123Last ›

Chapter No: 1

بَابُ مُبَاشَرَةِ الْحَائِضِ فَوْقَ الْإِزَارِ

About touching a menstruating woman above waist wrapper

تہبند کے اوپر حائضہ عورت سے مباشرت کرنے کا بیان

حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ وَإِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ قَالَ إِسْحَاقُ أَخْبَرَنَا وَقَالَ الْآخَرَانِ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ عَنْ مَنْصُورٍ عَنْ إِبْرَاهِيمَ عَنْ الْأَسْوَدِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَتْ إِحْدَانَا إِذَا كَانَتْ حَائِضًا أَمَرَهَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَتَأْتَزِرُ بِإِزَارٍ ثُمَّ يُبَاشِرُهَا.

It was narrated that 'Aishah said: "If one of us was menstruating, the Messenger of Allah (s.a.w) would tell her to put on a waist-wrapper (Izar), then he would touch her."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ ہم میں سے جب کوئی حائضہ ہوتی تو رسول اللہ ﷺاس کو تہبند باندھنے کا حکم دیتے پھر اس کے اوپر ان سے مباشرت کرتے۔


و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ مُسْهِرٍ عَنْ الشَّيْبَانِيِّ ح و حَدَّثَنِي عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ السَّعْدِيُّ وَاللَّفْظُ لَهُ أَخْبَرَنَا عَلِيُّ بْنُ مُسْهِرٍ أَخْبَرَنَا أَبُو إِسْحَاقَ عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ الْأَسْوَدِ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ إِحْدَانَا إِذَا كَانَتْ حَائِضًا أَمَرَهَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَنْ تَأْتَزِرَ فِي فَوْرِ حَيْضَتِهَا ثُمَّ يُبَاشِرُهَا قَالَتْ وَأَيُّكُمْ يَمْلِكُ إِرْبَهُ كَمَا كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَمْلِكُ إِرْبَهُ.

It was narrated that 'Aishah said: "If one of us was menstruating, the Messenger of Allah (s.a.w would tell her to put on a waist-wrapper if her menstrual flow was heavy, then he would touch her. She said: 'Who among you can control his desire as the Messenger of Allah (s.a.w) did?"'

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کہتی ہیں کہ ہم میں سے جب کسی عورت کو حیض آتا تو رسول اللہﷺ حیض کے خون کے جوش کے دوران تہبند باندھنے کا حکم کرتے ، پھر اس سے مباشرت کرتے (یعنی بیوی کے ساتھ سو جاتے ) اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا نے کہا کہ تم میں سے کون اپنی خواہش اور ضرورت پر اس قدر اختیار رکھتا ہے جیسا رسول اللہﷺ رکھتے تھے۔


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى أَخْبَرَنَا خَالِدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ عَنْ الشَّيْبَانِيِّ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ شَدَّادٍ عَنْ مَيْمُونَةَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُبَاشِرُ نِسَاءَهُ فَوْقَ الْإِزَارِ وَهُنَّ حُيَّضٌ.

It was narrated that Maimunah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to touch his wives from above the waist-wrapper when they were menstruating.

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺاپنی عورتوں سےازار کے اوپر مباشرت کرتے تھے اور وہ حائضہ ہوتیں۔

Chapter No: 2

بَابُ الِاضْطِجَاعِ مَعَ الْحَائِضِ فِي لِحَافٍ وَاحِدٍ

About sleeping with a menstruating woman under a single covering

حائضہ کے ساتھ ایک چادر میں لیٹنے کا بیان

حَدَّثَنِي أَبُو الطَّاهِرِ أَخْبَرَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ مَخْرَمَةَ ح و حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ وَأَحْمَدُ بْنُ عِيسَى قَالَا حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي مَخْرَمَةُ عَنْ أَبِيهِ عَنْ كُرَيْبٍ مَوْلَى ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ سَمِعْتُ مَيْمُونَةَ زَوْجَ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَضْطَجِعُ مَعِي وَأَنَا حَائِضٌ وَبَيْنِي وَبَيْنَهُ ثَوْبٌ.

It was narrated that Kuraib, the freed slave of Ibn 'Abbas, said : "I heard Maimunah, the wife of the Prophet (s.a.w), say: 'The Messenger of Allah (s.a.w) used to lie down with me, when I was menstruating, with a garment between me and him.'"

ام المؤمنین میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺمیرے ساتھ لیٹتے اور میں حائضہ ہوتی اور میرے اور آپﷺکے درمیان ایک کپڑا حائل ہوتا۔


حَدَّثَنِي أَبُو الطَّاهِرِ أَخْبَرَنَا ابْنُ وَهْبٍ عَنْ مَخْرَمَةَ ح و حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ وَأَحْمَدُ بْنُ عِيسَى قَالَا حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي مَخْرَمَةُ عَنْ أَبِيهِ عَنْ كُرَيْبٍ مَوْلَى ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ سَمِعْتُ مَيْمُونَةَ زَوْجَ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَضْطَجِعُ مَعِي وَأَنَا حَائِضٌ وَبَيْنِي وَبَيْنَهُ ثَوْبٌ.

It was narrated that Umm Salamah said: "While I was lying down with the Messenger of Allah (s.a.w) under a wool blanket, I menstruated. I slipped away and put on the dress I wore when menstruating. The Messenger of Allah (s.a.w) said to me: 'Has your menses started?' I said: 'Yes.' Then he called me and I lay down with him under the wool blanket.'' Zainab bint Salama (a narrator) said: "She and the Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl together from a single vessel, in the case of Janabah."

ام المؤمنین میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺمیرے ساتھ لیٹتے اور میں حائضہ ہوتی اور میرے اور آپﷺکے درمیان ایک کپڑا حائل ہوتا۔

Chapter No: 3

بَابُ جَوَازِ غَسْلِ الْحَائِضِ رَأْسَ زَوْجِهَا وَتَرْجِيلِهِ وَطَهَارَةِ سُؤْرِهَا وَالِاتِّكَاءِ فِي حِجْرِهَا وَقِرَاءَةِ الْقُرْآنِ فِيهِ

It is permissible for a menstruating woman to wash the head of her husband and comb his hair, the purification of rest of her body, leaning in her lap and reciting Qur’an

حائضہ عورت کا اپنے خاوند کے سر کو دھونے اور اس میں کنگھی کرنے کے جواز اور حائضہ کے جھوٹے کے پاک ہونے اور اس کی گود میں ٹیک لگانے اور اس کی گود میں قرآن پڑھنے کا جواز۔

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى قَالَ قَرَأْتُ عَلَى مَالِكٍ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ عُرْوَةَ عَنْ عَمْرَةَ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا اعْتَكَفَ يُدْنِي إِلَيَّ رَأْسَهُ فَأُرَجِّلُهُ وَكَانَ لَا يَدْخُلُ الْبَيْتَ إِلَّا لِحَاجَةِ الْإِنْسَانِ.

It was narrated that 'Aishah said: "When the Prophet (s.a.w) was in I'tikaf, he would lean his head out to me and I would comb it, and he would not enter the house except to relieve himself."

اُمّ المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ جب اعتکاف کرتے تو اپنا سر میری طرف جھکادیتے میں اس میں کنگھی کردیتی اور آپ گھر میں تشریف نہ لاتے( مسجد سے ) مگر کسی ضروری حاجت (پیشاب ، پاخانہ وغیرہ) کے لیے۔


و حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ حَدَّثَنَا لَيْثٌ ح و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ رُمْحٍ قَالَ أَخْبَرَنَا اللَّيْثُ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ عُرْوَةَ وَعَمْرَةَ بِنْتِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ أَنَّ عَائِشَةَ زَوْجَ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَتْ إِنْ كُنْتُ لَأَدْخُلُ الْبَيْتَ لِلْحَاجَةِ وَالْمَرِيضُ فِيهِ فَمَا أَسْأَلُ عَنْهُ إِلَّا وَأَنَا مَارَّةٌ وَإِنْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَيُدْخِلُ عَلَيَّ رَأْسَهُ وَهُوَ فِي الْمَسْجِدِ فَأُرَجِّلُهُ وَكَانَ لَا يَدْخُلُ الْبَيْتَ إِلَّا لِحَاجَةٍ إِذَا كَانَ مُعْتَكِفًا و قَالَ ابْنُ رُمْحٍ: إِذَا كَانُوا مُعْتَكِفِينَ.

It was narrated from 'Urwah and 'Amrah bint 'Abdur-Rahman that 'Aishah, the wife of the Prophet (s.a.w), said: "I would enter the house for a need (when I was in I'tikaf). and while passing by I would inquire about the health of sick (in the family). And the Messenger of Allah (s.a.w) used to put his head out to me when he was in the Masjid, and I would comb it, and he did not enter the house except for a need when he was in I'tikaf."

امّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کہتی ہیں کہ میں (جب اعتکاف میں ہوتی) حاجت کے لئے گھر میں جاتی اور چلتے چلتے جو کوئی گھر میں بیمار ہوتا تو اس کو بھی پوچھ لیتی اور رسول اللہﷺ مسجد میں رہ کر اپنا سر میری طرف ڈال دیتے اور میں اس میں کنگھی کر دیتی اور آپﷺ جب اعتکاف میں ہوتے تو گھر میں نہ جاتے مگر حاجت کیلئے۔ ابن رمح نے کہا جب کہ وہ سب اعتکاف میں ہوتے ۔


و حَدَّثَنِي هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي عَمْرُو بْنُ الْحَارِثِ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ نَوْفَلٍ عَنْ عُرْوَةَ بْنِ الزُّبَيْرِ عَنْ عَائِشَةَ زَوْجِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَنَّهَا قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُخْرِجُ إِلَيَّ رَأْسَهُ مِنْ الْمَسْجِدِ وَهُوَ مُجَاوِرٌ فَأَغْسِلُهُ وَأَنَا حَائِضٌ.

It was narrated that 'Aishah, the wife of the Prophet (s.a.w), said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to put his head out to me from the Masjid when he was in I'tikaf, and I would wash it while I was menstruating."

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کہتی ہیں جب رسول اللہﷺاعتکاف میں ہوتے تو مسجد کے باہر اپنا سر نکال دیتے میں آپ کا سر مبارک دھود یتی حالانکہ میں حائضہ ہوتی۔


و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى أَخْبَرَنَا أَبُو خَيْثَمَةَ عَنْ هِشَامٍ أَخْبَرَنَا عُرْوَةُ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّهَا قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُدْنِي إِلَيَّ رَأْسَهُ وَأَنَا فِي حُجْرَتِي فَأُرَجِّلُ رَأْسَهُ وَأَنَا حَائِضٌ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to lean his head out towards me when I was in my room, and I would comb his hair while I was menstruating."

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺاپنا سر میرے نزدیک کردیتے اور میں حجرہ میں ہوتی پھر میں کنگھی کرتی آپ کے سر میں اور میں حائضہ ہوتی ۔


حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا حُسَيْنُ بْنُ عَلِيٍّ عَنْ زَائِدَةَ عَنْ مَنْصُورٍ عَنْ إِبْرَاهِيمَ عَنْ الْأَسْوَدِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كُنْتُ أَغْسِلُ رَأْسَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَأَنَا حَائِضٌ.

It was narrated that 'Aishah said: "I used to wash the head of the Messenger of Allah (s.a.w) while I was menstruating.''

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہے کہ میں رسول اللہ ﷺکا سر دھوتی اور میں حائضہ ہوتی۔


و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو كُرَيْبٍ قَالَ يَحْيَى أَخْبَرَنَا وَقَالَ الْآخَرَانِ حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ عَنْ الْأَعْمَشِ عَنْ ثَابِتِ بْنِ عُبَيْدٍ عَنْ الْقَاسِمِ بْنِ مُحَمَّدٍ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ قَالَ لِي رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ نَاوِلِينِي الْخُمْرَةَ مِنْ الْمَسْجِدِ قَالَتْ فَقُلْتُ إِنِّي حَائِضٌ فَقَالَ إِنَّ حَيْضَتَكِ لَيْسَتْ فِي يَدِكِ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) said to me: 'Pass me the palm-fibre mat from the Masjid.' I said: 'I am menstruating.' He said: 'Your menstruation is not in your hand.'"

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کہتی ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے مجھے فرمایا مجھے مسجد سے جائے نماز پکڑادے ۔ میں نے کہا میں حائضہ ہوں آپﷺ نے فرمایا حیض تیرے ہاتھ میں تو نہیں ہے۔


حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي زَائِدَةَ عَنْ حَجَّاجٍ وَابْنِ أَبِي غَنِيَّةَ عَنْ ثَابِتِ بْنِ عُبَيْدٍ عَنْ الْقَاسِمِ بْنِ مُحَمَّدٍ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ أَمَرَنِي رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَنْ أُنَاوِلَهُ الْخُمْرَةَ مِنْ الْمَسْجِدِ فَقُلْتُ إِنِّي حَائِضٌ فَقَالَ تَنَاوَلِيهَا فَإِنَّ الْحَيْضَةَ لَيْسَتْ فِي يَدِكِ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) told me to pass him the palm-fibre mat from the Masjid. I said: 'I am menstruating.' He said: 'Give it to me; the menstruation is not in your hand.'"

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے مجھے مسجدسے جائے نماز اٹھالینے کا حکم دیا ۔ میں نے کہا میں حیض سے ہوں آپﷺنےفرمایا اس کو پکڑادے ،حیض تیرے ہاتھ میں تھوڑی ہے۔


و حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ وَأَبُو كَامِلٍ وَمُحَمَّدُ بْنُ حَاتِمٍ كُلُّهُمْ عَنْ يَحْيَى بْنِ سَعِيدٍ قَالَ زُهَيْرٌ حَدَّثَنَا يَحْيَى عَنْ يَزِيدَ بْنِ كَيْسَانَ عَنْ أَبِي حَازِمٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ قَالَ بَيْنَمَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي الْمَسْجِدِ فَقَالَ يَا عَائِشَةُ نَاوِلِينِي الثَّوْبَ فَقَالَتْ إِنِّي حَائِضٌ فَقَالَ إِنَّ حَيْضَتَكِ لَيْسَتْ فِي يَدِكِ فَنَاوَلَتْهُ.

It was narrated that Abu Hurairah said: "While the Messenger of Allah (s.a.w) was in the Masjid, he said: 'O 'Aishah, pass me the garment.' She said: 'I am menstruating.' He said: 'Your menstruation is not in your hand.' So she passed it to him."

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسو ل اللہ ﷺمسجد میں تھے اتنے میں آپﷺنے فرمایا اے عائشہ !مجھے کپڑا پکڑا دے ۔ انہوں نے کہا میں حائضہ ہوں ۔ آپﷺنے فرمایا تیرا حیض تیرے ہاتھ میں نہیں ہے پھر انہوں نے کپڑا اٹھادیا۔


حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ مِسْعَرٍ وَسُفْيَانَ عَنْ الْمِقْدَامِ بْنِ شُرَيْحٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كُنْتُ أَشْرَبُ وَأَنَا حَائِضٌ ثُمَّ أُنَاوِلُهُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَيَضَعُ فَاهُ عَلَى مَوْضِعِ فِيَّ فَيَشْرَبُ وَأَتَعَرَّقُ الْعَرْقَ وَأَنَا حَائِضٌ ثُمَّ أُنَاوِلُهُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَيَضَعُ فَاهُ عَلَى مَوْضِعِ فِيَّ. وَلَمْ يَذْكُرْ زُهَيْرٌ فَيَشْرَبُ.

It was narrated that 'Aishah said: "I would drink while I was menstruating, then I would pass it to the Prophet (s.a.w) and he would put his mouth at the place where my mouth had been and drink. And I would nibble meat from the bone while I was menstruating, then I would pass it to the Prophet (s.a.w) and he would put his mouth where my mouth had been." Zuhair (one of the narrators) did not mention "and drink."

اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کہتی ہیں کہ میں پانی پیتی تھی، پھر پی کر برتن رسول اللہﷺ کو دیتی، آپﷺ اسی جگہ منہ رکھتے جہاں میں نے منہ رکھ کر پیا تھا اور پانی پیتے ، حالانکہ میں حائضہ ہوتی اور میں ہڈی نوچتی، پھر رسول اللہﷺ کو دے دیتی، آپﷺ اسی جگہ منہ لگاتے جہاں میں نے لگایا تھا۔ راوی زہیر نے ”فیشرف“پھر پانی پیتے کا ذکر نہیں کیا۔


حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى أَخْبَرَنَا دَاوُدُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ الْمَكِّيُّ عَنْ مَنْصُورٍ عَنْ أُمِّهِ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّهَا قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَتَّكِئُ فِي حِجْرِي وَأَنَا حَائِضٌ فَيَقْرَأُ الْقُرْآنَ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to recline in my lap when I was menstruating, and recite Qur'an."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺمیری گود میں ٹیک لگاتے اور قر آن پڑھتے اور میں حائضہ ہوتی۔


و حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ مَهْدِيٍّ حَدَّثَنَا حَمَّادُ بْنُ سَلَمَةَ حَدَّثَنَا ثَابِتٌ عَنْ أَنَسٍ أَنَّ الْيَهُودَ كَانُوا إِذَا حَاضَتِ الْمَرْأَةُ فِيهِمْ لَمْ يُؤَاكِلُوهَا وَلَمْ يُجَامِعُوهُنَّ فِي الْبُيُوتِ فَسَأَلَ أَصْحَابُ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَأَنْزَلَ اللَّهُ تَعَالَى{ وَيَسْأَلُونَكَ عَنْ الْمَحِيضِ قُلْ هُوَ أَذًى فَاعْتَزِلُوا النِّسَاءَ فِي الْمَحِيضِ } إِلَى آخِرِ الْآيَةِ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ اصْنَعُوا كُلَّ شَيْءٍ إِلَّا النِّكَاحَ فَبَلَغَ ذَلِكَ الْيَهُودَ فَقَالُوا مَا يُرِيدُ هَذَا الرَّجُلُ أَنْ يَدَعَ مِنْ أَمْرِنَا شَيْئًا إِلَّا خَالَفَنَا فِيهِ فَجَاءَ أُسَيْدُ بْنُ حُضَيْرٍ وَعَبَّادُ بْنُ بِشْرٍ فَقَالَا يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنَّ الْيَهُودَ تَقُولُ كَذَا وَكَذَا فَلَا نُجَامِعُهُنَّ؟ فَتَغَيَّرَ وَجْهُ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ حَتَّى ظَنَنَّا أَنْ قَدْ وَجَدَ عَلَيْهِمَا فَخَرَجَا فَاسْتَقْبَلَهُمَا هَدِيَّةٌ مِنْ لَبَنٍ إِلَى النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَأَرْسَلَ فِي آثَارِهِمَا فَسَقَاهُمَا فَعَرَفَا أَنْ لَمْ يَجِدْ عَلَيْهِمَا.

Thabit narrated from Anas, that among the Jews, when a woman menstruated, they would not eat with her or stay with her in their houses. The Companions of the Prophet (s.a.w) asked the Prophet (s.a.w) (about that), and Allah, the Mighty and Sublime, revealed: "They ask you concerning menstruation. Say: "That is an Adha (a harmful thing), therefore, keep away from women during menses..." until the end of the Verse. The Messenger of Allah (s.a.w) said: "Do everything except intercourse." News of that reached the Jews and they said: "This man does not want to leave any of our affairs, but he differs from us therein." Usaid bin Hudair and 'Abbad bin Bishr came and said: "O Messenger of Allah, the Jews are saying such and such. Why don't we have intercourse with them (the women)?" The face of the Messenger of Allah (s.a.w) changed until we thought that he was angry with them, but when they went out, a gift of milk was sent to the Prophet (s.a.w). He sent someone to bring them back and gave them (some of that milk) to drink, and they knew that he was not angry with them.

سیدنا انسؓ سے روایت ہے کہ یہود میں جب کوئی عورت حائضہ ہوتی، تو اس کو نہ اپنے ساتھ کھلاتے ، نہ گھر میں اس کے ساتھ رہتے۔ رسول اللہﷺ کےصحابہ نے آپﷺ سے اس کے متعلق پوچھا تو اللہ تعالیٰ نے یہ آیت اتاری ”پوچھتے ہیں تم سے حیض کے بارے میں، تم کہہ دو کہ حیض پلیدی ہے ، تو عورتوں سے حیض کی حالت میں علیحدہ ہوجاؤ“(الآیۃ) رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ سب کام کرو سوا جماع کے۔ یہ خبر یہود کو پہنچی، تو انہوں نے کہا کہ یہ شخص (یعنی محمدﷺ) چاہتا ہے کہ ہر بات میں ہمارے مخالفت کرے یہ سن کر سیدنا اسید بن حضیرؓ اور سیدنا عباد بن بشرؓ آئے اور عرض کیا کہ یا رسول اللہﷺ! یہود ایسا ایسا کہتے ہیں تو ہم حائضہ عورتوں سے جماع کیوں نہ کریں (یعنی جب یہود ہماری مخالفت کو بُرا جانتے ہیں اور اس سے جلتے ہیں تو ہمیں بھی اچھی طرح خلاف کرنا چاہیے ) یہ سنتے ہی رسول اللہﷺ کے چہرے کا رنگ بدل گیا۔ (انکے یہ کہنے سے ہم جماع کیوں نہ کریں آپﷺ کو بُرا معلوم ہوا اس لئے کہ خلافِ قرآن بات ہے ) ہم یہ سمجھے کہ آپﷺ کو ان دونوں شخصوں پر غصہ آیا ہے۔ وہ دونوں اٹھ کر باہر نکلے ، اتنے میں کسی نے آپﷺ کو دودھ تحفہ کے طور پر بھیجا، تو آپﷺ نے ان دونوں کو پھر بلا بھیجا اور دودھ پلایا تب ان کو معلوم ہوا کہ آپ کا غصہ ان پر نہ تھا۔

Chapter No: 4

بَابُ الْمَذْيِ

Concerning pre-seminal fluid (Al Madhi)

مذی کا بیان

حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا وَكِيعٌ وَأَبُو مُعَاوِيَةَ وَهُشَيْمٌ عَنْ الْأَعْمَشِ عَنْ مُنْذِرِ بْنِ يَعْلَى وَيُكْنَى أَبَا يَعْلَى عَنْ ابْنِ الْحَنَفِيَّةِ عَنْ عَلِيٍّ قَالَ كُنْتُ رَجُلًا مَذَّاءً وَكُنْتُ أَسْتَحْيِي أَنْ أَسْأَلَ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لِمَكَانِ ابْنَتِهِ فَأَمَرْتُ الْمِقْدَادَ بْنَ الْأَسْوَدِ فَسَأَلَهُ فَقَالَ يَغْسِلُ ذَكَرَهُ وَيَتَوَضَّأُ.

It was narrated that 'Ali said: "I was a man who emitted a great deal of pro static fluid, but I felt too shy to ask the Prophet (s.a.w) about that because of the position of his daughter. So I told Al-Miqdad bin Al-Aswad to ask him, and he (s.a.w) said: 'Let him wash his private part and perform Wudu'.'"

حضرت علی رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ میں زیادہ مذی والا آدمی تھا اور (مذی سے مراد سفید پانی ہے جو شہوت کے وقت منی سے پہلے نکلتا ہے۔ اس سے غسل واجب نہیں ہوتا مگر اس کے نکلنے سے وضو ٹوٹ جاتا ہے ) میں نے رسول اللہﷺ سے پوچھنے میں شرم کی کیونکہ آپﷺ کی صاحبزادی میرے نکاح میں تھیں، تو میں نے سیدنا مقداد بن اسودؓ سے (پوچھنے کو) کہا ، انہوں نے پوچھا تو آپﷺ نے فرمایا کہ اپنی شرمگاہ کو دھو ڈالے اور وضو کرے۔


و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ حَبِيبٍ الْحَارِثِيُّ حَدَّثَنَا خَالِدٌ يَعْنِي ابْنَ الْحَارِثِ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ أَخْبَرَنِي سُلَيْمَانُ قَالَ سَمِعْتُ مُنْذِرًا عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَلِيٍّ عَنْ عَلِيٍّ أَنَّهُ قَالَ اسْتَحْيَيْتُ أَنْ أَسْأَلَ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ الْمَذْيِ مِنْ أَجْلِ فَاطِمَةَ فَأَمَرْتُ الْمِقْدَادَ فَسَأَلَهُ فَقَالَ مِنْهُ الْوُضُوءُ.

It was narrated that 'Ali said: "I felt too shy to ask the Prophet (s.a.w) about pro static fluid because of Fatimah, so I told Al-Miqdad to ask him, and he (s.a.w) said: 'Wudu' should be done for that."'

حضرت علی رضی اللہ عنہ کہتے ہیں مجھے رسول اللہ ﷺسے مذی کا مسئلہ پوچھتے ہوئے شرم محسوس ہوئی کیونکہ آپﷺکی صاحبزادی حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا میرے نکاح میں تھی میں نے مقداد سے کہا انہوں نے آپﷺسے پوچھا آپﷺنے فرمایا مذی نکلنے سے وضو لازم آتاہے ۔(غسل نہیں)


و حَدَّثَنِي هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ وَأَحْمَدُ بْنُ عِيسَى قَالَا حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي مَخْرَمَةُ بْنُ بُكَيْرٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ سُلَيْمَانَ بْنِ يَسَارٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ قَالَ عَلِيُّ بْنُ أَبِي طَالِبٍ أَرْسَلْنَا الْمِقْدَادَ بْنَ الْأَسْوَدِ إِلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَسَأَلَهُ عَنْ الْمَذْيِ يَخْرُجُ مِنْ الْإِنْسَانِ كَيْفَ يَفْعَلُ بِهِ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأْ وَانْضَحْ فَرْجَكَ.

It was narrated that Ibn 'Abbas said: "Ali bin Abi Talib said: 'I sent Al-Miqdad bin Al-Aswad to the Messenger of Allah (s.a.w), to ask him about the pro static fluid that comes out of a man, and how he should deal with it. The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Perform Wudu' and sprinkle (wash) your private part.'"

حضرت عبد اللہ بن عاس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضرت علی رضی اللہ عنہ نے کہا ہم نے مقداد بن اسود کو آپ ﷺکے پاس بھیجا انہوں نے پوچھا اگر کسی آدمی کی مذی نکلے تو وہ کیا کرے ؟ آپﷺنے فرمایا وضو کرے اور شرمگاہ دھوڈالے۔

Chapter No: 5

بَابُ غَسْلِ الْوَجْهِ وَالْيَدَيْنِ إِذَا اسْتَيْقَظَ مِنْ النَّوْمِ

About washing the face and hands after waking up from the sleep

جب نیند سے بیدار ہو تو منہ اور دونوں ہاتھوں کے دھونے کا بیان

حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو كُرَيْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ سُفْيَانَ عَنْ سَلَمَةَ بْنِ كُهَيْلٍ عَنْ كُرَيْبٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَامَ مِنْ اللَّيْلِ فَقَضَى حَاجَتَهُ ثُمَّ غَسَلَ وَجْهَهُ وَيَدَيْهِ ثُمَّ نَامَ.

It was narrated from Ibn 'Abbas that the Prophet (s.a.w) got up at night, relieved himself, washed his face and hands, then went back to sleep.

حضرت عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے رسول اللہ ﷺرات کو بیدار ہوئے تو قضائےحاجت سے فارغ ہوئے پھر منہ اور ہاتھ دھوئے پھر سوگئے۔

Chapter No: 6

بَابُ جَوَازِ نَوْمِ الْجُنُبِ وَاسْتِحْبَابِ الْوُضُوءِ لَهُ وَغَسْلِ الْفَرْجِ إِذَا أَرَادَ أَنْ يَأْكُلَ أَوْ يَشْرَبَ أَوْ يَنَامَ أَوْ يُجَامِعَ

It is permissible for an impure (Al Junub) to sleep though it is preferable for him to perform Wudu and wash his sexual organ if, he intends to eat, drink, sleep or have sexual intercourse

جنبی کے سونے کا جواز اور اس کے لئے شرمگاہ کا دھونا اور وضو کرنا مستحب ہے جب وہ کھانے، پینے، سونے، یا جماع کرنے کا ارادہ کرے ۔

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى التَّمِيمِيُّ وَمُحَمَّدُ بْنُ رُمْحٍ قَالَا أَخْبَرَنَا اللَّيْثُ ح و حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ حَدَّثَنَا لَيْثٌ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ أَبِي سَلَمَةَ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ إِذَا أَرَادَ أَنْ يَنَامَ وَهُوَ جُنُبٌ تَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلَاةِ قَبْلَ أَنْ يَنَامَ.

It was narrated from 'Aishah that if the Messenger of Allah (s.a.w) wanted to sleep while he was Junub, he would perform Wudu' as for prayer before going to sleep.

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺجب جنبی ہوتے اور سونے کا ارادہ فرماتے تو سونے سے قبل وضو کرلیتے جیسے نماز کے لیے کرتے ہیں۔


حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا ابْنُ عُلَيَّةَ وَوَكِيعٌ وَغُنْدَرٌ عَنْ شُعْبَةَ عَنْ الْحَكَمِ عَنْ إِبْرَاهِيمَ عَنْ الْأَسْوَدِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا كَانَ جُنُبًا فَأَرَادَ أَنْ يَأْكُلَ أَوْ يَنَامَ تَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلَاةِ.

It was narrated that 'Aishah said: "When the Messenger of Allah (s.a.w) was Junub and wanted to eat or sleep, he would perform Wudu' [as for prayer]."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺجب جنبی ہوتے تو سونے یا کھانے کا ارادہ فرماتے تو اس سے قبل وضو کرلیتے جیسے نماز کے لیے کرتے ہیں۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى وَابْنُ بَشَّارٍ قَالَا حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ جَعْفَرٍ ح و حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُعَاذٍ قَالَ حَدَّثَنَا أَبِي قَالَا حَدَّثَنَا شُعْبَةُ بِهَذَا الْإِسْنَادِ. قَالَ ابْنُ الْمُثَنَّى فِي حَدِيثِهِ حَدَّثَنَا الْحَكَمُ سَمِعْتُ إِبْرَاهِيمَ يُحَدِّثُ.

It was narrated by Shu'bah with this chain (a similar Hadith as no. 700).

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے۔


و حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ أَبِي بَكْرٍ الْمُقَدَّمِيُّ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا يَحْيَى وَهُوَ ابْنُ سَعِيدٍ عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ ح و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَابْنُ نُمَيْرٍ وَاللَّفْظُ لَهُمَا قَالَ ابْنُ نُمَيْرٍ حَدَّثَنَا أَبِي وَقَالَ أَبُو بَكْرٍ حَدَّثَنَا أَبُو أُسَامَةَ قَالَا حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ عَنْ نَافِعٍ عَنْ ابْنِ عُمَرَ أَنَّ عُمَرَ قَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ! أَيَرْقُدُ أَحَدُنَا وَهُوَ جُنُبٌ؟ قَالَ نَعَمْ إِذَا تَوَضَّأَ.

It was narrated from Ibn 'Umar, that 'Umar said: "O Messenger of Allah, can one of us go to sleep while he is Junub?" He said: "Yes, if he performs Wudu'."

حضرت ابن عمر سے روایت ہے کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے کہا یارسول اللہ ! کیاہم میں سے کوئی جنابت کے بعد سو سکتا ہے؟آپﷺنے فرمایا ہاں ، جب وہ وضو کرے۔


و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ عَنْ ابْنِ جُرَيْجٍ أَخْبَرَنِي نَافِعٌ عَنْ ابْنِ عُمَرَ أَنَّ عُمَرَ اسْتَفْتَى النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَ هَلْ يَنَامُ أَحَدُنَا وَهُوَ جُنُبٌ قَالَ نَعَمْ لِيَتَوَضَّأْ ثُمَّ لِيَنَمْ حَتَّى يَغْتَسِلَ إِذَا شَاءَ.

It was narrated from Ibn 'Umar, that 'Umar consulted the Prophet (s.a.w) and said: "Can one of us go to sleep while he is Junub?" He said: "Yes. Let him perform Wudu' and then go to sleep, until he does Ghusl whenever he wishes."

حضرت ابن عمر سے روایت ہے کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے رسول اللہ ﷺسے مسئلہ پوچھا اگر کوئی ہم میں سے جنبی ہو تو وہ سوسکتا ہے؟ آپ ﷺنے فرمایا ہاں وضو کرلے پھر سو جائے او رجب چاہیے غسل کرلے۔


و حَدَّثَنِي يَحْيَى بْنُ يَحْيَى قَالَ قَرَأْتُ عَلَى مَالِكٍ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ دِينَارٍ عَنْ ابْنِ عُمَرَ قَالَ ذَكَرَ عُمَرُ بْنُ الْخَطَّابِ لِرَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَنَّهُ تُصِيبُهُ جَنَابَةٌ مِنْ اللَّيْلِ فَقَالَ لَهُ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ تَوَضَّأْ وَاغْسِلْ ذَكَرَكَ ثُمَّ نَمْ.

It was narrated that Ibn 'Umar said: "'Umar bin Al-Khattab told the Messenger of Allah (s.a.w) that he became Junub at night, and the Messenger of Allah (s.a.w) said to him: 'Perform Wudu', and wash your private part, then sleep."'

حضرت عبداللہ بن عمر سے روایت ہے کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے رسول اللہ ﷺ کوبتایا کہ انہیں رات کو جنابت ہوئی آپ ﷺنے فرمایا وضو کرلے اور شرمگاہ کو دھو ڈال پھر سوجا۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ حَدَّثَنَا لَيْثٌ عَنْ مُعَاوِيَةَ بْنِ صَالِحٍ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي قَيْسٍ قَالَ سَأَلْتُ عَائِشَةَ عَنْ وِتْرِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَذَكَرَ الْحَدِيثَ قُلْتُ كَيْفَ كَانَ يَصْنَعُ فِي الْجَنَابَةِ أَكَانَ يَغْتَسِلُ قَبْلَ أَنْ يَنَامَ أَمْ يَنَامُ قَبْلَ أَنْ يَغْتَسِلَ قَالَتْ كُلُّ ذَلِكَ قَدْ كَانَ يَفْعَلُ رُبَّمَا اغْتَسَلَ فَنَامَ وَرُبَّمَا تَوَضَّأَ فَنَامَ قُلْتُ الْحَمْدُ لِلَّهِ الَّذِي جَعَلَ فِي الْأَمْرِ سَعَةً.

It was narrated that 'Abdullah bin Abi Qais said: "I asked 'Aishah about the Witr of the Messenger of Allah (s.a.w)" - and he mentioned the Hadith. I said: "What did he do in the case of Janabah? Did he perform Ghusl before he slept, or sleep before he performed Ghusl?" She said: "He would do both. Sometimes he performed Ghusl and then slept, and sometimes he would perform Wudu' and sleep." I said: "Praise be to Allah Who has made the matter flexible."

حضرت عبداللہ بن ابی قیس سے روایت ہے کہ میں نے حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے رسول اللہ ﷺ کے وتر کے بارے میں پوچھا۔ پھر حدیث کو بیان کیا یہاں تک کہ میں نے کہا آپ ﷺجنابت میں کیا کیا کرتے تھے آیا غسل سے پہلے سو تے تھے یا غسل کے بعد ؟ انہوں نے کہا آپ دونوں طرح کرتے ،کبھی غسل کرلیتے پھر سوتے اور کبھی وضو کرکے سوتے تھے ۔ میں نے کہا شکر اللہ کاجس نے اس معاملے میں گنجائش رکھی ہے۔


و حَدَّثَنِيهِ زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ مَهْدِيٍّ ح و حَدَّثَنِيهِ هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ جَمِيعًا عَنْ مُعَاوِيَةَ بْنِ صَالِحٍ بِهَذَا الْإِسْنَادِ مِثْلَهُ.

A similar report (as no. 705) was narrated from Mu'awiyah bin Salih with this chain.

یہ حدیث بھی ویسی ہے جیسے اوپر گزری ہے۔


و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا حَفْصُ بْنُ غِيَاثٍ ح و حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ أَخْبَرَنَا ابْنُ أَبِي زَائِدَةَ ح و حَدَّثَنِي عَمْرٌو النَّاقِدُ وَابْنُ نُمَيْرٍ قَالَا حَدَّثَنَا مَرْوَانُ بْنُ مُعَاوِيَةَ الْفَزَارِيُّ كُلُّهُمْ عَنْ عَاصِمٍ عَنْ أَبِي الْمُتَوَكِّلِ عَنْ أَبِي سَعِيدٍ الْخُدْرِيِّ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا أَتَى أَحَدُكُمْ أَهْلَهُ ثُمَّ أَرَادَ أَنْ يَعُودَ فَلْيَتَوَضَّأْ. زَادَ أَبُو بَكْرٍ فِي حَدِيثِهِ بَيْنَهُمَا وُضُوءًا وَقَالَ ثُمَّ أَرَادَ أَنْ يُعَاوِدَ.

It was narrated that Abu Sa'eed Al-Khudri said: The Messenger of Allah (s.a.w) said: "When one of you has intercourse with his wife then wants to repeat it, let him perform Wudu'." (One of the narrators) Abu Bakr added in his report: "Between the two (acts) there should be Wudu'." And he said: "If he wishes that it should be repeated."

ابو سعید خدری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسو ل اللہ ﷺنے فرمایا جب تم میں سے کوئی اپنی بیوی سے مباشرت کرے پھر دوبارہ کرنا چاہے تو اس کو چاہیے وضو کرے۔


و حَدَّثَنَا الْحَسَنُ بْنُ أَحْمَدَ بْنِ أَبِي شُعَيْبٍ الْحَرَّانِيُّ حَدَّثَنَا مِسْكِينٌ يَعْنِي ابْنَ بُكَيْرٍ الْحَذَّاءَ عَنْ شُعْبَةَ عَنْ هِشَامِ بْنِ زَيْدٍ عَنْ أَنَسٍ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ يَطُوفُ عَلَى نِسَائِهِ بِغُسْلٍ وَاحِدٍ.

It was narrated from Anas that the Prophet (s.a.w) used to go around to his wives with a single Ghusl.

حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺاپنی سب عورتوں کے پاس ایک ہی غسل سے ہو آتےتھے۔

Chapter No: 7

بَابُ وُجُوبِ الْغَسْلِ عَلَى الْمَرْأَةِ بِخُرُوجِ الْمَنِيِّ مِنْهَا

It is obligatory upon a woman to perform Ghusl due to the discharge of seminal fluid

عورت سے منی نکلے پرغسل واجب ہے۔

و حَدَّثَنِي زُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ حَدَّثَنَا عُمَرُ بْنُ يُونُسَ الْحَنَفِيُّ حَدَّثَنَا عِكْرِمَةُ بْنُ عَمَّارٍ قَالَ قَالَ إِسْحَاقُ بْنُ أَبِي طَلْحَةَ حَدَّثَنِي أَنَسُ بْنُ مَالِكٍ قَالَ جَاءَتْ أُمُّ سُلَيْمٍ وَهِيَ جَدَّةُ إِسْحَاقَ إِلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَتْ لَهُ وَعَائِشَةُ عِنْدَهُ يَا رَسُولَ اللَّهِ! الْمَرْأَةُ تَرَى مَا يَرَى الرَّجُلُ فِي الْمَنَامِ فَتَرَى مِنْ نَفْسِهَا مَا يَرَى الرَّجُلُ مِنْ نَفْسِهِ فَقَالَتْ عَائِشَةُ يَا أُمَّ سُلَيْمٍ فَضَحْتِ النِّسَاءَ تَرِبَتْ يَمِينُكِ فَقَالَ لِعَائِشَةَ بَلْ أَنْتِ فَتَرِبَتْ يَمِينُكِ، نَعَمْ، فَلْتَغْتَسِلْ يَا أُمَّ سُلَيْمٍ إِذَا رَأَتْ ذَاكِ.

Anas bin Malik said: "While 'Aishah was present, Umm Sulaim, who was the grandmother of Ishaq, came to the Messenger of Allah (s.a.w) and said to him: 'O Messenger of Allah, a woman may see what a man sees in his dream, and she may see in herself what a man sees in himself.' 'Aishah said: 'O Umm Sulaim, you have disclosed women's secrets Taribat Yaminuk (may your right hand be rubbed with dust; this is a mild form of rebuke). He (s.a.w) said to 'Aishah: 'Rather, your right hand should be rubbed with dust. Yes, let her perform Ghusl, O Umm Sulaim, if she sees that."'

حضرت انس بن مالک سے روایت ہے کہ اُمّ سلیم رضی اللہ عنہا (اور وہ راوی حدیث اسحاق بن ابی طلحہ کی دادی تھیں) رسول اللہﷺ کے پاس آئیں اور وہاں اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا بھی بیٹھی تھیں، انہوں نے کہا کہ یا رسول اللہﷺ! عورت اگر سوتے میں ایسا دیکھے ، جیسا کہ مرد دیکھتا ہے (یعنی منی کو تو کیا حکم ہے)؟ یہ سن کر اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا نے کہا کہ اے اُمّ سلیم! تو نے عورتوں کو رسوا کر دیا تیرے ہاتھ خاک آلود ہوجائیں۔ آپﷺ نے فرمایا کہ اے عائشہ!بلکہ تیرے ہاتھ خاک آلود ہوجائیں اور اُمّ سلیم سے فرمایا کہ اے اُمّ سلیم! جب عورت ایسا دیکھے تو اس صورت میں غسل کرے۔


حَدَّثَنَا عَبَّاسُ بْنُ الْوَلِيدِ حَدَّثَنَا يَزِيدُ بْنُ زُرَيْعٍ حَدَّثَنَا سَعِيدٌ عَنْ قَتَادَةَ أَنَّ أَنَسَ بْنَ مَالِكٍ حَدَّثَهُمْ أَنَّ أُمَّ سُلَيْمٍ حَدَّثَتْ أَنَّهَا سَأَلَتْ نَبِيَّ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ الْمَرْأَةِ تَرَى فِي مَنَامِهَا مَا يَرَى الرَّجُلُ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا رَأَتْ ذَلِكِ الْمَرْأَةُ فَلْتَغْتَسِلْ فَقَالَتْ أُمُّ سُلَيْمٍ وَاسْتَحْيَيْتُ مِنْ ذَلِكَ قَالَتْ وَهَلْ يَكُونُ هَذَا؟ فَقَالَ نَبِيُّ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ نَعَمْ، فَمِنْ أَيْنَ يَكُونُ الشَّبَهُ؟ إِنَّ مَاءَ الرَّجُلِ غَلِيظٌ أَبْيَضُ وَمَاءَ الْمَرْأَةِ رَقِيقٌ أَصْفَرُ فَمِنْ أَيِّهِمَا عَلَا أَوْ سَبَقَ يَكُونُ مِنْهُ الشَّبَهُ.

It was narrated from Qatadah that Anas bin Malik told them that Umm Sulaim narrated, that she asked the Prophet of Allah (s.a.w) about a woman who sees in her dreams what a man sees. The Messenger of Allah (s.a.w) said: "If a woman sees that, let her perform Ghusl." Umm Salamah said: "I felt shy because of that, and I said: 'Does that really happen?"; The Prophet of Allah (s.a.w) said: "How else does resemblance (of the child to either parent) happen? The water of the man is thick and white, and the water of the woman is thin and yellow. Whichever of them prevails, or comes first, the resemblance will be (to that parent)."

قتادہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ انس بن مالک رضی اللہ عنہ نے ان سے حدیث بیان کی کہ ام سلیم رضی اللہ عنہا نے رسول اللہ ﷺسے پوچھا اگر عورت خواب میں وہ دیکھے جو مرد دیکھتا ہے ؟ آپ ﷺنے فرمایا جب عورت ایسا دیکھے تو غسل کرے۔ام سلیم رضی اللہ عنہا نے کہا مجھے شرم آئی میں نے کہا ایسا کیا ہوتاہے؟(یعنی عورت کو بھی احتلام ہوتا ہے)رسول اللہ ﷺنے فرمایا ہاں ایسا ہوتا ہے ورنہ بچہ عورت کے مشابہ کیوں کر ہوتا ہے۔مرد کا نطفہ گاڑھا سفید اور عورت کا نطفہ پتلا زرد ہوتا ہے ۔ پھر جو اوپر جاتا ہے یا آگے جاتا ہے بچہ اسی کے مشابہ ہوجاتا ہے۔


حَدَّثَنَا دَاوُدُ بْنُ رُشَيْدٍ حَدَّثَنَا صَالِحُ بْنُ عُمَرَ حَدَّثَنَا أَبُو مَالِكٍ الْأَشْجَعِيُّ عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ قَالَ سَأَلَتْ امْرَأَةٌ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ الْمَرْأَةِ تَرَى فِي مَنَامِهَا مَا يَرَى الرَّجُلُ فِي مَنَامِهِ فَقَالَ إِذَا كَانَ مِنْهَا مَا يَكُونُ مِنْ الرَّجُلِ فَلْتَغْتَسِلْ.

It was narrated that Anas bin Malik said: "A woman asked the Messenger of Allah (s.a.w) about a woman who sees in her dreams what a man sees in his dream. He said: 'If she emits (fluid) as a man does, than let her perform Ghusl."'

حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ایک عورت نےرسول اللہ ﷺسے پوچھا اگر عورت خواب میں وہ دیکھے جو مرد دیکھتا ہے ؟ آپ ﷺنے فرمایا اگر اس میں سے وہی چیز نکلے جو مرد سے نکلتی ہے (یعنی منی نکلے) تو غسل کرے۔


و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى التَّمِيمِيُّ أَخْبَرَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ زَيْنَبَ بِنْتِ أَبِي سَلَمَةَ عَنْ أُمِّ سَلَمَةَ قَالَتْ جَاءَتْ أَمُّ سُلَيْمٍ إِلَى النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَتْ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنَّ اللَّهَ لَا يَسْتَحْيِي مِنْ الْحَقِّ فَهَلْ عَلَى الْمَرْأَةِ مِنْ غُسْلٍ إِذَا احْتَلَمَتْ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ نَعَمْ إِذَا رَأَتِ الْمَاءَ فَقَالَتْ أُمُّ سَلَمَةَ يَا رَسُولَ اللَّهِ وَتَحْتَلِمُ الْمَرْأَةُ؟ فَقَالَ تَرِبَتْ يَدَاكِ فَبِمَ يُشْبِهُهَا وَلَدُهَا.

It was narrated that Umm Salamah said: "Umm Sulaim came to the Prophet (s.a.w) and said: 'O Messenger of Allah, Allah is not too shy to tell the truth. Does a woman have to perform Ghusl if she has a wet dream?' The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Yes, if she sees water (discharge of fluid).' Umm Salamah said: 'O Messenger of Allah, can a woman have a wet dream?' He said: 'May your hands be rubbed with dust, how else would her child resemble her?"'

ام المؤمنین ام سلمہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ ام سلیم رسول اللہ ﷺکے پاس آئیں اور عرض کیا یارسول اللہ ﷺاللہ تعالیٰ سچ بات سے شرماتا نہیں ہے کیا عورت پر غسل واجب ہے جب اس کو احتلام ہوجائے؟آپ ﷺنے فرمایا ہاں جب وہ پانی دیکھے (یعنی منی کو) ام سلمہ رضی اللہ عنہا نے کہا یارسول اللہ ﷺکیا عورت کو بھی احتلام ہوتا ہے ؟ آپ نے فرمایا تیرے ہاتھ خاک آلود ہوجائیں تو پھر بچہ عورت کے مشابہ کیسے ہوتا ہے؟


حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا وَكِيعٌ ح و حَدَّثَنَا ابْنُ أَبِي عُمَرَ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ جَمِيعًا عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ بِهَذَا الْإِسْنَادِ مِثْلَ مَعْنَاهُ وَزَادَ قَالَتْ قُلْتُ فَضَحْتِ النِّسَاءَ.

A similar Hadith (as no. 712) was narrated from Hisham bin 'Urwah with this chain, and he added: "She said: I said: "You have disclosed women's secret."

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے۔


و حَدَّثَنَا عَبْدُ الْمَلِكِ بْنُ شُعَيْبِ بْنِ اللَّيْثِ حَدَّثَنِي أَبِي عَنْ جَدِّي حَدَّثَنِي عُقَيْلُ بْنُ خَالِدٍ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ أَنَّهُ قَالَ أَخْبَرَنِي عُرْوَةُ بْنُ الزُّبَيْرِ أَنَّ عَائِشَةَ زَوْجَ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَخْبَرَتْهُ أَنَّ أُمَّ سُلَيْمٍ أُمَّ بَنِي أَبِي طَلْحَةَ دَخَلَتْ عَلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِمَعْنَى حَدِيثِ هِشَامٍ غَيْرَ أَنَّ فِيهِ قَالَ قَالَتْ عَائِشَةُ فَقُلْتُ لَهَا أُفٍّ لَكِ أَتَرَى الْمَرْأَةُ ذَلِكِ؟.

'Urwah bin Az-Zubair narrated that 'Aishah, the wife of the Prophet (s.a.w), told him that Umm Sulaim - Umm Bani Abi Talhah - entered upon the Messenger of Allah (s.a.w)... a Hadith similar to that of Hisham (no. 712), except that in it he said: "'Aishah said: 'I said to her: 'Fie on you! Do women see that?'"

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا رسول اللہ ﷺسے روایت کرتی ہیں کہ ام سلیم نبی اکرم ﷺکے پاس آئی باقی وہی حدیث ہے۔


حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ مُوسَى الرَّازِيُّ وَسَهْلُ بْنُ عُثْمَانَ وَأَبُو كُرَيْبٍ وَاللَّفْظُ لِأَبِي كُرَيْبٍ قَالَ سَهْلٌ حَدَّثَنَا و قَالَ الْآخَرَانِ أَخْبَرَنَا ابْنُ أَبِي زَائِدَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ مُصْعَبِ بْنِ شَيْبَةَ عَنْ مُسَافِعِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ عَنْ عُرْوَةَ بْنِ الزُّبَيْرِ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّ امْرَأَةً قَالَتْ لِرَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ هَلْ تَغْتَسِلُ الْمَرْأَةُ إِذَا احْتَلَمَتْ وَأَبْصَرَتْ الْمَاءَ؟ فَقَالَ نَعَمْ فَقَالَتْ لَهَا عَائِشَةُ تَرِبَتْ يَدَاكِ وَأُلَّتْ قَالَتْ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ دَعِيهَا وَهَلْ يَكُونُ الشَّبَهُ إِلَّا مِنْ قِبَلِ ذَلِكِ إِذَا عَلَا مَاؤُهَا مَاءَ الرَّجُلِ أَشْبَهَ الْوَلَدُ أَخْوَالَهُ وَإِذَا عَلَا مَاءُ الرَّجُلِ مَاءَهَا أَشْبَهَ أَعْمَامَهُ.

It was narrated from 'Aishah that a woman said to the Messenger of Allah (s.a.w): "Should a woman perform Ghusl if she has a wet dream and sees water?" He said: "Yes." 'Aishah said to her: "May your hands be rubbed with dust." The Messenger of Allah (s.a.w) said: "Let her be. Can the resemblance (of the child to either parent) come except through that? If her water prevails over that of the man, then the child will resemble his maternal uncles, and if the man's water prevails over hers, then he will resemble his paternal uncles."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ ایک عورت نے رسول اللہ ﷺسے پوچھا کیا عورت غسل کرے جب اس کو احتلام ہو او ر پانی دیکھے؟آپﷺنے فرمایا ہاں غسل کرے ۔حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے کہا تیرے ہاتھ خاک آلود ہوجائیں ، او رتجھے نیزہ لگے ۔ رسول اللہ ﷺنے فرمایا اس کو چھوڑدے ۔آخر بچہ جو ماں باپ کے مشابہ ہوتاہے وہ اسی سے ہوتا ہے؟جب عورت کا نطفہ مرد کے نطفہ پر غالب ہوتو بچہ اپنے ننھیال کے مشابہ ہوتاہے او رجب مرد کانطفہ عورت کے نطفہ پر غالب ہو تو بچہ دوھیال پر پڑتا ہے۔

Chapter No: 8

بَابُ بَيَانِ صِفَةِ مَنِيِّ الرَّجُلِ وَالْمَرْأَةِ وَأَنَّ الْوَلَدَ مَخْلُوقٌ مِنْ مَائِهِمَا

About the feature of male and female semen and the child is created from the water of both of them

مرد اور عورت کی منی کی خصوصیات اور یہ کہ بچہ ان دونوں کے پانی سے پیدا ہوتا ہے۔

حَدَّثَنِي الْحَسَنُ بْنُ عَلِيٍّ الْحُلْوَانِيُّ حَدَّثَنَا أَبُو تَوْبَةَ وَهُوَ الرَّبِيعُ بْنُ نَافِعٍ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ يَعْنِي ابْنَ سَلَّامٍ عَنْ زَيْدٍ يَعْنِي أَخَاهُ أَنَّهُ سَمِعَ أَبَا سَلَّامٍ قَالَ حَدَّثَنِي أَبُو أَسْمَاءَ الرَّحَبِيُّ أَنَّ ثَوْبَانَ مَوْلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ حَدَّثَهُ قَالَ كُنْتُ قَائِمًا عِنْدَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَجَاءَ حِبْرٌ مِنْ أَحْبَارِ الْيَهُودِ فَقَالَ السَّلَامُ عَلَيْكَ يَا مُحَمَّدُ فَدَفَعْتُهُ دَفْعَةً كَادَ يُصْرَعُ مِنْهَا فَقَالَ لِمَ تَدْفَعُنِي فَقُلْتُ أَلَا تَقُولُ يَا رَسُولَ اللَّهِ فَقَالَ الْيَهُودِيُّ إِنَّمَا نَدْعُوهُ بِاسْمِهِ الَّذِي سَمَّاهُ بِهِ أَهْلُهُ فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِنَّ اسْمِي مُحَمَّدٌ الَّذِي سَمَّانِي بِهِ أَهْلِي فَقَالَ الْيَهُودِيُّ جِئْتُ أَسْأَلُكَ فَقَالَ لَهُ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَيَنْفَعُكَ شَيْءٌ إِنْ حَدَّثْتُكَ قَالَ أَسْمَعُ بِأُذُنَيَّ فَنَكَتَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِعُودٍ مَعَهُ فَقَالَ سَلْ فَقَالَ الْيَهُودِيُّ أَيْنَ يَكُونُ النَّاسُ { يَوْمَ تُبَدَّلُ الْأَرْضُ غَيْرَ الْأَرْضِ وَالسَّمَوَاتُ } فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ هُمْ فِي الظُّلْمَةِ دُونَ الْجِسْرِ قَالَ فَمَنْ أَوَّلُ النَّاسِ إِجَازَةً قَالَ فُقَرَاءُ الْمُهَاجِرِينَ قَالَ الْيَهُودِيُّ فَمَا تُحْفَتُهُمْ حِينَ يَدْخُلُونَ الْجَنَّةَ؟ قَالَ زِيَادَةُ كَبِدِ النُّونِ قَالَ فَمَا غِذَاؤُهُمْ عَلَى إِثْرِهَا قَالَ يُنْحَرُ لَهُمْ ثَوْرُ الْجَنَّةِ الَّذِي كَانَ يَأْكُلُ مِنْ أَطْرَافِهَا قَالَ فَمَا شَرَابُهُمْ عَلَيْهِ قَالَ مِنْ عَيْنٍ فِيهَا تُسَمَّى سَلْسَبِيلًا قَالَ صَدَقْتَ قَالَ وَجِئْتُ أَسْأَلُكَ عَنْ شَيْءٍ لَا يَعْلَمُهُ أَحَدٌ مِنْ أَهْلِ الْأَرْضِ إِلَّا نَبِيٌّ أَوْ رَجُلٌ أَوْ رَجُلَانِ قَالَ يَنْفَعُكَ إِنْ حَدَّثْتُكَ قَالَ أَسْمَعُ بِأُذُنَيَّ قَالَ جِئْتُ أَسْأَلُكَ عَنْ الْوَلَدِ؟ قَالَ مَاءُ الرَّجُلِ أَبْيَضُ وَمَاءُ الْمَرْأَةِ أَصْفَرُ فَإِذَا اجْتَمَعَا فَعَلَا مَنِيُّ الرَّجُلِ مَنِيَّ الْمَرْأَةِ أَذْكَرَا بِإِذْنِ اللَّهِ وَإِذَا عَلَا مَنِيُّ الْمَرْأَةِ مَنِيَّ الرَّجُلِ آنَثَا بِإِذْنِ اللَّهِ. قَالَ الْيَهُودِيُّ لَقَدْ صَدَقْتَ، وَإِنَّكَ لَنَبِيٌّ ثُمَّ انْصَرَفَ فَذَهَبَ. فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَقَدْ سَأَلَنِي هَذَا عَنْ الَّذِي سَأَلَنِي عَنْهُ وَمَا لِي عِلْمٌ بِشَيْءٍ مِنْهُ حَتَّى أَتَانِيَ اللَّهُ بِهِ.

Thawban the freed slave of the Messenger of Allah (s.a.w) said: "I was standing beside the Messenger of Allah (s.a.w) when one of the Jewish rabbis came and said: 'Peace be upon you, O Muhammad.' I gave him a shove that almost made him fall over. He said: 'Why did you push me?' I said: 'Why don't you say, "O Messenger of Allah"?' The Jew said: 'We only call him by the name that his family gave him.' The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'My name is Muhammad, (a name) that my family gave to me.' The Jew said: 'I have come to ask you something.' The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'Will it benefit you anything if I tell you?' He said: 'I will listen.' The Messenger of Allah (s.a.w) scratched the ground with a stick that he had with him, and said: 'Ask.' The Jew said: 'Where will the people be on the Day when the earth is changed to another earth, and the heavens (likewise)?' The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'They will be in darkness near the Bridge.' He said: 'Who will be the first people to cross (the Bridge)?' He said: 'The poor Muhajirin (emigrants)." The Jew said: 'What will be presented to them when they enter Paradise?' He said: "The caudate (extra) lobe of the fish liver."' He said: 'What food will be given to them after that?' He said: 'The bull of Paradise, which used to graze along its edges, will be slaughtered for them.' He said: 'What will their drink be?' He said: 'From a spring there that is called Salsabil.' He said: 'You have spoken the truth. I came to ask you about something that no one on earth knows except a Prophet, or one or two men.' He (s.a.w) said: 'Will it benefit you anything if I tell you?' He said: 'I will listen. I have come to ask you about the child.' He (s.a.w) said: 'The water of the man is white and the water of the woman is yellow. If they meet and the Mani of the man prevails over the Mani of the woman, it will be a male, by Allah's leave. If the Mani (seminal fluid) of the woman prevails over the Mani (seminal fluid) of the man, it will be a female, by Allah's leave.' The Jew said: 'You have spoken the truth; you are indeed a Prophet.' Then he left and went away. The Messenger of Allah (s.a.w) said: 'This man asked me what he asked me, and I had no knowledge of any of that until Allah granted it to me."'

حضرت ثوبان رضی اللہ عنہ مولیٰ رسول اللہﷺ کہتے ہیں کہ میں رسول اللہﷺ کے پاس کھڑا تھا کہ یہودی عالموں میں سے ایک عالم آیا اور بولا کہ السلام علیکم یا محمدﷺ! میں نے اس کو ایسے زور سے ایک دھکا دیا کہ وہ گرتے گرتے بچا۔ وہ بولا کہ تو مجھے دھکا کیوں دیتا ہے ؟ میں نے کہا کہ تو (نبیﷺ کا نام لیتا ہے اور) رسول اللہﷺ کیوں نہیں کہتا؟ وہ بولا کہ ہم ان کو اس نام سے پکارتے ہیں جو ان کے گھر والوں نے رکھا ہے۔ رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ میرا نام جو گھر والوں نے رکھا ہے وہ محمدﷺ ہے۔ یہودی نے کہا کہ میں تمہارے پاس کچھ پوچھنے کو آیا ہوں۔ رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ بھلا میں اگر تجھے کچھ بتلاؤں تو تجھے فائدہ ہو گا؟ اس نے کہا کہ میں اپنے دونوں کانوں سے سننا چاہتا ہوں۔ رسول اللہﷺ نے اس چھڑی سے جو آپﷺ کے ہاتھ مبارک میں تھی زمین پر لکیر کھینچی (جیسے کوئی سوچتے وقت کرتا ہے ) اور فرمایا کہ پوچھ۔ یہودی نے کہا کہ جس دن یہ زمین آسمان بدل کر دوسرے زمین و آسمان ہوں گے ، لوگ اس وقت کہاں ہوں گے ؟ رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ لوگ اس وقت اندھیرے میں پل صراط کے پاس کھڑے ہوں گے۔ اس نے پوچھا کہ پھر سب سے پہلے کون لوگ اس پل سے پار ہوں گے ؟ آپﷺ نے فرمایا کہ مہاجرین میں جو محتاج ہیں۔ (مہاجرین سے مراد وہ لوگ ہیں جو نبیﷺ کے ساتھ گھر بار چھوڑ کر نکل گئے اور فقر و فاقہ کی تکلیف پر صبر کیا اور دنیا پر لات ماری) یہودی نے کہا کہ پھر جب وہ لوگ جنت میں جائیں گے تو ان کا پہلا ناشتہ/ تحفہ کیا ہو گا؟ آپﷺ نے فرمایا کہ مچھلی کے جگر کا ٹکڑا (جو نہایت مزیدار اور مقوی ہوتا ہے )۔ اس نے کہا پھر صبح کا کھانا کیا ہو گا؟ آپﷺ نے فرمایا کہ ان کے لئے وہ بیل کاٹا جائے گا جو جنت میں چرا کرتا تھا۔ پھر اس نے پوچھا کہ یہ کھا کر وہ کیا پئیں گے ؟ آپﷺ نے فرمایا کہ سلسبیل نامی چشمہ کا پانی۔ اس یہودی نے کہا کہ آپﷺ نے سچ فرمایا اور میں آپ سے ایک ایسی بات پوچھنے آیا ہوں جس کو دنیا میں کوئی نہیں جانتا سوائے نبیﷺ کے یا شاید ایک دو آدمی اور جانتے ہوں۔ آپﷺ نے فرمایا کہ اگر میں تجھے وہ بات بتا دوں تو تجھے فائدہ ہو گا؟ اس نے کہا میں اپنے دونوں کانوں سے سننا چاہتا ہوں ۔ پھر اس نے کہا کہ میں بچے کے بارے میں پوچھتا ہوں۔ آپﷺ نے فرمایا کہ مرد کا پانی سفید ہے اور عورت کا پانی زرد ہے ، جب یہ دونوں اکٹھے ہوتے ہیں اور مرد کی منی عورت کی منی پر غالب ہوتی ہے ، تو اللہ کے حکم سے لڑکا پیدا ہوتا ہے اور جب مرد کی منی پر عورت کی منی غالب ہوتی ہے تو اللہ کے حکم سے لڑکی پیدا ہوتی ہے۔ یہودی نے کہا آپ نے سچ کہا۔ اور بیشک آپ نبی ہیں۔ پھر وہ لوٹا اور چلا گیا۔ پھر رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ اس نے جب مجھ سے یہ سوالات کئے تو مجھے کسی چیز کا علم نہیں تھا، حتی کہ اللہ تعالیٰ نے مجھے اس کا علم دے دیا۔


و حَدَّثَنِيهِ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ الدَّارِمِيُّ أَخْبَرَنَا يَحْيَى بْنُ حَسَّانَ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ بْنُ سَلَّامٍ فِي هَذَا الْإِسْنَادِ بِمِثْلِهِ غَيْرَ أَنَّهُ قَالَ كُنْتُ قَاعِدًا عِنْدَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَقَالَ زَائِدَةُ كَبِدِ النُّونِ وَقَالَ أَذْكَرَ وَآنَثَ وَلَمْ يَقُلْ أَذْكَرَا وَآنَثَا.

Mu'awiyah bin Salam narrated a similar report (as no. 716) with this chain, except that he (Thawban) said: "I was sitting beside the Messenger of Allah (s.a.w)."

اوپر والی حدیث اس سند سے بھی مروی ہے صرف چند الفاظ کا معمولی تغیر و تبدل ہے۔

Chapter No: 9

بَابُ صِفَةِ غُسْلِ الْجَنَابَةِ

About the method of bath taken after sexual impurity (Ghusl ul Janabah)

غسل جنابت کا طریقہ

حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى التَّمِيمِيُّ حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا اغْتَسَلَ مِنْ الْجَنَابَةِ يَبْدَأُ فَيَغْسِلُ يَدَيْهِ ثُمَّ يُفْرِغُ بِيَمِينِهِ عَلَى شِمَالِهِ فَيَغْسِلُ فَرْجَهُ ثُمَّ يَتَوَضَّأُ وُضُوءَهُ لِلصَّلَاةِ ثُمَّ يَأْخُذُ الْمَاءَ فَيُدْخِلُ أَصَابِعَهُ فِي أُصُولِ الشَّعْرِ حَتَّى إِذَا رَأَى أَنْ قَدْ اسْتَبْرَأَ حَفَنَ عَلَى رَأْسِهِ ثَلَاثَ حَفَنَاتٍ ثُمَّ أَفَاضَ عَلَى سَائِرِ جَسَدِهِ ثُمَّ غَسَلَ رِجْلَيْهِ.

It was narrated that 'Aishah said: "When the Messenger of Allah (s.a.w) performed Ghusl in the case of Janabah, he would start by washing his hands, then he would pour water with his right hand into his left and wash his private part. Then he would perform Wudu' as for prayer. Then he would take water (and pour it over his head) and make it reach the roots of his hair, using his fingers. When he saw that it was thoroughly wet, he would pour three handfuls of water over his head. Then he would pour water over the rest of his body, then he would wash his feet."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺجب جنابت کا غسل کرتے تو پہلے دونوں ہاتھ دھوتے پھر داہنے ہاتھ سے پانی ڈالتے اور بائیں ہاتھ سے شرمگاہ دھوتے پھر وضو کرتے جیسے نماز کے لیے وضو کرتے ہیں ۔ پھر پانی لیتے او راپنی انگلیاں بالوں کی جڑوں میں ڈالتے جب آپ دیکھتے کہ بال تر ہوگئے تو اپنے سر پر دونوں ہاتھوں سے بھر کر تین چلو ڈالتے پھر سارے بدن پر پانی ڈالتے پھر دونوں پاؤں دھوتے۔


و حَدَّثَنَاه قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا جَرِيرٌ ح و حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ مُسْهِرٍ ح و حَدَّثَنَا أَبُو كُرَيْبٍ حَدَّثَنَا ابْنُ نُمَيْرٍ كُلُّهُمْ عَنْ هِشَامٍ فِي هَذَا الْإِسْنَادِ وَلَيْسَ فِي حَدِيثِهِمْ غَسْلُ الرِّجْلَيْنِ.

It was also narrated from Hisham (a similar Hadith as no. 718) with this chain, but he did not mention washing the feet.

مذکورہ بالا حدیث اس سند سے بھی مروی ہے مگر اس میں دونوں پاؤں دھونے کا ذکر نہیں۔


و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا وَكِيعٌ حَدَّثَنَا هِشَامٌ عَنْ أَبِيهِ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ اغْتَسَلَ مِنْ الْجَنَابَةِ فَبَدَأَ فَغَسَلَ كَفَّيْهِ ثَلَاثًا ثُمَّ ذَكَرَ نَحْوَ حَدِيثِ أَبِي مُعَاوِيَةَ وَلَمْ يَذْكُرْ غَسْلَ الرِّجْلَيْنِ.

It was narrated by Waki' from 'Aishah that the Prophet (s.a.w) performed Ghusl from Janabah. He started by washing his hands three times... and he mentioned a Hadith similar to that of Abu Mu'awiyah (no. 718), but he did not mention washing the feet.

اس سند سے بھی ویسی ہی حدیث مروی ہے کہ حضرت عائشہ روایت کرتی ہیں کہ نبی اکرم ﷺنے غسل جنابت کیا تو آپ نے دونوں ہاتھوں سے ابتداء کی ان کو تین مرتبہ دھویا۔ باقی حدیث وہی ہے صرف پاؤں دھونے کا ذکر نہیں ہے۔


و حَدَّثَنَاه عَمْرٌو النَّاقِدُ حَدَّثَنَا مُعَاوِيَةُ بْنُ عَمْرٍو حَدَّثَنَا زَائِدَةُ عَنْ هِشَامٍ قَالَ أَخْبَرَنِي عُرْوَةُ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ إِذَا اغْتَسَلَ مِنْ الْجَنَابَةِ بَدَأَ فَغَسَلَ يَدَيْهِ قَبْلَ أَنْ يُدْخِلَ يَدَهُ فِي الْإِنَاءِ ثُمَّ تَوَضَّأَ مِثْلَ وُضُوئِهِ لِلصَّلَاةِ.

It was narrated from 'Aishah that when the Messenger of Allah (s.a.w) performed Ghusl from Janabah, he would start by washing his hands before he put his hand in the vessel, then he would perform Wudu' as for prayer.

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺجب جنابت کا غسل کرتے توبرتن میں ہاتھ ڈالنے سے پہلے دونوں ہاتھ دھوتے ۔ پھر وضو کرتے جیسے نماز کے لیے وضو کرتے تھے ۔


و حَدَّثَنِي عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ السَّعْدِيُّ حَدَّثَنِي عِيسَى بْنُ يُونُسَ حَدَّثَنَا الْأَعْمَشُ عَنْ سَالِمِ بْنِ أَبِي الْجَعْدِ عَنْ كُرَيْبٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ حَدَّثَتْنِي خَالَتِي مَيْمُونَةُ قَالَتْ أَدْنَيْتُ لِرَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ غُسْلَهُ مِنْ الْجَنَابَةِ فَغَسَلَ كَفَّيْهِ مَرَّتَيْنِ أَوْ ثَلَاثًا ثُمَّ أَدْخَلَ يَدَهُ فِي الْإِنَاءِ ثُمَّ أَفْرَغَ بِهِ عَلَى فَرْجِهِ وَغَسَلَهُ بِشِمَالِهِ ثُمَّ ضَرَبَ بِشِمَالِهِ الْأَرْضَ فَدَلَكَهَا دَلْكًا شَدِيدًا ثُمَّ تَوَضَّأَ وُضُوءَهُ لِلصَّلَاةِ ثُمَّ أَفْرَغَ عَلَى رَأْسِهِ ثَلَاثَ حَفَنَاتٍ مِلْءَ كَفِّهِ ثُمَّ غَسَلَ سَائِرَ جَسَدِهِ ثُمَّ تَنَحَّى عَنْ مَقَامِهِ ذَلِكَ فَغَسَلَ رِجْلَيْهِ ثُمَّ أَتَيْتُهُ بِالْمِنْدِيلِ فَرَدَّهُ.

It was narrated that Ibn 'Abbas said: "My maternal aunt Maimunah told me: 'I brought the Messenger of Allah (s.a.w) water to perform Ghusl from Janabah. He washed his hands two or three times, then he put his hand in the vessel and poured some water over his private part and washed it with his left hand. Then he struck his left hand on the ground and rubbed it vigorously. Then he performed Wudu' as for prayer, then he poured three handfuls of water over his head, then he washed the rest of his body. Then he moved away from the spot where he had been standing, and washed his feet. Then I brought him the towel but he refused it."

اُمّ المؤمنین میمونہ رضی اللہ عنہا کہتی ہیں، میں نے رسول اللہﷺ کے لئے غسل جنابت کے واسطے پانی رکھا۔ آپﷺ نے پہلے دو بار یا تین بار دونوں ہاتھ دھوئے ، پھر ہاتھ برتن میں ڈالا اور شرمگاہ پر پانی ڈال کر بائیں ہاتھ سے دھویا، پھر بائیں ہاتھ کو زمین پر زور سے رگڑ کر دھویا پھر وضو کیا جیسے نماز کے لئے کرتے تھے ، پھر اپنے سر پر تین چلو بھر کر ڈالے ، پھر سارے بدن کو دھویا، پھر اس جگہ سے ہٹ کر اور پاؤں دھوئے۔ پھر میں بدن پوچھنے کو رومال (تولیہ) لے کر آئی تو آپﷺ نے نہ لیا۔


و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الصَّبَّاحِ وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَأَبُو كُرَيْبٍ وَالْأَشَجُّ وَإِسْحَاقُ كُلُّهُمْ عَنْ وَكِيعٍ ح و حَدَّثَنَاه يَحْيَى بْنُ يَحْيَى وَأَبُو كُرَيْبٍ قَالَا حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ كِلَاهُمَا عَنْ الْأَعْمَشِ بِهَذَا الْإِسْنَادِ وَلَيْسَ فِي حَدِيثِهِمَا إِفْرَاغُ ثَلَاثِ حَفَنَاتٍ عَلَى الرَّأْسِ وَفِي حَدِيثِ وَكِيعٍ وَصْفُ الْوُضُوءِ كُلِّهِ يَذْكُرُ الْمَضْمَضَةَ وَالِاسْتِنْشَاقَ فِيهِ وَلَيْسَ فِي حَدِيثِ أَبِي مُعَاوِيَةَ ذِكْرُ الْمِنْدِيلِ.

It was narrated from Al-A'mash with this chain (a Hadith similar to no. 722) but it does not mention pouring three handfuls of water over the head. In the Hadith of Waki' it describes Wudu' in full, mentioning rinsing out the mouth and nose. In the Hadith of Abu Mu'awiyah there is no mention of the towel.

اس سند سے بھی یہی حدیث مروی ہے مگر سر پر تین چلو کا ذکر نہیں ہے ۔وکیع سے بھی یہی روایت مروی ہے اس میں وضو کی مکمل ترتیب ہے اور انہوں نے کلی اور ناک میں پانی ڈالنے کا بھی ذکر کیا ہے۔ابو معاویہ کی حیث میں رومال کا ذکر نہیں۔


و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ إِدْرِيسَ عَنْ الْأَعْمَشِ عَنْ سَالِمٍ عَنْ كُرَيْبٍ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ عَنْ مَيْمُونَةَ أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أُتِيَ بِمِنْدِيلٍ فَلَمْ يَمَسَّهُ وَجَعَلَ يَقُولُ بِالْمَاءِ هَكَذَا يَعْنِي يَنْفُضُهُ.

It was narrated from Ibn 'Abbas, from Maimunah, that the Prophet (s.a.w) was brought a towel, but he did not touch it, and he started to do like this with the water - meaning shake it off.

حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت کرتے ہیں کہ نبی اکرم ﷺکے پاس تولیہ لایا گیا لیکن آپ نے اسے نہ چھوا اور ہاتھوں سے پانی جھاڑتے رہے۔


و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى الْعَنَزِيُّ حَدَّثَنِي أَبُو عَاصِمٍ عَنْ حَنْظَلَةَ بْنِ أَبِي سُفْيَانَ عَنْ الْقَاسِمِ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا اغْتَسَلَ مِنْ الْجَنَابَةِ دَعَا بِشَيْءٍ نَحْوَ الْحِلَابِ فَأَخَذَ بِكَفِّهِ بَدَأَ بِشِقِّ رَأْسِهِ الْأَيْمَنِ ثُمَّ الْأَيْسَرِ ثُمَّ أَخَذَ بِكَفَّيْهِ فَقَالَ بِهِمَا عَلَى رَأْسِهِ.

It was narrated that 'Aishah said: "When the Messenger of Allah (s.a.w) performed Ghusl from Janabah, he would call for something like a vessel used for milking, and take water in his palm. He started with the right side of his head, then the left. Then he took water in both palms and poured it all over his head."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺجب جنابت کا غسل کرتے تو ایک برتن پانی کا منگواتے حلاب کے برابر (حلاب وہ برتن ہے جس میں اونٹنی کا دودھ دوہتے ہیں)پھر ہاتھ سے پانی لیتے اور پہلے داہنا جانب سر کا دھوتے پھر بایاں جانب ، اس کے بعد دونوں ہاتھ سے پانی لیتے اور سر پر بہاتے۔

Chapter No: 10

بَابُ الْقَدْرِ الْمُسْتَحَبِّ مِنْ الْمَاءِ فِي غُسْلِ الْجَنَابَةِ وَغُسْلِ الرَّجُلِ وَالْمَرْأَةِ فِي إِنَاءٍ وَاحِدٍ فِي حَالَةٍ وَاحِدَةٍ وَغُسْلِ أَحَدِهِمَا بِفَضْلِ الْآخَرِ

Concerning; the preferred amount of water for bath taken after sexual impurity, man and woman taking bath from same vessel in the same condition, and one of them taking bath with the left-over water of other

غسل جنابت کے لیے پانی کی مستحب مقدار ،اور شوہر اور بیوی کا ایک برتن سے پانی لے کر ایک حالت میں غسل کرنا،اور ایک کا دوسرے کے بچے ہوئے پانی سے غسل کرنا۔

و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى قَالَ قَرَأْتُ عَلَى مَالِكٍ عَنْ ابْنِ شِهَابٍ عَنْ عُرْوَةَ بْنِ الزُّبَيْرِ عَنْ عَائِشَةَ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ يَغْتَسِلُ مِنْ إِنَاءٍ هُوَ الْفَرَقُ مِنْ الْجَنَابَةِ.

It was narrated from 'Aishah that the Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl from Janabah from a vessel like a Faraq.

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ ایک برتن سے جنابت کا غسل کرتے تھے جس میں تین صاع پانی آتا ہے۔(یعنی سات آٹھ سیر )۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ حَدَّثَنَا لَيْثٌ ح و حَدَّثَنَا ابْنُ رُمْحٍ أَخْبَرَنَا اللَّيْثُ ح و حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ وَعَمْرٌو النَّاقِدُ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ قَالُوا حَدَّثَنَا سُفْيَانُ كِلَاهُمَا عَنْ الزُّهْرِيِّ عَنْ عُرْوَةَ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَغْتَسِلُ فِي الْقَدَحِ وَهُوَ الْفَرَقُ وَكُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَهُوَ فِي الْإِنَاءِ الْوَاحِدِ وَفِي حَدِيثِ سُفْيَانَ مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ قَالَ قُتَيْبَةُ قَالَ سُفْيَانُ وَالْفَرَقُ ثَلَاثَةُ آصُعٍ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) performed Ghusl in a vessel like a Faraq, and he and I used to perform Ghusl using a single vessel." According to the Hadith of Sufyan: "With a single vessel." Qutaibah said: "Sufyan said: 'The Faraq is three Sa' (a measure that equals four Mudd; about 3kg."'

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ ایک پیالے سے غسل کرتے تھے اور وہ فرق تھا (فرق اس برتن کو کہتے ہیں جس میں تین صاع پانی آتاہے) اور میں اور آپ ایک ہی برتن سے غسل کرتے۔سفیان نے کہا فرق تین صاع کا ہوتا ہے۔


و حَدَّثَنِي عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُعَاذٍ الْعَنْبَرِيُّ قَالَ حَدَّثَنَا أَبِي قَالَ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ عَنْ أَبِي بَكْرِ بْنِ حَفْصٍ عَنْ أَبِي سَلَمَةَ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ قَالَ دَخَلْتُ عَلَى عَائِشَةَ أَنَا وَأَخُوهَا مِنْ الرَّضَاعَةِ فَسَأَلَهَا عَنْ غُسْلِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ الْجَنَابَةِ فَدَعَتْ بِإِنَاءٍ قَدْرِ الصَّاعِ فَاغْتَسَلَتْ وَبَيْنَنَا وَبَيْنَهَا سِتْرٌ وَأَفْرَغَتْ عَلَى رَأْسِهَا ثَلَاثًا قَالَ وَكَانَ أَزْوَاجُ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَأْخُذْنَ مِنْ رُءُوسِهِنَّ حَتَّى تَكُونَ كَالْوَفْرَةِ.

It was narrated that Abu Salamah bin 'Abdur-Rahman said: "I entered upon 'Aishah along with her brother through breastfeeding, and he asked her about how the Prophet (s.a.w) performed Ghusl in the case of Janabah. She called for a vessel the size of a Sa', and performed Ghusl with a screen between us and her. She poured water over her head three times. He said: "The wives of the Prophet (s.a.w) used to cut their hair so that it came down to their earlobes."

ابو سلمہ بن عبدالرحمن (سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا کے رضاعی بھانجے ) کہتے ہیں کہ میں اور اُمّ المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کا رضاعی بھائی (عبد اللہ بن یزید) ان کے پاس گئے اور رسول اللہﷺ کے غسل جنابت کے متعلق پوچھا؟ انہوں نے ایک برتن منگوایا جس میں صاع بھر پانی آتا تھا اور ہمارے اور اپنے درمیان پردے کی آڑ سے غسل کیا اور انہوں نے اپنے سر پر تین بار پانی ڈالا۔ ابو سلمہ نے کہا کہ رسول اللہﷺ کی بیویاں اپنے بال کتراتی تھیں اور کانوں تک بال رکھتی تھیں۔ (ازواجِ مطہرات نے آپﷺ کی رحلت کے بعد زینت ختم کرنے کے لئے ایسا کیا تھا کیونکہ بال عورت کی زینت ہیں)۔


حَدَّثَنَا هَارُونُ بْنُ سَعِيدٍ الْأَيْلِيُّ حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ أَخْبَرَنِي مَخْرَمَةُ بْنُ بُكَيْرٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي سَلَمَةَ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ قَالَ قَالَتْ عَائِشَةُ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا اغْتَسَلَ بَدَأَ بِيَمِينِهِ فَصَبَّ عَلَيْهَا مِنْ الْمَاءِ فَغَسَلَهَا ثُمَّ صَبَّ الْمَاءَ عَلَى الْأَذَى الَّذِي بِهِ بِيَمِينِهِ وَغَسَلَ عَنْهُ بِشِمَالِهِ حَتَّى إِذَا فَرَغَ مِنْ ذَلِكَ صَبَّ عَلَى رَأْسِهِ قَالَتْ عَائِشَةُ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَرَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ وَنَحْنُ جُنُبَانِ.

It was narrated that Abu Salamah bin 'Abdur-Rahman said: "'Aishah said: 'When the Messenger of Allah (s.a.w) performed Ghusl, he would start with his right hand, pouring water onto it and washing it. Then he would pour water onto the harm (impurity) that was on him with his right hand, and wash it off with his left hand. When he had finished that, he would pour water over his head.' 'Aishah said: The Messenger of Allah (s.a.w) and I used to perform Ghusl from a single vessel, when we were Junub."

ابو سلمہ بن عبدالرحمن سے روایت ہے کہ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے کہا کہ رسول اللہ ﷺجب غسل کرتے تو دائیں ہاتھ سے شروع کرتے پہلے اس پر پانی ڈالتے اور اس کو دھوتے پھر دائیں ہاتھ سے پانی ڈالتے اور بائیں ہاتھ سے بدن پر لگی نجاست کو دھوتے ۔ جب اس سے فراغ ہوتے تو سر پر پانی ڈالتے۔حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے کہا میں اور رسول اللہ ﷺجنابت کا غسل ایک برتن سے کیا کرتے تھے۔


و حَدَّثَنِي مُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ حَدَّثَنَا شَبَابَةُ حَدَّثَنَا لَيْثٌ عَنْ يَزِيدَ عَنْ عِرَاكٍ عَنْ حَفْصَةَ بِنْتِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ أَبِي بَكْرٍ وَكَانَتْ تَحْتَ الْمُنْذِرِ بْنِ الزُّبَيْرِ أَنَّ عَائِشَةَ أَخْبَرَتْهَا أَنَّهَا كَانَتْ تَغْتَسِلُ هِيَ وَالنَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي إِنَاءٍ وَاحِدٍ يَسَعُ ثَلَاثَةَ أَمْدَادٍ أَوْ قَرِيبًا مِنْ ذَلِكَ.

It was narrated from Hafsah bint 'Abdur-Rahman bin Abi Bakr - who was married to Al-Mundhir bin Az-Zubair - that 'Aishah told her that she and the Prophet (s.a.w) used to perform Ghusl from a single vessel that held three Mudd or something close to that (of water).

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہااور رسول اللہ ﷺایک ہی برتن سے غسل کیا کرتے جس میں تین مُد یا کچھ ایسا ہی پانی آتا۔


حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مَسْلَمَةَ بْنِ قَعْنَبٍ قَالَ حَدَّثَنَا أَفْلَحُ بْنُ حُمَيْدٍ عَنْ الْقَاسِمِ بْنِ مُحَمَّدٍ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَرَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ إِنَاءٍ وَاحِدٍ تَخْتَلِفُ أَيْدِينَا فِيهِ مِنْ الْجَنَابَةِ.

It was narrated that 'Aishah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) and I used to perform Ghusl of Janabah from a single vessel, dipping our hands into it alternately."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں اور رسول اللہ ﷺایک ہی برتن سے جنابت کا غسل کیا کرتے تھے اور دونوں کے ہاتھ اس میں پڑ جاتے تھے۔


و حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ يَحْيَى أَخْبَرَنَا أَبُو خَيْثَمَةَ عَنْ عَاصِمٍ الْأَحْوَلِ عَنْ مُعَاذَةَ عَنْ عَائِشَةَ قَالَتْ كُنْتُ أَغْتَسِلُ أَنَا وَرَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ إِنَاءٍ بَيْنِي وَبَيْنَهُ وَاحِدٍ فَيُبَادِرُنِي حَتَّى أَقُولَ دَعْ لِي دَعْ لِي قَالَتْ وَهُمَا جُنُبَانِ

It was narrated from Mu'adhah, from 'Aishah, she said: "The Messenger of Allah (s.a.w) and I used to perform Ghusl from a single vessel, which was between myself and him. He would go ahead of me, and I would say: 'Leave me some, leave me some."' She said: "And they were both Junub."

ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ میں اور رسول اللہ ﷺاُس برتن سےغسل کرتے تھے جو میرے اور آپﷺکے درمیان ہوتا تھا آپﷺجلدی جلدی پانی لیتے یہاں تک کہ میں کہتی تھوڑا پانی میرے لیے چھوڑدو اور دونوں جنبی ہوتے۔


و حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ وَأَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ جَمِيعًا عَنْ ابْنِ عُيَيْنَةَ قَالَ قُتَيْبَةُ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ عَنْ عَمْرٍو عَنْ أَبِي الشَّعْثَاءِ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ قَالَ أَخْبَرَتْنِي مَيْمُونَةُ أَنَّهَا كَانَتْ تَغْتَسِلُ هِيَ وَالنَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي إِنَاءٍ وَاحِدٍ.

It was narrated that Ibn 'Abbas said: "Maimunah told me that she used to perform Ghusl, she and the Prophet (s.a.w), from a single vessel."

ام المؤمنین میمونہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ وہ اور نبی کریم ﷺایک برتن سے غسل کرتے تھے۔


و حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ وَمُحَمَّدُ بْنُ حَاتِمٍ قَالَ إِسْحَاقُ أَخْبَرَنَا وَقَالَ ابْنُ حَاتِمٍ حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَكْرٍ أَخْبَرَنَا ابْنُ جُرَيْجٍ أَخْبَرَنِي عَمْرُو بْنُ دِينَارٍ قَالَ أَكْبَرُ عِلْمِي وَالَّذِي يَخْطِرُ عَلَى بَالِي أَنَّ أَبَا الشَّعْثَاءِ أَخْبَرَنِي أَنَّ ابْنَ عَبَّاسٍ أَخْبَرَهُ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ يَغْتَسِلُ بِفَضْلِ مَيْمُونَةَ.

Ibn 'Abbas narrated that the Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl with the left-over water of Maimunah.

حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺمیمونہ کے بچے ہوئے پانی سے غسل کرتے تھے۔


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى حَدَّثَنَا مُعَاذُ بْنُ هِشَامٍ قَالَ حَدَّثَنِي أَبِي عَنْ يَحْيَى بْنِ أَبِي كَثِيرٍ حَدَّثَنَا أَبُو سَلَمَةَ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ أَنَّ زَيْنَبَ بِنْتَ أُمِّ سَلَمَةَ حَدَّثَتْهُ أَنَّ أُمَّ سَلَمَةَ حَدَّثَتْهَا قَالَتْ كَانَتْ هِيَ وَرَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَغْتَسِلَانِ فِي الْإِنَاءِ الْوَاحِدِ مِنْ الْجَنَابَةِ.

Umm Salamah narrated that she and the Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl from a single vessel, in the case of Janabah.

حضرت ام سلمہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ وہ اور رسول اللہ جنابت کا غسل ایک برتن سے کرتے تھے ۔


حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُعَاذٍ حَدَّثَنَا أَبِي ح و حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْمُثَنَّى حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ يَعْنِي ابْنَ مَهْدِيٍّ قَالَا حَدَّثَنَا شُعْبَةُ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ جَبْرٍ قَالَ سَمِعْتُ أَنَسًا يَقُولُ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَغْتَسِلُ بِخَمْسِ مَكَاكِيكَ وَيَتَوَضَّأُ بِمَكُّوكٍ و قَالَ ابْنُ الْمُثَنَّى بِخَمْسِ مَكَاكِيَّ و قَالَ ابْنُ مُعَاذٍ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ وَلَمْ يَذْكُرْ ابْنَ جَبْرٍ.

Anas said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl with five Makkuk, and he performed Wudu' with one Makkuk."

حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺپانچ مکوک سے غسل کرتے اور ایک مکوک سے وضو کرتے (مکوک سے مراد مد ہے)۔


حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ مِسْعَرٍ عَنْ ابْنِ جَبْرٍ عَنْ أَنَسٍ قَالَ كَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَتَوَضَّأُ بِالْمُدِّ وَيَغْتَسِلُ بِالصَّاعِ إِلَى خَمْسَةِ أَمْدَادٍ.

Anas said: "The Prophet (s.a.w) used to perform Wudu' with a Mudd and he used to perform Ghusl with a Sa', up to five Mudd."

حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺایک مد سے وضو کرتے اور ایک صاع سے لیکر پانچ مد تک غسل کرتے۔


و حَدَّثَنَا أَبُو كَامِلٍ الْجَحْدَرِيُّ وَعَمْرُو بْنُ عَلِيٍّ كِلَاهُمَا عَنْ بِشْرِ بْنِ الْمُفَضَّلِ قَالَ أَبُو كَامِلٍ حَدَّثَنَا بِشْرٌ حَدَّثَنَا أَبُو رَيْحَانَةَ عَنْ سَفِينَةَ قَالَ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُغَسِّلُهُ الصَّاعُ مِنْ الْمَاءِ مِنْ الْجَنَابَةِ وَيُوَضِّؤُهُ الْمُدُّ.

It was narrated that Safinah said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl with a Sa' of water in the case of Janabah, and he used to perform Wudu' with a Mudd of water."

سفینہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺکوایک صاع پانی غسل جنابت کے لیے اور ایک مد پانی وضو کے لیے کافی تھا۔


و حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا ابْنُ عُلَيَّةَ ح و حَدَّثَنِي عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ عَنْ أَبِي رَيْحَانَةَ عَنْ سَفِينَةَ قَالَ أَبُو بَكْرٍ صَاحِبِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَغْتَسِلُ بِالصَّاعِ وَيَتَطَهَّرُ بِالْمُدِّ وَفِي حَدِيثِ ابْنِ حُجْرٍ أَوْ قَالَ وَيُطَهِّرُهُ الْمُدُّ و قَالَ وَقَدْ كَانَ كَبِرَ وَمَا كُنْتُ أَثِقُ بِحَدِيثِهِ.

It was narrated that Safinah - (one of the narrators) said: Abu Bakr- the Companion of the Messenger of Allah (s.a.w), said: "The Messenger of Allah (s.a.w) used to perform Ghusl with a Sa' and purify himself with a Mudd." In the narration of (one of the narrators) Ibn Hujr: "Or he said: 'And a Mudd to purify him."' And he said: "And he was old, so I do not consider his narration trustworthy."

سفینہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺکوایک صاع پانی سے غسل کرتے اور ایک مد پانی سے وضو کرتے۔

123Last ›